ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی: جامع مسجد کے صحن میں نہیں ہوگی نماز، سوشل ڈیسٹنسنگ کا رکھا جائے گا پورا خیال

مسجد انتظامیہ کی جانب سے تمام طرح کی تیاریاں کی جارہی ہیں، سماجی دوری بنائے رکھنے سے لے کرکورونا وائرس کا خطرہ کم کرنے کے لئے تمام طرح کی احتیاطی تدابیر اختیار کرنے پر زور ہے۔ سماجی دوری بنائے رکھنے کے لئے صفوں کے بیچ میں نشانات لگائے گئے ہیں، جہاں پر ایک شخص نماز ادا کرے گا۔

  • Share this:
دہلی: جامع مسجد کے صحن میں نہیں ہوگی نماز، سوشل ڈیسٹنسنگ کا رکھا جائے گا پورا خیال
جامع مسجد کے صحن میں نہیں ہوگی نماز،

نئی دہلی: مرکزی وزارت داخلہ کے بعد دہلی میں اقتدار پر قابض اروند کجریوال حکومت نے بھی راجدھانی کے مذہبی مقامات اور عبادت گاہوں کو کھولنے کو لے کر فیصلہ لے لیا ہے، جس کے ساتھ کل سے پہلے کی تمام مذہبی عبادت گاہیں کھل سکیں گی۔ دہلی کی تاریخی شاہجہانی جامع مسجد بھی نمازیوں کے استقبال کے لئے تیار ہو رہی ہے۔ مسجد انتظامیہ کی جانب سے تمام طرح کی تیاریاں کی جارہی ہیں، سماجی دوری بنائے رکھنے سے لے کرکورونا وائرس کا خطرہ کم کرنے کے لئے تمام طرح کی احتیاطی تدابیر اختیار  کرنے پر زور ہے۔ سماجی دوری بنائے رکھنے کے لئے صفوں کے بیچ میں نشانات لگائے گئے ہیں، جہاں پر ایک شخص نماز ادا کرے گا۔


صحن میں نہیں ہو گی نماز


جامع مسجد جاتے ہوئے کچھ بنیادی باتوں کا خیال رکھنا ہوگا۔ جامع مسجد نمازیوں کے استقبال کے لئے تیار ہے، لیکن بہت کم لوگوں کو ہی مسجد میں داخلہ ملے گا کیونکہ کھلے صحن کے بڑے حصے میں میں نماز نہیں ہوگی، صرف اندرونی حصے میں نماز ہوگی۔ اندر کے حصے میں نشانات لگائے گئے ہیں، جن پر ایک شخص نماز ادا کر سکتا ہے جگہ تبدیل کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ صفوں کے درمیان میں بھی فاصلہ بنایا گیا ہے۔ ایک صف میں نشانات لگائے گئے ہیں۔ دوسری صف کو چھوڑ دیا گیا ہے۔ تیسری صف میں پھر سے نشانات لگائے گئے ہیں، اسی طرح جس میں نشانات لگائے گئے ہیں اس صورت میں بھی ایک نشان اور دوسرے نشان کے بیچ میں فاصلہ رکھا گیا ہے۔ کیونکہ صرف اندر کے حصے میں نماز ہوگی، اس لئے بہت ہی کم لوگوں کو داخلہ مل پائے گا۔


جامع مسجد نمازیوں کے استقبال کے لئے تیار ہے، لیکن بہت کم لوگوں کو ہی مسجد میں داخلہ ملے گا۔
جامع مسجد نمازیوں کے استقبال کے لئے تیار ہے، لیکن بہت کم لوگوں کو ہی مسجد میں داخلہ ملے گا۔


وضو کے لئے حوض کا نہیں ہوگا استعمال

کورونا کے خطرے کو دیکھتے ہوئے ہوئے لوگوں کو اپنے گھروں سے وضو کرکے آنا ہوگا۔ جامع مسجد کے اندر وضو کے لئےحوض کا پانی نہیں ملے گا۔ حوض کا پانی پوری طریقے سے سکھا دیا گیا ہے۔ تاہم وضو کے لئے ٹوٹیوں کا استعمال ہوگا، لیکن ایک وقت میں 60 لوگوں کی جگہ صرف 3 لوگ ہی وضو کر سکیں گے۔ جامع مسجد میں سینیٹائزیشن کا پورا انتظام کیا گیا ہے۔ مسجد کے اندر سینیٹائز کرنے کا پورا خیال رکھا گیا ہے۔ بار بار مسجد کو سینیٹائزکیا جا رہا ہے۔ مسجد انتظامیہ کے مطابق 7 جون کو ایک بار پھر سے سینیٹائز کیا جائے گا۔

جامع مسجد کے تین دروازے ہیں اور تینوں دروازوں سے نمازیوں کو داخلہ ملے گا۔
جامع مسجد کے تین دروازے ہیں اور تینوں دروازوں سے نمازیوں کو داخلہ ملے گا۔


جامع مسجد کے تینوں دروازہ سے ہوگی انٹری

جامع مسجد کے تین دروازے ہیں اور تینوں دروازوں سے نمازیوں کو داخلہ ملے گا، لیکن محدود تعداد میں نمازی اندر داخل ہو سکیں گے۔ بہرحال جامع مسجد میں سوشل ڈیسٹنسنگ کا پورا خیال رکھا گیا ہے۔ واضح رہے کہ لاک ڈاون کے پہلے مرحلے کے بعد سے ہی مساجد میں نماز کے لئے بھیڑ جمع ہونے پر پابندی عائد ہے، لیکن اب 8 جون سے اس میں راحت دی گئی ہے، لیکن سوشل ڈیسٹنسنگ کا پورا خیال رکھا گیا ہے۔
First published: Jun 07, 2020 04:46 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading