ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

الہ آباد: گنجان مسلم آبادیوں میں بنائے جارہے ہیں کوارنٹائن سینٹر، مشتبہ افرادکوکوارنٹائن کئے جانے کی خبر

باعث تشویش ہےکہ شہرکی سب سے بڑی مسلم آبادی کریلی کے ایک کلو میٹرکےدائرے میں انتظامیہ کی طرف سے اب تک ١۴، کوارنٹائن سینٹر بنا دیئےگئے ہیں۔ ان کوارنٹائن سینٹروں میں کورونا وائرس کے مشتبہ افرادکو کوارنٹائن کیا گیا ہے

  • Share this:
الہ آباد: گنجان مسلم آبادیوں میں بنائے جارہے ہیں کوارنٹائن سینٹر، مشتبہ افرادکوکوارنٹائن کئے جانے کی خبر
الہ آباد کے مسلم اکثریتی علاقوں میں بڑے پیمانے پر کوارنٹائن سینٹر بنائے جانے سےشہرکی گنجان آبادی تشویش میں ہے۔

الہ آباد: اترپردیش کے الہ آباد کے مسلم اکثریتی علاقوں میں بڑے پیمانے پرکوارنٹائن سینٹر بنائےجانےسےشہرکی گنجان آبادی میں کو رونا وائرس پھیلنےکا خطرہ اور بھی زیادہ سنگین ہوگیا ہے۔ مسئلےکی سنگینی کا اندازہ اس بات سے بھی لگایا جاسکتا ہےکہ شہرکی سب سے بڑی مسلم آبادی کریلی کے ایک کلو میٹرکے دائرے میں انتظامیہ کی طرف سے اب تک ١۴، کوارنٹائن سینٹر بنا دیئےگئے ہیں۔ ان کوارنٹائن سینٹروں میں کورونا وائرس کے مشتبہ افرادکو کوارنٹائن کیا گیا ہے، جن عمارتوں کو انتظامیہ نےکوارنٹائن سینٹروں میں تبدیل کردیا ہے۔ ان میں زیادہ ترمیرج ہال یاگیسٹ ہاؤس کے طور پرچلائےجاتے تھے۔ شہر کےمسلم اکثریتی علاقوں میں ایسے شادی گھروں کی خاصی تعداد موجود ہے۔


الہ آباد میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد میں دن بہ دن اضافہ ہو رہا ہے۔ گھنی آبادیوں پر مشتمل مسلم علاقوں میں کوارنٹائن سینٹر بنائےجانے سے لوگوں میں سخت تشویش اور گھبراہٹ پائی جا رہی ہے۔ انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ کی گائڈ لائن کی مطابق کوارنٹائن سینٹر شہریا گاؤں سے باہر بنائےجانا چاہئے۔ گائڈ لائن کےمطابق کوارنٹائن سینٹرکو آبادی سےکافی دور ہونا چاہئے، لیکن ایسا لگتا ہےکہ انتظامیہ نے کوارنٹائن سینٹر بنانے سے پہلے ان گائڈ لائن کو پوری طرح سے نظر اندازکردیا ہے۔


 الہ آباد میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد میں دن بہ دن اضافہ ہو رہا ہے۔

الہ آباد میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد میں دن بہ دن اضافہ ہو رہا ہے۔


قابل غور بات یہ ہےکہ میرج ہال کو کوارنٹائن سینٹر بنانےکی مخالفت کرنے والے مالکان کےخلاف پولیس انتظامیہ سخت  ایکشن لے رہی ہے۔ شہر کےکریلا باغ میں واقع ایک میرج ہال کو کوارنٹائن سینٹر بنانےکی جب اس کے مالک نے مخالفت کی  تو پولیس نے اس میرج ہال کوہی سیل کردیا۔ آبادی کے عین درمیان کوارنٹائن سینٹر بنائےجانے سے لوگوں میں تشویش اور ناراضگی ظاہر ہونے لگی ہے۔ الہ آباد ہائی کورٹ کے سینئر وکیل سیدفرمان احمد نقوی کا کہنا ہےکہ گھنی آبادی کے درمیان کوارنٹائن سینٹر بنا کرانتظامیہ نے علاقےکےلوگوں کی زندگی خطرے میں ڈال دی ہے۔ فرمان احمد نقوی کا کہنا ہےکہ آئی ایم سی آرکی واضح گائڈ لائن ہونےکے باوجود انتظامیہ جان بوجھ کرگھنی آبادی میں کوارنٹائن سینٹر بنا رہی ہے۔

میرج ہال کو کوارنٹائن سینٹر بنانےکی مخالفت کرنے والے مالکان کےخلاف پولیس انتظامیہ سخت ایکشن لے رہی ہے۔
میرج ہال کو کوارنٹائن سینٹر بنانےکی مخالفت کرنے والے مالکان کےخلاف پولیس انتظامیہ سخت ایکشن لے رہی ہے۔


کریلی اسکیم میں رہنے والے ہائی کورٹ کے ایک اور وکیل سید نسیم کا کہنا ہے کہ الہ آباد میں مقامی انتظامیہ حکومت کی گا ئڈ لائن کی کھلے عام دھجیاں اڑا رہی ہے۔ ان کا کہنا ہےکہ مقامی لوگوں کی شکایت اور احتجاج کے باوجود انتظامیہ مسلم علاقوں میں کوارنٹائن سینٹر بنانےکے اپنے فیصلے پر اڑی ہوئی ہے۔ ایڈو کیٹ نسیم کا کہنا ہےکہ گنجان آبادی میں کوارنٹائن سینٹر بنائےجانےکےخلاف جلد ہی الہ آباد کورٹ میں عرضی داخل کی جائےگی۔
First published: May 09, 2020 06:30 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading