உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عمران پرتاپ گڑھی کو راجیہ سبھا بھیجنے کی وجہ سے کانگریس میں بغاوت! مہاراشٹر کے لیڈر نے سونیا گاندھی کو بھیجا استعفیٰ

    Protest in Congress for Rajyasabha Post: کانگریس میں راجیہ سبھا سیٹ کو لے کر گھمسان مچا ہوا ہے۔ کانگریس نے آئندہ راجیہ سبھا الیکشن کے لئے پارٹی کی طرف سے 10 امیدواروں کے ناموں کا اعلان کیا ہے، لیکن کئی لیڈران کو ان نئے ناموں پر اعتراض ہے۔ سب سے زیادہ اترپردیش کے عمران پرتاپ گڑھی کے نام کو لے کر مخالفت ہو رہی ہے۔

    Protest in Congress for Rajyasabha Post: کانگریس میں راجیہ سبھا سیٹ کو لے کر گھمسان مچا ہوا ہے۔ کانگریس نے آئندہ راجیہ سبھا الیکشن کے لئے پارٹی کی طرف سے 10 امیدواروں کے ناموں کا اعلان کیا ہے، لیکن کئی لیڈران کو ان نئے ناموں پر اعتراض ہے۔ سب سے زیادہ اترپردیش کے عمران پرتاپ گڑھی کے نام کو لے کر مخالفت ہو رہی ہے۔

    Protest in Congress for Rajyasabha Post: کانگریس میں راجیہ سبھا سیٹ کو لے کر گھمسان مچا ہوا ہے۔ کانگریس نے آئندہ راجیہ سبھا الیکشن کے لئے پارٹی کی طرف سے 10 امیدواروں کے ناموں کا اعلان کیا ہے، لیکن کئی لیڈران کو ان نئے ناموں پر اعتراض ہے۔ سب سے زیادہ اترپردیش کے عمران پرتاپ گڑھی کے نام کو لے کر مخالفت ہو رہی ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: کانگریس میں راجیہ سبھا سیٹ کو لے کر گھمسان مچا ہوا ہے۔ کانگریس نے آئندہ راجیہ سبھا الیکشن کے لئے پارٹی کی طرف سے 10 امیدواروں کے ناموں کا اعلان کیا ہے، لیکن کئی لیڈران کو ان نئے ناموں پر اعتراض ہے۔ سب سے زیادہ اترپردیش کے عمران پرتاپ گڑھی کے نام کو لے کر مخالفت ہو رہی ہے۔

      مہاراشٹر کے ایک لیڈر نے عمران پرتاپ گڑھی کو امیدوار بنائے جانے کی مخالفت میں کانگریس کے مہاراشٹر یونٹ کے جنرل سکریٹری کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ مہاراشٹر کانگریس کے لیڈر آشیش دیشمکھ نے کہا ہے کہ مہاراشٹر میں اترپردیش کے لیڈر کو تھوپا جا رہا ہے، جو مہاراشٹر کے کانگریس کارکنان کے ساتھ نا انصافی ہے۔ آشیش دیشمکھ نے اپنا استعفیٰ پارٹی صدر سونیا گاندھی کو بھیج دیا ہے۔

      معروف شاعر عمران پرتاپ گڑھی کی مخالفت

      این ڈی ٹی وی کی خبر کے مطابق، اس سے قبل مہاراشٹر سے عمران پرتاپ گڑھی کو امیدوار بنائے جانے کو لے کر نغمہ نے بھی اپنی مخالفت درج کرائی تھی۔ آشیش دیشمکھ نے کہا، باہری لیڈروں کو دوسری ریاست میں تھوپنا پارٹی کی ترقی کے لئے مفید نہیں ہے۔ یہ مہاراشٹر کے عام کانگریسی کارکنان کے ساتھ بھید بھاو ہے۔ حالانکہ آشیش دیشمکھ نے پارٹی سے استعفیٰ نہیں دیا ہے اور کہا ہے کہ وہ وفادار کانگریس کارکن کے طور پر پارٹی کے لئے مسلسل کام کرتے رہیں گے۔

      ایک دن پہلے ہی کانگریس نے راجیہ سبھا کے لئے امیدواروں کے ناموں کا اعلان کیا تھا، جن میں 34 سالہ عمران پرتاپ گڑھی کا نام بھی شامل ہیں۔ اترپردیش کے عمران خان شاعر ہیں اور بی جے پی کی سخت تنقید کرتے ہیں۔ انہیں مہاراشٹر سے پارٹی نے امیدوار بنایا ہے۔ سال 2019 میں عمران خان کو یوپی کے مرادآباد سے لوک سبھا میں اتارا گیا تھا، لیکن وہ بی جے پی امیدوار سے بھاری ووٹوں سے ہار گئے تھے۔

      نغمہ نے کھلے طور پر ظاہر کی ہے مخالفت

      کانگریس میں راجیہ سبھا سیٹ کی امیدواری کی امید لگائے ہوئے کئی لیڈران نے عمران پرتاپ گڑھی کے نام کا کھل کر مخالفت کی ہے۔ اس سے پہلے کانگریس ترجمان پون کھیڑا نے بھی احتجاج ظاہر کرتے ہوئے کہا تھا کہ شاید میری تپسیا میں کوئی کمی رہ گئی تھی۔ اس کے ساتھ ہی کانگریس لیڈر اور مشہور اداکار نغمہ نے بھی ٹوئٹ کرکے عمران پرتاپ گڑھی کے نام کی کھل کر مخالفت کی تھی۔ انہوں نے کہا، عمران بھائی کے سامنے میری 18 سال کی تپسیا بھی چھوٹی پڑگئی۔ اس کے بعد انہوں نے ٹوئٹ کیا، 2003/04 میں جب میں کانگریس میں شامل ہوئی تھی، تب ہماری صدر سونیا گاندھی نے مجھ سے انفرادی طور پر راجیہ سبھا میں بھیجنے کا وعدہ کیا تھا۔ اس وقت کانگریس اقتدار میں بھی نہیں تھی۔ اس کے بعد سے 18 سال گزر چکے ہیں، لیکن مجھے اب تک موقع نہیں ملا۔ عمران پرتاپ گڑھی کو مہاراشٹر سے امیدوار بنایا گیا ہے، تب میں خود سے پوچھتی ہوں کہ کیا میں کم اہل ہوں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: