உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پنجاب: زرعی قوانین کی واپسی امریندر سنگھ کو کرے گی مدد؟ بی جے پی سے اتحاد کا راستہ صاف

    پنجاب: زرعی قوانین کی واپسی امریندر سنگھ کو کرے گی مدد؟ بی جے پی سے اتحاد کا راستہ صاف

    پنجاب: زرعی قوانین کی واپسی امریندر سنگھ کو کرے گی مدد؟ بی جے پی سے اتحاد کا راستہ صاف

    Punjab Assembly Election 2022: مرکزی حکومت کے تین زرعی قوانین (Three Farm Laws) کی واپسی سے متعلق فیصلے کا سب سے زیادہ اثر پنجاب (Punjab) اور اترپردیش (Uttar Pradesh) کی سیاست میں دیکھنے کو ملے گی۔ خاص طور پرکانگریس سے الگ ہوکر نئی سیاسی پارٹی بنانے والے کیپٹن امریندر سنگھ کے لئے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی (Narendra Modi) نے جمعہ کی صبح ایک بڑا اعلان کیا اور اس نے ملک کی سیاست میں کئی نئے حالات کو جنم دے دیا ہے۔ مرکزی حکومت کے تین زرعی قوانین (Three Farm Laws) کی واپسی سے متعلق فیصلے کا سب سے زیادہ اثر پنجاب (Punjab) اور اترپردیش (Uttar Pradesh) کی سیاست میں دیکھنے کو ملے گی۔ خاص طور پر کانگریس سے الگ ہوکر نئی سیاسی پارٹی بنانے والے کیپٹن امریندر سنگھ کے لئے۔ پنجاب کے سابق وزیر اعلیٰ نے آئندہ اسمبلی انتخابات (Punjab Assembly Election 2022) لڑنے کا اعلان کیا ہے اور انہوں نے پنجاب میں بی جے پی کے ساتھ تال میل سے کبھی انکار نہیں کیا ہے بلکہ کھل کرکہا تھا کہ وہ بی جے پی کے ساتھ تال میل پر تبادلہ خیال کریں گے۔ اب جبکہ مرکزی حکومت نے تینوں زرعی قوانین کی واپسی کا اعلان کردیا ہے تو کیپٹن امریندر سنگھ (Amarinder Singh) کے لئے پنجاب کی سیاست میں بی جے پی کے ساتھ اتحاد کرکے الیکشن میں جانا آسان ہوگیا ہے۔

      کیپٹن امریندر سنگھ نے مودی حکومت سے کیا تھا یہ مطالبہ

      کیپٹن امریندر سنگھ مسلسل مرکزی حکومت سے یہ مطالبہ کر رہے تھے کہ تینوں زرعی قوانین کو واپس لیا جائے۔ پنجاب کے سابق وزیر اعلیٰ نے اس بارے میں مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ اور وزیر اعظم نریندر مودی سے بھی کئی مواقع پر ملاقات کی تھی۔ امریندر نے جب کانگریس سے الگ ہوکر نئی پارٹی کا اعلان کیا تھا، تبھی انہوں نے بی جے پی کے ساتھ تال میل سے اشارے دیئے تھے اور اس کی جھلک امریندر سنگھ کے ٹوئٹ میں بھی جھلکتی ہے۔ وزیر اعظم کے اعلان کے بعد انہوں نے ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا۔ ’گریٹ نیوز! وزیر اعظم نریندر مودی کا شکریہ کہ انہوں نے ہر ایک پنجابی کے مطالبہ کو قبول کیا اور گرونانک جینتی کے مبارک موقع پر تین کالے زرعی قوانین کی واپسی کا اعلان کیا ہے۔ میں پُرامید ہوں کہ مرکزی حکومت کسانوں کی ترقی کے لئے مسلسل کام کرنا جاری رکھے گی‘۔ اس ٹوئٹ میں امریندر سنگھ نے وزیر داخلہ امت شاہ کو بھی ٹیگ کیا تھا۔

      کیپٹن امریندر سنگھ مسلسل مرکزی حکومت سے یہ مطالبہ کر رہے تھے کہ تینوں زرعی قوانین کو واپس لیا جائے۔
      کیپٹن امریندر سنگھ مسلسل مرکزی حکومت سے یہ مطالبہ کر رہے تھے کہ تینوں زرعی قوانین کو واپس لیا جائے۔


      بی جے پی کے لئے پنجاب میں آسان ہوئی راہ

      حالانکہ پنجاب الیکشن میں زرعی قوانین کی واپسی سے صرف کیپٹن امریندر سنگھ کے لئے ہی آسانی نہیں ہوئی ہے بلکہ بی جے پی کے لئے بھی چیزیں آسان ہوتی ہوئی نظر آرہی ہیں۔ زرعی قوانین کے موضوع پر ہی شرومنی اکال دل نے بی جے پی سے اپنا دہائیوں پرانا اتحاد توڑا تھا اور مخالفت میں سڑکوں پر اترے تھے۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      بڑی خبر: وزیراعظم مودی نےکیا اعلان، تینوں زرعی قوانین ہوں گے واپس

      لمبے وقت سے اکالی دل پنجاب میں بی جے پی کی بڑی اتحادی پارٹی رہی ہے، لیکن اتحاد ٹوٹنے کے بعد اکالی دل اور بی جے پی کے راستے الگ ہوگئے تھے اور پنجاب میں بی جے پی کو ایک اتحادی کی ضرورت تھی، لیکن زرعی قوانین کو لے کر کسان تنظیموں کے احتجاج بی جے پی کی سیاست میں سب سے بڑی رکاوٹ بن رہی تھی۔ اب جبکہ زرعی قوانین کی واپسی کا اعلان ہوگیا ہے۔ بی جے پی آئندہ اسمبلی انتخابات میں اپنی دعویداری مضبوطی سے ٹھوک سکتی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: