اپنا ضلع منتخب کریں۔

    پنجاب کی خاتون کو مسقط میں بنایا گیا یرغمال، روز ہوتا ہے جنسی استحصال، ساتھ ہیں 20 اور لڑکیاں

    خاتون کے شوہر نے پولیس کو دی گئی شکایت میں کہا ہے کہ ان کی بیوی سمیت تقریباً 20 خواتین کو وہاں یرغمال بنالیا گیا ہے اور ان کا جسمانی استحصال کیا جا رہا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      پنجاب کے ہوشیار پور سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون کو نوکری دلانے کے بہانے عمان کے راجدھانی مسقط میں پھنسادیا گیا ہے۔ خاتون کے شوہر نے پولیس کو دی گئی شکایت میں کہا ہے کہ ان کی بیوی سمیت تقریباً 20 خواتین کو وہاں یرغمال بنالیا گیا ہے اور ان کا جسمانی استحصال کیا جا رہا ہے۔ پولیس نے ہوشیار پور کے گاؤں پٹی سے بیرون ملک بھیجے گئے ایجنٹ جوڑے کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔

      پولیس سے موصولہ اطلاع کے مطابق شکایت کنندہ نے کہا ہے کہ اس کی بیوی گاؤں میں سلائی کی دکان چلاتی تھی۔ اس دوران اس کی ملاقات پٹی گاؤں کے دیپیکا اور اس کے شوہر راجیش کمار عرف پنڈی سے ہوئی۔ جو لوگوں کو بیرون ملک بھیجنے کا کام کرتے تےا۔ انہوں نے متاثرہ لڑکی کو بتایا کہ وہ خواتین اور نوجوان خواتین کو بیرون ملک میں مقیم امیر لوگوں کے گھروں میں کام کرنے کے لیے بھیجتے ہیں۔ بدلے میں آپ کو اچھی خاصی تنخواہ ملتی ہے۔ انہوں نے اس کے عوض میں 30 ہزار روپے کا مطالبہ کیا۔

      مئی کے مہینے میں مسقط بھیجا گیا۔
      شکایت میں کہا گیا ہے کہ اس کے بعد خاتون نے 18 مئی 2022 کو جوڑے کو بیرون ملک جانے کے لیے 30 ہزار روپے دیے تھے۔ اس کے بعد خاتون کو بیرون ملک بھیج دیا گیا۔ اس شخص نے بتایا کہ اس کی بیوی اسے باقاعدہ طور پرفون کرتی تھی۔ اس نے بتایا تھا کہ وہ محمد فیض کے گھر پر کام کرتی تھی۔ لیکن کچھ دنوں بعد اس نے فون کر کے بتایا کہ محمد فیض نے اسے 20 لڑکیوں کے ساتھ ایک گھر میں قید کر رکھا ہے اور ان کے فون چھین لیے ہیں۔ خاتون نے بتایا تھا کہ ان کا روزانہ جسمانی استحصال کیا جاتا ہے۔ اس شخص نے بتایا کہ جب وہ فون پر بات کر رہا تھا تو اس دوران شور اور چیخیں آنے لگیں، ایسا لگ رہا تھا کہ کوئی خواتین کو مار رہا ہے۔

      میرٹھ میں جبرا 400لوگوں کا زبردستی مذہب تبدیل: کورونا کے دور میں ہوا کھیل

      بنگلہ دیش کے 3 کھلاڑی ہندستان کیلئے ثابت ہو سکتے ہیں خطرہ، ایک ہر 8ویں گیند پر لے رہا وکٹ

      ملزم ٹکٹ کے 2 لاکھ 80 ہزار مانگ رہا ہے۔
      اس شخص نے شکایت میں مزید کہا کہ وہ غیر ملکی بھیجے گئے جوڑے راکیش کمار اور اس کی بیوی دیپیکا کے گھر گیا جہاں اس نے انہیں ساری بات بتائی۔ اس پر انہوں نے مسقط فون کیا۔ محمد فیض نے فون اٹھایا تو اس نے کہا کہ اگر خاتون کو واپس ہندوستان بھیجنا ہے تو ٹکٹ کے لیے 2 لاکھ 80 ہزار روپے ابھی بھیجنے ہوں گے۔ پولیس تھانہ چبےوال نے متاثرہ کے بیانات پر ملزم جوڑے راجیش کمار عرف پنڈی اور دیپیکا ساکن پٹی اور محمد فیض ساکن مسقط کے خلاف 13 پنجاب ٹریول پروفیشنل ایکٹ 2014 سمیت دفعہ 406، 420 آئی پی سی کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: