உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    زہریلی شراپ پینے سے 25 افراد ہلاک، نتیش کے وزیرکی صفائی- ہم نے 700 ملازمین کئے برخاست

    زہریلی شراپ پینے سے 25 افراد ہلاک، نتیش کے وزیرکی صفائی- ہم نے 700 ملازمین کئے برخاست

    زہریلی شراپ پینے سے 25 افراد ہلاک، نتیش کے وزیرکی صفائی- ہم نے 700 ملازمین کئے برخاست

    Poisonous Liquor Death Case in Bihar: Poisonous liquor death Case: بہار کے مغربی چمپارن اور گوپال گنج ضلع میں زہریلی شراب پینے سے 25 لوگوں کی موت ہوگئی ہے۔ حالانکہ حکومت کی سطح پر مہلوکین کی تعداد 21 ہی بتائی جا رہی ہے۔ اب اس زہریلی شراب سانحہ کو لے کر ریاستی وزیر سنیل کمار نے صفائی دی ہے۔

    • Share this:
      گوپال گنج: بہارکے مغربی چمپارن اور گوپال گنج ضلع میں زہریلی شراب پینے سے 25 لوگوں کی موت ہوگئی ہے۔ حالانکہ حکومت کی سطح پر مہلوکین کی تعداد 21 ہی بتائی جا رہی ہے۔ اب اس زہریلی شراب سانحہ کو لے کر وزیر امتناعی سنیل کمار نے صفائی دی ہے۔ ریاستی وزیر نے اعتراف کیا کہ ان دونوں اضلاع میں شراب سے موت ممکنہ ہے۔ انہوں نے گوپال گنج میں 11 اور بیتیا میں 10 افراد کی موت کی تصدیق کی ہے۔ وزیر نے کہا کہ فی الحال وسرا رپورٹ کا انتظار کیا جا رہا ہے۔ ریاستی وزیر نے کہا کہ اس حادثہ میں کچھ بھی چھپانے کی کوشش نہیں کی جارہی ہے، جو سچائی ہے وہی بات میڈیا کو بھی بتائی جا رہی ہے۔

      وزیر سنیل کمار نے کہا کہ حکومت شراب بندی قانون پر سختی سے عمل کرنے کے لئے سنجیدہ ہے اور یہی کرنے کی دوسری ریاستوں کے مقابلے بہار میں کارروائی اور گرفتاری بھی سب سے زیادہ ہوئی ہے۔ وزیر نے کہا کہ وزیر امتناعی محکمہ میں 700 سے زیادہ لوگ برخاست کئے گئے ہیں اور کسی محکمہ میں اب تک کی سب سے بڑی کارروائی ہے۔ سنیل کمار نے اعتراف کیا کہ سرحدی علاقے سے ہر روز ہزاروں کی تعداد میں گاڑیاں آتی ہیں اور انٹلی جنس کی بنیاد پر کارروائی بھی کی جاتی ہے۔

      اس درمیان اے ڈی جی پولیس ہیڈ کوارٹر جتیندر گنگوار نے کہا ہے کہ پورے معاملے کی جانچ کی جارہی ہے اور مہلوکین کے پوسٹ مارٹم رپورٹ کی بنیاد پر آگے کی کارروائی کی جائے گی۔ مقامی چوکیدار اور متعلقہ تھانے دارکو معطل کردیا گیا ہے۔ اس معاملے میں مجرمانہ معاملہ درج کرکے تحقیق کی جارہی ہے۔ اس معاملے میں اطلاع کی بنیاد پر کچھ لوگوں کی گرفتاری بھی کی گئی ہے۔

      واضح رہے کہ بیتیا میں زہریلی شراب سانحہ پر بڑی کارروائی کی گئی ہے۔ نوتن تھانہ انچارج منیش شرما کو معطل کردیا گیا ہے۔ ڈی آئی جی پرنب کمار پروین نے یہ کارروائی کی ہے۔ گاوں کے چوکیدار کو بھی معطل کردیا گیا ہے۔ کئی اور پر کارروائی ہونے کا بھی امکان ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: