உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Panipat: آج ریفائنری میں2Gایتھنال پلانٹ کا آن لائن افتتاح کریں گے وزیراعظم مودی، کسانوں کی بڑھے گی انکم

    وزیر اعظم نریندر مودی

    وزیر اعظم نریندر مودی

    Panipat: پانی پت ریفائنری میں پرالی سے ایتھنال بنانے کا پلانٹ تیار ہے۔ اس کی تعمیر پر 900 کروڑ روپے کی لاگت آئی ہے۔ پلانٹ میں روزانہ 100 کلو لیٹر ایتھنول پیدا کرنے کی صلاحیت ہے۔

    • Share this:
      Panipat: اب ہریانہ کے پانی پت ضلع میں کسانوں کو پرالی جلانے کی ضرورت نہیں پڑے گی بلکہ یہ ان کی آمدنی کا ذریعہ بن جائے گا۔ یہ ریفائنری میں شروع ہونے والے 2G ایتھنال پلانٹ سے ممکن ہو گا، جس کا آج بدھ کو وزیر اعظم نریندر مودی آن لائن آغاز کریں گے۔

      واضح رہے کہ ریفائنری میں نئے تعمیر ہونے والے 2G ایتھنال پلانٹ میں ایتھنال کو پرالی سے ہی ایتھنال بنایا جائے گا۔ پرالی خریدنے کے لیے ضلع بھر میں محکمہ زراعت کسٹم ہائرنگ سینٹرز (CHCs) قائم کرے گا۔ ان کے ذریعے کسانوں کے کھیتوں سے بھوسا خریدا جائے گا۔ پرالی کی گانٹھیں بنا کر کلیکشن سینٹر کو بھیجی جائیں گی۔

      ان میں سے ایک کلیکشن سنٹر گاؤں بڈولی اور گانجبڑ کے مقام پر اور دوسرا گاؤں آسن کلاں کے مقام پر قائم کیا جائے گا۔ منگل کو محکمہ زراعت اور کسانوں کی بہبود کے ڈپٹی ڈائریکٹر ڈاکٹر وزیر سنگھ سمیت اسسٹنٹ ایگریکلچر انجینئر سدھیر کمار اور بلاک ایگریکلچر آفیسر سیوا سنگھ نے دونوں سائٹوں کا معائنہ کیا۔

      یہ بھی پڑھیں:

      UGC on Har Ghar Tiranga: یوجی سی ہرگھرترنگامہم کےلیےچلائیں شعوری بیداری مہم : حکومت

      یہ بھی پڑھیں:
      کیا آپ جانتے ہیں PM مودی کے کل اثاثے کتنے ہیں؟ گزشتہ ایک سال میں کتنا ہوا اضافہ؟

      ریفائنری میں 900 کروڑ سے تیار کیا گیا ہے پلانٹ
      پانی پت ریفائنری میں پرالی سے ایتھنال بنانے کا پلانٹ تیار ہے۔ اس کی تعمیر پر 900 کروڑ روپے کی لاگت آئی ہے۔ پلانٹ میں روزانہ 100 کلو لیٹر ایتھنول پیدا کرنے کی صلاحیت ہے۔ محکمہ زراعت اس پلانٹ کو پرالی فراہم کرنے کے لیے بھی تیار ہے۔ ریاستی اور مرکزی حکومت گزشتہ کئی برسوں سے پرالی جلانے سے ہونے والی فضائی آلودگی کو روکنے کے لیے مسلسل کوششیں کر رہی ہے۔ اس سلسلے میں کاشتکاروں کو فصلوں کی باقیات کے انتظام کے لیے سی ایچ سی اور ذاتی زرعی مشینوں کے قیام کے لیے بھاری گرانٹ بھی دی جا رہی ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: