உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

     راہل گاندھی کریں گے انکار تو اشوک گہلوت کو پارٹی صدر بناسکتی ہے کانگریس: ذرائع

    کانگریس ذرائع کے حوالے سے بڑی خبر سامنے آرہی ہے۔ ذرائع کے مطابق، اگر راہل گاندھی کانگریس صدر بننے سے انکار کرتے ہیں تو پارٹی اشوک گہلوت کو کانگریس صدر بنا سکتی ہے۔

    کانگریس ذرائع کے حوالے سے بڑی خبر سامنے آرہی ہے۔ ذرائع کے مطابق، اگر راہل گاندھی کانگریس صدر بننے سے انکار کرتے ہیں تو پارٹی اشوک گہلوت کو کانگریس صدر بنا سکتی ہے۔

    کانگریس ذرائع کے حوالے سے بڑی خبر سامنے آرہی ہے۔ ذرائع کے مطابق، اگر راہل گاندھی کانگریس صدر بننے سے انکار کرتے ہیں تو پارٹی اشوک گہلوت کو کانگریس صدر بنا سکتی ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: کانگریس ذرائع کے حوالے سے بڑی خبر سامنے آرہی ہے۔ ذرائع کے مطابق، اگر راہل گاندھی کانگریس صدر بننے سے انکار کرتے ہیں تو پارٹی اشوک گہلوت کو کانگریس صدر بنا سکتی ہے۔ دراصل پارٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ راہل گاندھی اب بھی کانگریس صدر کا عہدہ سنبھالنے میں ہچکچا رہے ہیں۔ تنظیمی الیکشن کا عمل چل رہا ہے، ستمبر/اکتوبر میں نیا صدر منتخب کئے جانے کی مدت طے کی گئی ہے، لیکن  راہل گاندھی نے اب تک واضح جواب نہیں دیا ہے۔ کانگریس ورکنگ کمیٹی کی میٹنگ میں لوک سبھا میں اپوزیشن لیڈر ادھیر رنجن چودھری کے سوال پر راہل گاندھی نے صدر عہدہ سنبھالنے کے امکان پر غور کرنے کو کہا تھا۔

      اسی وجہ سے پارٹی اشوک گہلوت کے نام پر بھی غوروخوض کر رہیہے۔ گزشتہ کچھ دنوں سے دہلی میں پارٹی کے معاملات میں ان کی سرگرمی بڑھی ہے۔ حالانکہ اشوک گہلوت راجستھان کے وزیر اعلیٰ کا عہدہ نہیں چھوڑنا چاہتے، لیکن پارٹی میں غوروخوض جاری ہے اور راہل گاندھی کو منانے کی کوشش ہوگی، لیکن راہل گاندھی حتمی طور پر انکار کرتے ہیں تو راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت کو صدر بنائے جانے کے امکان پر غوروخوض کیا جا رہا ہے۔

      واضح رہے کہ اسی ماہ 20 اگست کو کانگریس تنظیم میں الیکشن کا عمل پورا ہو رہا ہے۔ اسی سلسلے میں کانگریس کی الیکشن کمیٹی کے سربراہ مدھوسودن مستری آج بدھ کو دہلی آرہے ہیں۔ دوسری طرف کانگریس کے میڈیا شعبہ کی طرف سے اس معاملے پر سوال پوچھے جانے پر کچھ بھی کہنے سے انکار کردیا گیا۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      Amrit Ratna Samman: ادار پونا والا بنے’امرت رتن‘، کہا- مودی حکومت کے تعاون سے ویکسین بنا کورونا کو ہرایا

      ذرائع کے مطابق، راہل گاندھی نے جب صدر عہدہ چھوڑا تھا تب پارٹی کے لئے غیر گاندھی صدر کی وکالت کی تھی۔ اس کے بعد سابق مرکزی وزیر مکل واسنک کا نام صدر عہدے کے لئے سامنے آیا تھا، لیکن کئی باقی لیڈران نے سونیا گاندھی سے گزارش کرکے ان کو عبوری صدر بننے کے لئے راضی کرلیا تھا، جب سے وہ کانگریس صدر کی ذمہ داری نبھا رہی ہیں۔

      وہیں گزشتہ منگل کو کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے پارلیمنٹ میں برسراقتدار کی طرف سے مہنگائی ہونے کی بات کو خارج کئے جانے سے متعلق حکومت پر تنقید کی اور الزام لگایا کہ بی جے پی کی قیادت والی حکومت آنکھوں پر تکبر کی پٹی باندھ کر اپنے ’دوستوں‘ کو ہندوستان کی جائیدادیں ’فری فنڈ‘ میں بیچ رہی ہے۔ بی جے پی کے لیڈران نے پیر کے روز راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت پر ڈوبنے کے دو الگ الگ حادثات میں خوشنودی کی سیاست کرنے کا الزام لگایا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: