ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پنجاب : ترن تارن میں شوبھا یاترا کے دوران دھماکہ ، کئی افراد کی ہلاکت کا اندیشہ

ترن تارن کے سینئر پولیس سپرنٹنڈنٹ دھرو دہیا نے اس خبر کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ دھماکہ کی وجہ سے لوگوں کی لاشیں بکھری پڑی ہیں ۔ ہلاک شدگان کی شناخت کی جارہی ہے ۔

  • UNI
  • Last Updated: Feb 08, 2020 09:20 PM IST
  • Share this:
پنجاب : ترن تارن میں شوبھا یاترا کے دوران دھماکہ ، کئی افراد کی ہلاکت کا اندیشہ
علامتی تصویر

پنجاب کے ترن تارن میں پلاسور گاؤں کے نزدیک ہفتہ کوشہید بابا دیپ سنگھ جینتی کے موقع پر نکالی جارہی شوبھا یاترا میں دھماکہ ہونے میں متعدد لوگوں کے ہلاک ہونے کا اندیشہ ہے ۔ اس دھماکہ میں کئی لوگ زخمی ہیں ۔ ترن تارن کے سینئر پولیس سپرنٹنڈنٹ دھرو دہیا نے اس خبر کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ دھماکہ کی وجہ سے لوگوں کی لاشیں بکھری پڑی ہیں ۔ ہلاک شدگان کی شناخت کی جارہی ہے ۔


اس سے پہلے انسپکٹر جنرل آف پولیس (بارڈر رینج ) سریندر پال سنگھ نے حادثہ میں دولوگوں کی موت کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ ترن تارن میں گاؤں پوہ ونڈ سے ٹاہلا صاحب کے لیے شوبھا یاترا جارہی تھی کہ گاؤں پلاسور کے نزدیک پہنچنے پر شوبھا یاترا کے ساتھ پٹاخوں کو لیکر چل رہی گاڑی میں دھماکہ ہونے سے یہ حادثہ پیش آیا ۔ انھوں نے بتایاکہ دھماکہ شدید تھا۔ مسٹر سنگھ نے بتایاکہ حادثہ پٹاخوں میں چنگاری گرنے سے ہوا ۔



غیر مصدقہ ذرائع کے مطابق حادثہ میں تقریبا چھ لوگوں کے ہلاک ہونے کی اطلاع ہے ۔ انھوں نے بتایا کہ وہ جائے حادثہ کے لیے روانہ ہورہے ہیں ۔ بچاؤ کا کام جاری ہے ۔ ضلع کے ڈپٹی کمشنر پی کے سبھروال نے یواین آئی کو بتایا کہ انھوں نے حادثہ کی جانکاری لینے کے لیے ایس ڈی ایم کو جائے حادثہ کے لیے روانہ کیاہے ۔ پولیس معاملہ کی جانچ کررہی ہے۔
First published: Feb 08, 2020 09:20 PM IST