ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: پولیس سربراہ نےکہا- پاکستان ملیٹنسی کو ٹی آر ایف کے ذریعہ متحرک کرنےکی کوشش میں مصروف

پلوامہ میں میڈیا سے آج بات کرتے ہوئے دلباغ سنگھ نے ان خیالات کا اظہار کیا۔ اُنہوں نے کہا کہ گذشتہ کُچھ ماہ کے دوران جموں وکشمیر میں ملیٹنٹوں کےخلاف بڑی کامیابیاں حاصل ہورہی ہیں۔ پاکستان کی جانب سے سوشل میڈیا کے ذریعہ ٹی آر ایف کو چلایا جا رہا ہے اور یہاں پرکام کر رہے ملی تنظیموں سے دہشت گردانہ کام انجام دیا جاتا ہے۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: پولیس سربراہ نےکہا- پاکستان ملیٹنسی کو ٹی آر ایف کے ذریعہ متحرک کرنےکی کوشش میں مصروف
جموں کشمیر کے پولیس سربراہ دلباغ سنگھ نے کہا ہے کہ پاکستان کی جانب سے ملیٹنٹ تنظیموں کو دوبارہ متحرک کرنے کے لئے ٹی آر ایف جیسے دھوکے کا سہارا لے رہا ہے۔

پلوامہ: جموں کشمیر کے پولیس سربراہ دلباغ سنگھ نے کہا ہے کہ پاکستان کی جانب سے ملیٹنٹ تنظیموں کو دوبارہ متحرک کرنے کے لئے ٹی آر ایف جیسے دھوکے کا سہارا لے رہا ہے۔ پلوامہ میں میڈیا سے آج بات کرتے ہوئے دلباغ سنگھ نے ان خیالات کا اظہار کیا۔ اُنہوں نے کہا کہ گذشتہ کُچھ ماہ کے دوران جموں وکشمیر میں ملیٹنٹوں کےخلاف بڑی کامیابیاں حاصل ہو رہی ہیں۔ جموں کشمیر میں تقریباً 119 ملیٹنٹ ہلاک کئے گئے۔ پاکستان کی جانب سے سوشل میڈیا کے ذریعہ ٹی آر ایف کو چلایا جارہا ہے اور یہاں پر کام کر رہے ملی تنظیموں سے دہشت گردانہ کام انجام دیا جاتا ہے۔ صرف نام ٹی آر ایف دیا جاتا ہے۔


اس موقع پر ڈی جی نے کہا کہ ایچ ایم کمانڈر ریاض نائیکو نے کشمیر میں سینکڑوں نوجوانوں کو ملیٹنسی کی طرف راغب کیا تھا۔ تاہم اُس کی ہلاکت سے کافی حدتک ملیٹنٹ بھرتی کا خاتمہ ہوا ہے۔ ڈی جی پی نے مزید کہا کہ ملی تنظیمیں اس وقت بغیر کمانڈر ہی کشمیر میں سرگرم ہیں اور اگر کوئی ہے بھی اپنی جان بچائے بیٹھا ہے۔ ڈی جی پی نے ایک بار پھر میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مقامی ملیٹنٹوں سے اپیل کی ہے کہ وہ تشدد کا راستہ ترک کرکے امن کی راہ کی طرف آئیں۔ جبکہ انہوں نےکہا کہ اُن کی کوشش یہی رہتی ہے کہ انکاونٹر میں مال وجان کی حفاظت کے ساتھ ساتھ مقامی ملیٹنٹ کو ہتھیار ڈالنے کی پیشکش کی جاتی ہے۔


دلباغ سنگھ نے کہا کہ گذشتہ کُچھ ماہ کے دوران جموں وکشمیر میں ملیٹنٹوں کےخلاف بڑی کامیابیاں حاصل ہو رہی ہیں۔
دلباغ سنگھ نے کہا کہ گذشتہ کُچھ ماہ کے دوران جموں وکشمیر میں ملیٹنٹوں کےخلاف بڑی کامیابیاں حاصل ہو رہی ہیں۔


ضلع پلوامہ کے بنڈزوا علاقے میں سیکورٹی اور ملیٹنٹوں کے درمیان ہوئے انکاونٹر میں جیش محمد کے دو ملیٹنٹ ہلاک ہوئے ہیں جبکہ جھڑپ میں ایک سی آر پی ایف جوان بھی شہید ہوا ہے۔ آج علی الصبح بنڈزوا پلوامہ میں یہ انکاونٹر اس وقت شروع ہوا جب فورسزنے علاقے میں ملیٹنٹوں کی موجودگی پر محاصرہ شروع کیا، جس دوران ایک رہائش مکان میں چُھپے ملیٹنٹوں نے فورسیز پر فائرنگ کی اور محاصرہ توڑنے کی کوشش کی۔ اس مختصر جھڑپ میں دونوں ملیٹنٹوں کو موقع پر ہی مار گرایا گیا۔ گولیوں کے تبادلے میں 182 بٹالین سی آر پی ایف کا ہیڈکانسٹیبل سُنیل کالے شدید زخمی ہوا۔ اگرچہ زخمی جوان کو سری نگر اسپتال لے جانے کی کوشش کی گئی، تاہم وہ راستے میں ہی زخموں کی تاب نہ لاکر چل بسا۔

ہلاک شدہ ملیٹنٹوں کی شناخت ضلع شوپیاں کے مولو چیتراگام کے اویس احمد اور رام نگری شوپیاں کے اعجاز احمد کے بطور ہوئی ہے۔ اویس گُذشتہ دو سالوں سے سرگرم تھا جبکہ اعجاز نے حال ہی میں ملیٹنٹ صفوں میں شمولیت اختیار کی تھی۔ انکاونٹر کے بعد پلوامہ میں انٹرنیٹ خدمات کو معطل کیا گیا۔ ڈی جی پولیس نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ جنوبی کشمیر کے پلوامہ اور شوپیاں ضلع میں ملیٹنسی میں اب کافی کمی واقعہ ہوئی ہے۔
First published: Jun 23, 2020 08:08 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading