ہوم » نیوز » وطن نامہ

فحش ویڈیو وائرل ہونے سے مایوس اداکارہ نےکہی خود کشی کی بات، پولیس سے بھی کی اپیل

پریہ گپتا نے کہا 'آج میرے لئے ایسا کیا ہے، کل آپ کے گھرکی بہن بیٹی کے لئے ایسا ہوگا تو؟ پلیزایسا کرنے والے کوتلاش کریں۔ پریہ نے آگے کہا 'ایسا کرنے والے کا انکشاف نہیں ہوا تو مرجاؤں گی'۔

  • Share this:
فحش ویڈیو وائرل ہونے سے مایوس اداکارہ نےکہی خود کشی کی بات، پولیس سے بھی کی اپیل
پریہ گپتا سوشل میڈیا پر کافی ایکٹیورہتی ہیں۔ تصویر: فیس بک پروفائل

جودھپور: راجستھانی اداکارہ اورڈانسرپریہ گپتا عرف سونوبابو کے نام سے ایک فحش ویڈیو وائرل ہونے کے معاملے میں پیرکوخود پریہ گپتا سوشل میڈیا پرروبروہوئیں۔ وائرل ویڈیو کو پوری طرح سے خارج کرتے ہوئے پریہ نےاپنے فیس بک لائیو میں کہا کہ ' میں اورمجھے جاننے والوں کویہ معلوم ہے کہ وائرل ویڈیو میرا نہیں ہے، لیکن کوئی ہے جواسے بدنام کررہا ہے۔

پریہ گپتا نے کہا 'آج میرے لئے ایسا کیا ہے، کل آپ کے گھرکی بہن بیٹی کے لئے ایسا ہوگا تو؟ پلیز ایسا کرنے والے کوتلاش کریں۔ پریہ نے آگے کہا 'ایسا کرنے والے کا انکشاف نہیں ہوا تومرجاؤں گی'۔ پریہ گپتا نے کہا کہ میری محنت کا پھل یہ ملے گا... مجھے نہیں جینا...۔ مجھے رہنا ہی نہیں یہاں پر'۔ سوشل میڈیا پرپریہ گپتا کے اسٹیٹمنٹ والا یہ ویڈیو بھی وائرل ہورہا ہے۔

پریہ گپتا اپنے ٹک ٹاک پربھی ویڈیو پوسٹ کرتی رہتی ہیں۔ تصویر: فیس بک پروفائل پریہ گپتا اپنے ٹک ٹاک پربھی ویڈیو پوسٹ کرتی رہتی ہیں۔ تصویر: فیس بک پروفائل

پریہ گپتا نے کہا کہ لوگ مجھ پر سوال اٹھارہے تھے کہ 'میں لائیونہیں آئی، لومیں نے اپنا اسٹیٹمنٹ دے دیا ہے۔ اب گزارش ہے کہ اس انسان کا پتہ لگا لو، پولیس سے بھی اپیل ہے کہ جلد ازجلد ان کا پتہ لگا لیں...۔ اورکچھ نہیں چاہئے۔ آج میرے ساتھ ایسا ہوا ہے کہ کل کوئی اورلڑکی بدنام ہوسکتی ہے'۔ پریہ گپتا کے اسٹیٹمنٹ والا وائرل ویڈیو یوٹیوب اورواٹس اپ پرویڈیو وائرل قابل ذکرہے کہ راجستھانی کامیڈی ، رقص اوراداکاری کے میدان میں بہت کم وقت میں پریہ گپتا نے اپنی الگ پہچان بنائی ہے۔ پی جی فلمس نام سے پریہ اپنی ٹیم کے ساتھ میوزک اور ویڈیوکے لئے کام کرتی ہیں۔ فی الحال پریہ گپتا کے نام سے وائرل ہوئے فحش ویڈیو کولے کر کسی تھانے میں معاملہ درج نہیں ہوا ہے۔ حالانکہ پیرکوفیس بک پراپنی لائیو ویڈیو میں پریہ پولیس سے بھی گہارلگاتی ہوئی نظرآئی ہیں۔ اس کے بعد پولیس کیا قدم اٹھاتی ہے؟ اور اس پورے معاملے کی جانچ میں کون قصوروار پایا جاتا ہے، ابھی کہنا مشکل ہوگا۔
First published: Nov 25, 2019 08:51 PM IST