உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کیپٹن امریندر سنگھ کے پارٹی بنانے کے اعلان سے پنجاب کانگریس میں ہلچل، فکرمند وزیراعلیٰ نے اٹھایا یہ قدم

    کیپٹن امریندر سنگھ کے پارٹی بنانے کے اعلان سے پنجاب کانگریس میں ہلچل، فکرمند وزیراعلیٰ نے اٹھایا یہ قدم

    کیپٹن امریندر سنگھ کے پارٹی بنانے کے اعلان سے پنجاب کانگریس میں ہلچل، فکرمند وزیراعلیٰ نے اٹھایا یہ قدم

    Punjab CM Charanjit Singh Channi: کانگریس صدر سونیا گاندھی (Sonia Gandhi) کو لکھے اپنے خط میں امریندر سنگھ نے پارٹی کی اعلیٰ قیادت پر نشانہ سادھا اور کہا کہ ان کے سامنے من گھڑت طریقے سے اعدادوشمار رکھے گئے اور کہا گیا کہ ریاست کے لیڈران اور اراکین اسمبلی ان کی حمایت نہیں کرتے ہیں۔

    • Share this:
      چنڈی گڑھ: پنجاب کانگریس (Punjab Congress) میں ممکنہ ٹوٹ اور اقتدار کے لئے جاری اندرونی رسہ کشی کے درمیان پنجاب کی کانگریس حکومت نے منگل کو دیر شب تک غور وخوض کیا۔ پارٹی کی طرف سے کہا گیا کہ سبھی وزرا اور اراکین اسمبلی وزیراعلیٰ چرنجیت سنگھ چنی (CM Charanjit Singh Channi) کے ساتھ مضبوطی سے کھڑے ہیں اور ریاست کی ترقی کے لئے اٹھائے گئے دیگر اقدامات کی تعریف کرتے ہیں۔ پنجاب کانگریس کی یہ میٹنگ سابق وزیر اعلیٰ کیپٹن امریندر سنگھ کے کانگریس سے استعفیٰ دینے کے کچھ گھنٹے بعد شروع ہوئی۔

      امریندر سنگھ (Amarinder Singh) نے پارٹی کے اندر لمبے وقت سے چل رہی اندرونی رسہ کشی کے بعد پہلے وزیر اعلیٰ عہدہ چھوڑا تھا، بعد میں انہوں نے نئی پارٹی بنانے کا اعلان کیا۔ کانگریس صدر سونیا گاندھی (Sonia Gandhi) کو لکھے گئے اپنے خط میں امریندر سنگھ نے پارٹی کی اعلیٰ قیادت پر نشانہ سادھا اور کہا کہ ان کے سامنے من گھڑت طریقے سے اعدادوشمار رکھے گئے اور کہا گیا کہ ریاست کے لیڈران اور اراکین اسمبلی ان کی حمایت نہیں کرتے ہیں۔

      واضح رہے کہ پنجاب کے سابق وزیر اعلیٰ نے منگل کو کانگریس پارٹی کی رکنیت سے استعفیٰ دے دیا اور اپنی پارٹی ’پنجاب لوک کانگریس‘ کی تشکیل کا اعلان کیا۔ پنجاب میں کچھ مہینے بعد ہی اسمبلی انتخابات ہونے والے ہیں۔ امریندر سنگھ نے کہا کہ الیکشن کمیشن کو نئی پارٹی کے نام پر کوئی اعتراض نہیں ہے اور بعد میں رسمی طور پر اس کی تشکیل کی جائے گی۔ کانگریس سے استعفیٰ دینے سے کچھ دن پہلے ہی امریندر سنگھ نے ان قیاس آرائیوں کو مسترد کردیا تھا، جس میں کہا جا رہا تھا کہ انہیں منانے کے لئے کانگریس کے ساتھ پچھلے دروازے سے ان کی بات چیت چل رہی ہے۔

      امریندر سنگھ نے سات صفحات پر مشتمل استعفیٰ نامہ میں گاندھی فیملی کی تنقید کی اور کہا کہ انہیں ریاست کے وزیر اعلیٰ عہدے سے ہٹانے کے لئے ’سازش‘ رچی گئی۔کانگریس صدر سونیا گاندھی کو لکھے گئے خط میں کیپٹن امریندر سنگھ نے وزیر اعلیٰ رہتے ہوئے اپنی حصولیابیاں بتائی ہیں۔ انہوں نے کانگریس کی پنجاب یونٹ کے صدر نوجوت سنگھ سدھو اور پارٹی کے سینئر لیڈر ہریش راوت پر بھی تنقید کی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: