உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Sidhu Moosewala Murder Case: سدھو موسے والا قتل کیس میں پولیس کو ملے اہم ثبوت، CCTV میں نظر آئے سات چہرے

    سدھو موسے والا قتل کیس میں پولیس کو ملے اہم ثبوت، CCTV میں نظر آئے سات چہرے

    سدھو موسے والا قتل کیس میں پولیس کو ملے اہم ثبوت، CCTV میں نظر آئے سات چہرے

    Sidhu Moosewala Murder Case: سدھو کی موت کو لے کر گرمائی سیاست کے درمیان پنجاب پولیس قاتلوں تک پہنچنے کی کوشش میں لگی ہے ۔ پولیس کے ہاتھ کئی اہم ثبوت لگے ہیں ۔

    • Share this:
      چنڈی گڑھ : مشہور پنجابی سنگر اور کانگریس لیڈر سدھو موسے والا کی منگل کو ان کے آبائی گاوں موسی میں آخری رسوم ادا کی گئی ۔ اس دوران بھاڑی بھیڑ نظر آئی ۔ سدھو کی موت کو لے کر گرمائی سیاست کے درمیان پنجاب پولیس قاتلوں تک پہنچنے کی کوشش میں لگی ہے ۔ پولیس کے ہاتھ کئی اہم ثبوت لگے ہیں ۔ پولیس کو ایک سی سی ٹی وی فوٹیج ملا ہے ، جس میں سات مشتبہ افراد ایک ڈھابے میں بیٹھ کر کھانا کھاتے نظر آرہے ہیں ۔ پولیس نے ان میں سے کچھ کی شناخت کرلی ہے ۔ پولیس کی جانچ میں کئی نام سامنے آئے ہیں، جن کا سدھو کے قتل سے تعلق ہونے کا شک ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : سدھو موسے والا کے اہل خانہ کا پوسٹ مارٹم کروانے سے انکار، کیا این آئی اے جانچ کا مطالبہ


      پنجاب پولیس کو ملا یہ سی سی ٹی وی فوٹیج منسکھ ڈھابے کا ہے، جو منسا ضلع میں بھیکھی روڈ پر واقع ہے ۔ سدھو پر حملے سے کچھ گھنٹے پہلے 29 مئی کی صبح یہ لوگ ڈھابے میں گئے تھے ۔ سی سی ٹوی وی میں ساتوں لوگ ڈھانے کے اندر ٹیبل کرسی پر بیٹھ کر کھانا کھاتے نظر آرہے ہیں ۔ پولیس نے ان میں سے دو نوجوان کی شناخت کرلی ہے ۔ پولیس ذرائع کے مطابق ان کے نام من پریت سنگھ منو اور جگروپ سنگھ روپا بتائے جارہے ہیں ۔ یہ دونوں پنجاب کے ہی ہیں ۔ پولیس اب ان کی دھڑپکڑ میں مصروف ہوگئی ہے ۔ دیگر لوگوں کی شناخت کی بھی کوشش کی جارہی ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : سدھو موسے والا کا قتل، گینگسٹر گولڈی برار کے لنکس کی تلاشی جاری


      اس کے علاوہ پولیس کی اب تک کی جانچ میں کئی نام سامنے آئے ہیں، جن کے بارے میں شک ہے کہ وہ کسی نہ کسی طرح سدھو موسے والا کے قتل سے وابستہ ہیں ۔ ٹاپ خفیہ ذرائع نے نیوز 18 کو بتایا کہ جن لوگوں پر پولیس کو شک ہے ، ان میں حصار کے رہنے والے بھولا ، نارنود کے رہنے والے ستیندر کالا، سونو کاجل اور بٹٹو کے علاوہ اجے گل ، امت کاجلا، گولڈی برار ، لارینس بشنوئی اور ایک پنجابی سنگر کا مینیجر سچن اور جگو بھگوان پوریا شامل ہیں ۔ ان میں زیادہ تر پنجاب اور ہریانہ کے ہیں ۔

      خیال رہے کہ گولڈی برار ویسے تو مکتسر کا ہے ، لیکن ان دنوں کینیڈا میں اس کے چھپے ہونے کا شک ہے ۔ سدھو موسے والا کے قتل کے بعد گولڈی نے ہی فیس بک پوسٹ میں قتل کی ذمہ داری لی تھی ۔ ان نے کہا تھا کہ وکی مدوکھیڑا اور گرلال برار کی موت کا بدلہ لینے کیلئے اس نے اور لارینس بشنوئی نے اس قتل کو انجام دیا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: