ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

گجرات کے ایک نجی اسپتال میں 22 کووڈ۔19 مریضوں کا آکسیجن اچانک ختم! اسپتال انتظامیہ ریفیل ٹینکر کا کرتی رہ گئی انتظار!

واگھوڈیا روڈ پر واقع نجی اسپتال نے مریضوں کے لواحقین کو آگاہ کیا کہ اسپتال آکسیجن مہیا نہیں کر سکے گا۔ کیونکہ سپلائی کرنے والی ایجنسی بار بار توجہ دلانا کے بعد بھی سستی کا مظاہرہ کررہی ہے۔

  • Share this:
گجرات کے ایک نجی اسپتال میں 22 کووڈ۔19 مریضوں کا آکسیجن اچانک ختم! اسپتال انتظامیہ ریفیل ٹینکر کا کرتی رہ گئی انتظار!
گجرات کے ایک نجی اسپال میں 22 کووڈ۔19 مریضوں کا آکسیجن اچانک ختم! (Image for representation/Reuters)

احمد آباد : وڈوڈرا کے کیئر ملٹی اسپیشلیٹی اسپتال (Care Multispeciality Hospital) میں داخل بائیس کووڈ۔19 مریضوں کا آکسیجن رات 9.30 بجے ختم ہو گیا۔ اس سے قبل شام چار بجے سے ہی ریفیل ٹینکر کا انتظار کیا جارہا تھا۔ واگھوڈیا روڈ پر واقع نجی اسپتال نے مریضوں کے لواحقین کو آگاہ کیا کہ اسپتال آکسیجن مہیا نہیں کر سکے گا۔ کیونکہ سپلائی کرنے والی ایجنسی بار بار توجہ دلانے کے بعد بھی سستی کا مظاہرہ کررہی ہے۔


لواحقین سے کہا گیا کہ وہ دوسرے اسپتالوں میں مریضوں کے لئے انتظامات کریں یا یہ قبول کریں کہ اس کے نتائج کے لئے اسپتال کو مورد الزام نہیں ٹھرایا جاسکتا۔ رشتے داروں نے اسپتال انتظامیہ سے التجا کی کہ آکسیجن کا فورا انتظام کرے۔ اسی دوران کنٹرول روم میں ایس او ایس کے کالز سنے گئے۔ آخر کار صبح 12.30 بجے ریفل ٹینکر پہنچا۔


اسپتال کے چیف ایگزیکٹو آفیسر دھرمندر سنگھ سولنکی (Dharmendrasinh Solanki) نے بتایا کہ ’’ہمارے پاس لواحقین کو مطلع کرنے کے علاوہ اور کوئی چارہ نہیں تھا۔ ہم بدھ کی شام 4 بجے سے مائع آکسیجن ٹینکر حاصل کرنے کی کوشش کر رہے تھے اور ہمیں معلوم تھا کہ ہماری فراہمی صرف 9.30 بجے تک جاری رہے گی‘‘۔


انھوں نے کہا کہ اسی دوارن ہم نے وڈوڈرا آکسیجن کنٹرول روم، مقامی حکام اور دیگر ایجنسیوں کو فون کیا لیکن اس دوران سبھی نے کوئی اطمینان بخش جواب نہیں دیا۔

انہوں نے کہا کہ ’’شام 9.30 سے انتظار کرنے کے بعد آخر کار ​​12.30 بجے ٹینکر پہنچا۔ ہم نے متعدد دوسرے نجی اسپتالوں سے گزارش کی اور کچھ سلنڈر حاصل کیے۔ اسپتال میں 22 کووڈ-19 مریض ہیں۔ جن میں سے آٹھ آئی سی یو میں ہیں‘‘۔
جمعرات کے روز شہر کے 10 نجی اسپتالوں میں آکسیجن کی قلت کا سامنا کرنا پڑا۔ کچھ نے تو یہ بھی اعتراف کیا کہ آکسیجن کے کمی کے خدشہ کی وجہ سے نئے مریضوں کو اسپتال میں شریک کیے جانے سے منع کردیا گیا۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 01, 2021 12:47 AM IST