உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Saudi Arabia میں موت کی سزا پائے ہندوستانی کو رہا کرانے کیلئے کنبہ کو کم پڑ رہے تھے پیسے، ڈاکٹر نے کیا 20 لاکھ روپے دینے کا اعلان، جانئے پورا معاملہ

     Saudi Arabia میں موت کی سزا پائے ہندوستانی کو رہا کرانے کیلئے کنبہ کو کم پڑ رہے تھے پیسے، ڈاکٹر نے کیا 20 لاکھ دینے کا اعلان، جانئے پورا معاملہ ۔ علامتی تصویر ۔

    Saudi Arabia میں موت کی سزا پائے ہندوستانی کو رہا کرانے کیلئے کنبہ کو کم پڑ رہے تھے پیسے، ڈاکٹر نے کیا 20 لاکھ دینے کا اعلان، جانئے پورا معاملہ ۔ علامتی تصویر ۔

    Balwinder Singh Saudi Arabia : پنجاب کی گدڑباہا تحصیل کے ملان گاؤں کے 35 سالہ بلویندر سنگھ کو سعودی عرب میں ایک شخص کے قتل کے جرم میں موت کی سزا سنائی گئی ہے۔ وہیں اس سزا سے بچنے کے لیے 15 مئی تک 2 کروڑ روپے بلڈ منی کے طور پر جمع کرنے کو کہا گیا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی : پنجاب کی گدڑباہا تحصیل کے ملان گاؤں کے 35 سالہ بلویندر سنگھ کو سعودی عرب میں ایک شخص کے قتل کے جرم میں موت کی سزا سنائی گئی ہے۔ وہیں اس سزا سے بچنے کے لیے 15 مئی تک 2 کروڑ روپے بلڈ منی کے طور پر جمع کرنے کو کہا گیا ہے۔ لواحقین نے کسی نہ کسی طرح 1 کروڑ 85 لاکھ روپے جمع کرلئے، لیکن اب مزید 15 لاکھ روپے درکار ہیں۔ خاندان کی اس مصیبت کو دیکھ کر ڈاکٹر ایس پی ایس اوبرائے نے مدد کا ہاتھ بڑھایا اور 20 لاکھ روپے کی مدد کا وعدہ بھی کیا ہے ۔ ڈاکٹر اوبرائے نے ویڈیو کے ذریعہ اس بارے میں تفصیلی جانکاری دی۔

      پیشہ سے ڈاکٹر اوبرائے نے ویڈیو جاری کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب کے رہنے والے 35 سالہ بلویندر سنگھ کو قتل کے ایک مقدمہ میں سعودی عرب میں موت کی سزا سنائی گئی ہے۔ وہیں اس سزا سے بچنے کے لیے بلڈ منی یا جرمانے کی صورت میں 2 کروڑ روپے مانگے گئے ہیں ۔ متاثرہ خاندان نے اب تک 1 کروڑ 45 لاکھ روپے جمع کرلئے ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ وہ جس کمپنی میں کام کرتے ہیں، اس نے بھی 40 لاکھ روپے کی مدد کا وعدہ کیا ہے۔

       

      یہ بھی پڑھئے : کشمیری پنڈتوں پر ہونے والا ہر حملہ 'کشمیر کی روح' پر حملہ ہے: فاروق عبد اللہ


      ڈاکٹر اوبرائے نے بتایا کہ میں نے بلویندر کے بھائی سے بات کی ہے۔ بلویندر کو بچانے کے لیے اس کے اہل خانہ کو مزید 15 لاکھ روپے کی ضرورت ہے۔ اس کے پیش نظر میں نے 20 لاکھ روپے کی مدد کا وعدہ کیا ہے۔ یہ رقم ہندوستان سے سعودی عرب کے بینک میں جمع کرائی جائے گی۔ اس کے لیے حکومت ہند کی منظوری بھی حاصل کر لی گئی ہے۔

      2013 میں پنجاب کے ملان گاؤں کے بلویندر سنگھ کو سعودی عرب میں ایک شخص کے قتل کا مجرم پایا گیا تھا۔ وہاں کے قانون کے مطابق اگر بلویندر سنگھ جرمانہ کے طور پر 2 کروڑ روپے جمع نہیں کرا پاتا ہے تو اس کو موت کی سزا سنائی جا سکتی ہے۔

       

      یہ بھی پڑھئے : عمران خان کا بڑا الزام، مجھے مارنے کیلئے رچی جارہی سازش، اگر کچھ ہوا تو...


      بلویندر سنگھ کے بھائی ہردیپ سنگھ نے بتایا کہ 2013 میں ایک پنجابی نوجوان اور سعودی عرب کے شہری کے درمیان جھگڑا ہوا تھا۔ بلویندر نے جھگڑا ختم کرانے کے لیے مداخلت کی اور اسی دوران اس شخص نے بلویندر پر حملہ کرنے کے لیے چاقو نکال لیا۔ بلویندر نے ہاتھ میں چاقو دیکھ کر اپنے دفاع کے لیے شہری پر ڈنڈے سے حملہ کردیا ۔ چار گھنٹے تک اسپتال میں داخل رہنے کے بعد بھی اس کو بچایا نہیں جا سکا اور اس کی موت ہوگئی ۔

      سعودی عرب کے اس شہری کو قتل کرنے کے جرم میں سب سے پہلے بلویندر سنگھ کو سات سال قید کی سزا سنائی گئی ۔ اس کے بعد عدالت نے انہیں 8 نومبر 2021 تک بلڈ منی کے طور پر 2 کروڑ روپے جمع کرانے کا حکم دیا۔ رقم جمع نہ کرانے پر اسے موت کی سزا بھی سنائی گئی۔ اس کے بعد بلویندر نے رقم کے بندوبست کے لیے عدالت سے کچھ اور وقت مانگا، جس کے بعد آخری تاریخ 15 مئی تک بڑھا دی گئی۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: