ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اترپردیش : دفعہ 144 کے نفاذ کے خلاف میرٹھ میں سیاسی پارٹیوں کا دھرنا ، کیا یہ بڑا مطالبہ

شاہین باغ جیسے مظاہرہ کی طرز پر احتجاج کرنے کا ارادہ بھی ظاہر کیا جارہا ہے ۔

  • Share this:
اترپردیش : دفعہ 144 کے نفاذ کے خلاف میرٹھ میں سیاسی پارٹیوں کا دھرنا ، کیا یہ بڑا مطالبہ
اترپردیش : دفعہ 144 کے نفاذ کے خلاف میرٹھ میں سیاسی پارٹیوں کا دھرنا ، کیا یہ بڑا مطالبہ

دفعہ 144 کے نفاذ کو لے کر سرکار اور پولیس انتظامیہ کے دوہرے رویہ کے خلاف اب مخالف سیاسی جماعتیں سرسڑکوں پر اتر کر احتجاج کرنے پر مجبور ہوگئی ہیں ۔ دفعہ 144 کے نفاذ کے خلاف میرٹھ میں آر ایل ڈی ، سماجوادی اور کانگریس نے مشترکہ ایک روزہ احتجاجی مظاہرے کا انعقاد کیا ۔


پارلیمنٹ میں شہریت ترمیمی بل پیش کیے جانے اور این آر سی پر رخ واضح کرنے کے بعد سے ہی ملک گیر پیمانے پر حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ شروع ہوا  ۔ میرٹھ میں بھی این آر سی ، سی اے اے اور این پی آر کو لےکر لوگ سڑکوں پر اترے ، لیکن پولیس نے دفعہ 144 کے نفاذ کا حوالہ دے کر لوگوں کو سڑکوں پر اتر کر احتجاج کرنے کی اجازت نہیں دی ۔ یو پی حکومت اور پولیس انتظامیہ کے اس رویہ کے خلاف اب کانگریس ، آر ایل ڈی اور سماجوادی پارٹی لیڈران اور کارکنان ایک ساتھ احتجاج کرکے اپنی ناراضگی کا اظہار کیا ۔


ساتھ ہی شاہین باغ جیسے  مظاہرہ کی طرز پر احتجاج کرنے کا ارادہ بھی ظاہر کیا جارہا ہے ۔ سماجوادی پارٹی کے ضلع صدر کا کہنا ہے کہ بی جے پی مخالف سیاسی جماعتوں کا مشترکہ احتجاج حکومت کی آئین اور دستور کو بالائے طاق رکھ کر کام کرنے کی کوشش کے خلاف ہے ۔ آر ایل ڈی ، کانگریس اور سماجوادی پارٹی لیڈران کے مطابق دفعہ 144 کا سہارا لے کر حکومت نے اپوزیشن اور عوام کی آواز کو دبانے کے کوشش کی ہے ، جس کو کسی بھی صورت میں برداشت نہیں کیا جا سکتا ۔ پارٹی لیڈران کا کہنا ہے کہ حکومت کی آئین مخالف پالیسی کے خلاف ان کا احتجاج جاری رہے گا ۔

First published: Jan 29, 2020 05:31 PM IST