ہوم » نیوز » وطن نامہ

رافیل جنگی طیارہ سودے میں ہوئی مبینہ بے ضابطگی کی جے پی سی سے جانچ ہو : طار ق انور

  • Share this:
رافیل جنگی طیارہ سودے میں ہوئی مبینہ بے ضابطگی کی  جے پی سی سے جانچ  ہو :  طار ق انور
طارق انور

بہارکے کٹیہار سے راشٹر وادی کانگریس پارٹی ( این سی پی ) کے ممبر پارلیمنٹ طارق انور نے رافیل لڑاکا طیارہ سودے میں ہوئی مبینہ بے ضابطگی کی جوائنٹ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی ) سے جانچ کرانے کی آج مانگ کی ۔ طارق انور نے یہاں سے دہلی روانہ ہونے سے قبل ’یواین آئی ‘ سے بات چیت میں کہاکہ کانگریس سمیت سبھی اپوزیشن پارٹیاں رافیل سودے کی جے پی سی سے جانچ کرانے کی مانگ کر رہے ہیں اور ایسے میں این سی پی صدر شرد پوار کا وزیراعظم نریندر مودی کے بچاﺅ میں دیئے گئے بیان سے ایک جھٹکا لگا ہے ۔


انہوں نے کہاکہ شرد پوار کا اس سے متعلق دیا نریندر مودی کے حق میں دیا گیا بیان قطعی مناسب نہیں ہے ۔این سی پی کے سابق جنرل سکریٹری نے کہا کہ بوفورس گھوٹالہ کے وقت بھارتیہ جنتا پارٹی ( بی جے پی ) اس کی جانچ کرانے کی مانگ کر رہی تھی ۔جانچ کے بعد موجودہ کانگریس حکومت کو کلین چیٹ ملی تھی ۔ ایسے میں مرکز کی موجودہ بی جے پی حکومت رافیل سودے کی جانچ کرانے سے بھاگ رہی ہے ۔


اس سے ایسا معلوم ہوتا ہے کہ کہیں نہ کہیں اس سودے بازی میں گھوٹالہ ہواہے ۔


طارق انور نے الزام لگاتے ہوئے کہاکہ اس سودے کے توسط سے مرکز کی نریندر مودی حکومت نے ملک کے ایک بڑے صنعتی گھرانے کی مدد کی ہے ۔ یہ ملک کی حفاظت سے جڑا معاملہ ہے اس لئے اس کی ہرطرح سے جانچ کرائی جانی چاہئے ۔ انہوں نے کہاکہ وہ این سی پی صدرشرد پوار کی عزت کرتے ہیں لیکن رافیل سودے میں وزیراعظم نریندرمودی کا بچاﺅ کرنے سے انہیں تکلیف پہنچی ہے ۔
First published: Sep 28, 2018 06:01 PM IST