ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نیوز18رائزنگ انڈیا سمٹ:ہندوستان کی صدی کی تیاری،دہلی میں ہوگا عظیم الشان پروگرام

نئی دہلی میں نیوز 18 ہونے والی "رائزنگ انڈیا سمٹ" میں بات چیت اور بحث و مباحثہ کے ذریعہ اس طرح کے اور بھی موضوعات کو نہ صرف ہائی لائٹ کیا جائے گا بلکہ ان پر گفتگو ہوگی اور انہیں کارگر بھی بنایا جائے گا۔

  • Share this:
نیوز18رائزنگ انڈیا سمٹ:ہندوستان کی صدی کی تیاری،دہلی میں ہوگا عظیم الشان پروگرام
نیوز18رائزنگ انڈیا سمٹ:ہندوستان کی صدی کی تیاری

21ویں صدی تبدیلی کی صدی ہے۔ بدلاؤ کی صدی، سماجی و اقتصادی، سیاسی اور ٹکنالوجیکل بدلاؤ۔ اس کی نمایاں حیثیت میں اس سے بھی اضافہ ہوتا ہے کہ یہ خلل ڈالنے والی صدی ہے۔دنیا پہلے سے زیادہ مربوط ہے مگر معاشرے زیادہ الگ تھلگ پڑ گئے ہیں۔ ماحولیاتی تبدیلیاں اور چنوتیاں اپنی انتہا پر ہیں اور دنیا کو کچھ نظم، مثبت تبدیلی، رہنمائی اوراچھے انتظام کی شدید ضرورت ہے۔ لیکن ہندوستان کے دھیرے دھیرے مگر مسلسل بلندیوں پر چڑھتے ہوئے قابل اعتنا طاقت بن کر ابھرنے کی صورت میں دھوپ کی ایک کرن نظر آ رہی ہے۔


اس وقت جب کہ عالمی معیشت لڑکھڑا رہی ہے اور عالمی سطح پر مجموعی گھریلو پیداوار کی شرح گر کر3.2% تک پہنچ گئی ہے، اس کا اندازہ ہے کہ ہندوستان کی مجموعی گھریلو پیداوار میں پھر اضافہ ہوگا اور آنے والے برسوں میں یہ شرح بڑھ کر7.5% پر پہنچ جائے گی۔علاوہ ازیں، ہندوستان کو2030 تک5 ٹریلین ڈالر کی معیشت بنانے کا ہدف قوم اور قومی قیادت کی عظیم الشان ذہنیت کی عکاسی کرتا ہے۔


عالمی سطح پر، ہندوستان "پیرس آب و ہوا معاہدہ" یعنی (’پیرس کلائیمیٹ چینج) کا ایک محوری حصہ رہا ہے اور توقع ہے کہ کاربن ڈائی آکسائیڈ کا اخراج کم کرنے اور ماحولیات بہتر بنانے میں ہاتھ بٹانے کیلئے 2020 تک ایک بھرپور طویل مدتی حکمت عملی اپنائے گا۔ اس سے پتہ چلتا ہے کہ ہندوستان ایک لائق برداشت مستقبل میں قدم رکھنے کی قیادت کر رہا ہے۔


ہمارے ملک کی آدھی آبادی کی عمر کام کرنے کے لائق ہے، جس سے ہندوستان کو فائدہ مند پوزیشن حاصل ہے۔ عالمی اختراعی اشاریہ پر ہندوستان نے لگاتار نویں سال اپنی درجہ بندی بہتر بنائی ہے، اور اب 52 ویں پوزیشن پر ہے۔ اس بہتری کے ساتھ، اس نے عالمی بینک کے تجارت کرنے کی آسانی کے حوالہ سے65 مقام اوپر چھلانگ لگائی ہے، جس سے سرمایہ کاروں کا اعتماد بہترین ڈھنگ سے اجاگر ہوتا ہے۔

جہاں تک اختراع اور ٹکنالوجی کا تعلق ہے، ہندوستان میں ہر سال یونی کامس کی تعداد میں کامیابی کے ساتھ بھاری اضافہ ہوا ہے، ڈیجیٹل اقلیم، تعلیم اور سافٹ ویئر میں کار آفرینوں نے اس ملک کو دنیا کے بہترین ملکوں میں پہنچا دیا ہے۔

مالی ہمہ گیری آسان بنانے والی "جن دھن یوجنا" اور آفاقی صحت کوریج کیلئے "آیوش مان بھارت" جیسی ترغیبات اور ہندوستان کو دیہی برق کاری کی طرف لے جانے والی "اجلا" اور "سو بھاگیہ" ترغیبات ان گراں قدر ترغیبات میں شامل ہیں جن کی وجہ سے یہ ملک ترقی کی شاہراہ پر تیزی سے گامزن ہوا ہے۔

ہندوستان ایک ایسی لائق برداشت معیشت بننے کا منتظر ہے جو اس کے تمام شہریوں کیلئے سود مند ثابت ہو اور ملک کی آبادی کے گھنے پن کو سامنے رکھیں توتمام اہداف کو چھونا کوئی چھوٹا کارنامہ نہیں۔
اور یہ تو ابھی آغاز ہے۔ نئی دہلی میں "رائزنگ انڈیا سمٹ" میں بات چیت اور بحث و مباحثہ کے ذریعہ اس طرح کے اور بھی موضوعات کو نہ صرف ہائی لائٹ کیا جائے گا بلکہ ان پر گفتگو ہوگی اور انہیں کارگر بھی بنایا جائے گا۔ یقینی بنائیں کہ آپ رابطہ میں رہیں گے اور ہندوستان کو رائز کرتا دیکھیں گے۔

نیوز 18 رائزنگ انڈیا سمٹ کا انعقاد  18۔19 مارچ کو نئی دہلی ہونے والا تھا تاہم  کورونا وائرس  کے  وباء پھیلنے کے خدشات کے پیش نظر اسے ملتوی کردیاگیاہے اور کورونا وائرس کا خطر ہ  کم ہونے کے بعد نئے تاریخوں کا اعلان کیاجائے گا۔
First published: Mar 11, 2020 10:03 PM IST