ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

اقلیتوں کے مسائل کو لے کر حج ہاوس کے سامنے احتجاج، جھارکھنڈ کے اقلیتی طبقات سے متعلق 15 نکاتی مطالبات پیش

آل مسلم یوتھ ایسوسی ایشن نامی تنظیم کے زیراہتمام منعقدہ اس مظاہرہ کے دوران وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین، پارلیمانی امور کے وزیر عالمگیر عالم اور اقلیتی بہبود کے وزیر چمپئی سورین کے نام جھارکھنڈ کے اقلیتی طبقوں سے متعلق 15 نکاتی مطالبات پیش کیا گیا۔

  • Share this:
اقلیتوں کے مسائل کو لے کر حج ہاوس کے سامنے احتجاج، جھارکھنڈ کے اقلیتی طبقات سے متعلق 15 نکاتی مطالبات پیش
اقلیتوں کے مسائل کو لے کر حج ہاوس کے سامنے احتجاج، جھارکھنڈ کے اقلیتی طبقوں سے متعلق 15 نکاتی مطالبات پیش

رانچی: رانچی واقع کڈرو میں حج ہاوس کے سامنے اقلیتوں کے حقوق کو لے کر مظاہرہ کیا گیا۔ آل مسلم یوتھ ایسوسی ایشن نامی تنظیم کے زیراہتمام منعقدہ اس مظاہرہ کے دوران وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین، پارلیمانی امور کے وزیر عالمگیر عالم اور اقلیتی بہبود کے وزیر چمپئی سورین کے نام جھارکھنڈ کے اقلیتی طبقوں سے متعلق 15 نکاتی مطالبات پیش کیا گیا۔ ان میں موب لنچنگ میں مقتول کے کنبہ کو انصاف اور باز آبادکاری کے ساتھ لنچنگ روکنے کے لئے سپریم کورٹ کی ہدایت کے مطابق قانون بنانے۔


سوشل میڈیا پر مذہبی ریمارکس دے کر معاشرے کو نقصان پہنچانے والوں کے خلاف قانون بنانے، آبادی کے مطابق سرکاری اور پرائیوٹ نوکریوں میں اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کی حصہ داری، جانوروں کی خرید و فروخت گوشت کے کاروبار میں مہاراشٹر، اترپردیش کی طرز پر قانون بنانے، اردو اساتذہ کی بحالی میں پسماندہ اور عام ذات کی خواتین کے لئے ریزرویشن دینے، ہائی کورٹ کے حکم کے مطابق، 2018 میں 2 اسکولوں میں اردو اساتذہ کی تقرری اور دیگر مطالبات شامل ہیں۔ اس موقع پر ایسوسی ایشن کے صدر ایس علی نے کہا کہ ملک میں اقلیتوں کو مسلسل ہراساں کرنے، ان کے مذہبی مقامات پر حملے، موب لنچنگ کے نام پر 100 سے زائد افراد کی ہلاکت اور کہیں نہ کہیں مذہبی تفریق جیسے ایشو کو لے کر مظاہرہ کر رہے ہیں۔


مسلم یوتھ ایسوسی ایشن نامی تنظیم کے زیراہتمام منعقدہ اس مظاہرہ کے دوران وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین، پارلیمانی امور کے وزیر عالمگیر عالم اور اقلیتی بہبود کے وزیر چمپئی سورین کے نام جھارکھنڈ کے اقلیتی طبقوں سے متعلق 15 نکاتی مطالبات پیش کیا گیا۔
مسلم یوتھ ایسوسی ایشن نامی تنظیم کے زیراہتمام منعقدہ اس مظاہرہ کے دوران وزیر اعلیٰ ہیمنت سورین، پارلیمانی امور کے وزیر عالمگیر عالم اور اقلیتی بہبود کے وزیر چمپئی سورین کے نام جھارکھنڈ کے اقلیتی طبقوں سے متعلق 15 نکاتی مطالبات پیش کیا گیا۔


انہوں نے کہا کہ 18 دسمبر کو یوم عالمی اقلیتی حقوق کے موقع پر، اقلیتوں کے حقوق کے لئے حکومت کے سامنے 15 مطالبات رکھ رہے ہیں۔ اگر ہمارے مطالبات پورے نہیں ہوئے تو ہم سڑکوں پر احتجاج کریں گے۔ اس موقع پر تنظیم کے لطیف عالم، محمد نوشاد، محمد فرقان، ضیاالدین انصاری، اکرام حسین، ارشد ضیا، ابرار احمد، انظر عالم، تہمید انصاری، منظور عالم، عمران انصاری، عبدالرحیم، محمد عاصف، افضل خان، جاوید اختر، وغیرہ شامل تھے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Dec 17, 2020 08:31 PM IST