உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پانچ گلوبل CEOs کے ساتھ وزیر اعظم کی میٹنگ ، اکنامی سے لے کر اسمارٹ ایجوکیشن تک سب پر گفتگو

    گلوبل سی ای اوز کے ساتھ وزیر اعظم مودی کی ملاقات ، کاروبار سے لے کر فائیو جی پر ہوئی گفتگو ۔ تصویر : اے این آئی ۔

    گلوبل سی ای اوز کے ساتھ وزیر اعظم مودی کی ملاقات ، کاروبار سے لے کر فائیو جی پر ہوئی گفتگو ۔ تصویر : اے این آئی ۔

    وزیراعظم نریندر مودی نے آج امریکہ کی پانچ اہم ملٹی نیشنل کمپنیوں کے سربراہان سے ملاقات کرکے ہندوستان میں کیے گئے اصلاحات سے آگاہ کروایا اور انھیں ہندوستان میں ملنے والے معاشی مواقع سے روبرو کرواتے ہوئے انھیں سرمایہ کاری کے لیے مدعو کیا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      واشنگٹن : وزیراعظم نریندر مودی نے آج امریکہ کی پانچ اہم ملٹی نیشنل کمپنیوں کے سربراہان سے ملاقات کرکے ہندوستان میں کیے گئے اصلاحات سے آگاہ کروایا اور انھیں ہندوستان میں ملنے والے معاشی مواقع سے روبرو کرواتے ہوئے انھیں سرمایہ کاری کے لیے مدعو کیا۔ وزیر اعظم مودی نے سہ روزہ امریکی دورے کے موقع پر جمعرات کو پہلے دن ان اہم کمپنیوں کے سربراہوں سے ایک ایک کرکے ملاقات کی اور ہر کسی سے ان کے شعبے میں ہندوستان میں کیے گئے اصلاحات اور سرمایہ کاری کے بارے میں بات چیت کی۔ وزیراعظم نے سب سے پہلے کوالکام کے سی ای او کرسٹیانو ایمون سے ملاقات کی جس میں انہوں نے ہندوستان میں ٹیلی کام اور الیکٹرانکس کے شعبے میں کوالکام کے لیے مواقع کا ذکر کیا۔

      میٹنگ کے دوران، دونوں نے ہندوستان کے ٹیلی مواصلات اور الیکٹرانکس کے شعبے میں پیش کردہ سرمایہ کاری مواقع کے بارے میں تبادلہ خیالات کیے۔ اس میں الیکٹرانکس سسٹم ڈیزائن اینڈ مینوفیکچرنگ (ای ایس ڈی ایم) کے لئے حال ہی میں لانچ کی گئی پیداواریت سے مربوط ترغیباتی اسکیم (پی ایل آئی) اور ہندوستان میں سیمی کنڈکٹر سپلائی چین میں رونماہونے والی ترقی بھی شامل ہے۔ میٹنگ کے دوران ہندوستان میں مقامی ایکو نظام تیار کرنے سے متعلق حکمت عملیوں پر بھی تبادلہ خیالات کیے گئے۔


      وزیر اعظم نے جن پانچ بڑی کمپنیوں کے سی ای او سے بات کی ان میں سے دو کے سی ای او ہند نژاد ہیں ۔ ان پانچ بڑی کمپنیوں کی کل مالیت جن کے ساتھ وزیر اعظم نے امریکہ میں میٹنگ کی تھی خیال کیا جاتا ہے کہ یہ 555.41 بلین ڈالر (41.03 لاکھ کروڑ روپے) سے زیادہ ہیں۔ ان میں سب سے بڑی کمپنی ایڈوب ہے ، جس کی مجموعی مالیت $ 305.51 بلین بتائی جاتی ہے۔ کوالکام کی مجموعی مالیت $ 150.7 بلین ہے ، بلیک اسٹون کی مالیت $ 85.03 بلین ہے۔ ایڈوب کے سی ای او شانتنو نارائن ایک ہند نژاد بزنس ایگزیکٹو ہیں ۔ وہ حیدرآباد ، ہندوستان میں پیدا ہوئے۔ شانتنو نے اپنی انجینئرنگ کی تعلیم حیدرآباد کی عثمانیہ یونیورسٹی سے کی۔ دوسرے ہند نژاد وویک لال نے یکم جون 2020 کو جنرل ایٹامِکس گلوبل کارپوریشن کے سی ای او کا عہدہ سنبھالا۔ انہوں نے بوئنگ کے دفاعی اور خلائی آپریشنز کا چارج سنبھالا۔ لال نے ریلائنس انڈسٹریز میں بھی کام کیا۔

      وزیر اعظم نریندر مودی نے آج ایڈوب کے صدر اور سی ای او شانتنو نرائن سے ملاقات کی۔ دونوں نے ہندوستان میں اڈوب کے جاری اشتراک اور مستقبل کی سرمایہ کاری کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔ یہ بات چیت ہندوستان کے فلیگ شپ پروگرام ڈجیٹل انڈیا، اور صحت ، تعلیم اور تحقیق و ترقی جیسے شعبوں میں ابھرتی ہوئی ٹیکنالوجیز کے استعمال پر مرتکز رہی۔

      وزیر اعظم نریندر مودی نے فرسٹ سولر کے سی ای او مارک وِڈمار سے ملاقات کی۔ انہوں نے ہندوستان کی قابل تجدید توانائی پس منظر خاص طور سے سولر صلاحیت اور 2030 ء تک قابل تجدید ذرائع سے 450 گیگا واٹ بجلی پیدا کرنے کے ہمارے ہدف کے بارے میں بات کی۔ ہندوستان میں اپنی انوکھی تھِن-فلم ٹیکنالوجی کا استعمال کرکے مینوفیکچرنگ سہولیات کے قیام میں فرسٹ سولر کی دلچسپی کے بارے میں بھی بات چیت ہوئی۔ اس کا مقصد حال ہی میں شروع کی گئی پروڈکشن لنکڈ اِنسینٹیو (پی ایل آئی)منصوبے کا فائدہ اٹھانے کے ساتھ ساتھ ہندوستان کو عالمی سپلائی چین سے جوڑنا ہے۔

      وزیر اعظم مودی نے جنرل ایٹومکس گلوبل کارپوریشن کے چیف ایگزیکٹیو وویک لال سے بھی ملاقات کی ۔ انہوں نے ہندوستان میں دفاعی ٹیکنالوجی سیکٹر کو مضبوط کرنے کے بارے میں بات چیت کی۔ مسٹرلال نے ہندوستان میں دفاع اور اُبھرتی ہوئی ٹیکنالوجی کی تعمیر میں تیزی لانے کے لئے حالیہ پالیسی تبدیلیوں کی ستائش کی۔

      نیز وزیر اعظم نریندر مودی نے بلیک اسٹون کے چیئرمین سی ای او اور بانی مشترک ، اسٹیفن شوارزمین سے ملاقات کی۔  شوارزمین نے ہندوستان میں بلیک اسٹون کے جاری پروجیکٹوں، اور بنیادی ڈھانچہ اور رئیل اسٹیٹ شعبوں میں مزید سرمایہ کاری کے سلسلے میں ان کی دلچسپی کے بارے میں وزیر اعظم مودی کو جانکاری دی۔ قومی بنیادی ڈھانچہ پائپ لائن اور قومی منیٹائزیشن پائپ لائن کے تحت مواقع سمیت ہندوستان میں امید افزا سرمایہ کاری مواقع کے بارے میں بھی تبادلہ خیالات کیے گئے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: