کشمیراکیلےجانے کےلئےتیارتھے راہل گاندھی، ایئرپورٹ کا ویڈیوشیئرکرکےحکومت کوگھیرا

کانگریس لیڈرراہل گاندھی نےہفتہ کواپوزیشن لیڈروں کوسری نگرمیں داخل ہونےسے روکنےکے لئے حکومت کے قدم کی مذمت کی۔

Aug 25, 2019 10:09 PM IST | Updated on: Aug 25, 2019 10:14 PM IST
کشمیراکیلےجانے کےلئےتیارتھے راہل گاندھی، ایئرپورٹ کا ویڈیوشیئرکرکےحکومت کوگھیرا

راہل گاندھی نےایئرپورٹ کا ایک ویڈیو شیئرکرکےکہا ہےکہ وہ اکیلے کشمیرجانےکوتیارتھے، لیکن نہیں جانے دیا گیا۔

کانگریس لیڈرراہل گاندھی نے ہفتہ کواپوزیشن لیڈروں کوسری نگرمیں داخل ہونے سے روکنے کےلئےحکومت کے قدم کی مذمت کی۔ راہل گاندھی نےکہا کہ وفد اورمیڈیا کوجموں وکشمیرکےلوگوں کے ساتھ ہورہی زیادتیوں کا ثبوت ملا ہے۔ راہل گاندھی نےکہا کہ اس سے پتہ چلتا ہےکہ وادی کےلوگ کس طرح سخت انتظامیہ اورسفاکانہ فوج کے سائے میں زندگی گزارنے کومجبورہیں۔

جموں وکشمیرکو خصوصی ریاست کا درجہ دینے والے دفعہ 370 کےالتزام کومنسوخ کرنےکےبعد کشمیروادی کے حالات کا جائزہ لینےکےلئے راہل گاندھی سمیت اپوزیشن لیڈروں کا ایک وفد ہفتہ کودورے کےلئےگیا تھا، لیکن ریاستی انتظامیہ نےاس وفد کوسری نگرہوائی اڈے سےباہرجانےکی اجازت نہیں دی، جس کی وجہ سےانہیں واپس نئی دہلی لوٹنا پڑا۔

Loading...

راہل گاندھی نے کیا یہ ٹوئٹ

کانگریس لیڈرراہل گاندھی نے ہفتہ کوہوئےاس حادثہ کا ایک ویڈیوپوسٹ کیا ہے۔ اس ویڈیو میں ایئرپورٹ پروفد کوروکے جانےکےبعد راہل گاندھی کہہ رہے ہیں کہ سب سے پہلی بات حکومت نےمجھے یہاں بلایا ہے۔ گورنرنےکہا ہےکہ میں یہاں آسکتا ہوں، تواب میں آیا ہوں، پھرآپ کہہ رہے ہیں کہ آپ نہیں آسکتے۔ حکومت کہہ رہی ہے کہ یہاں سب ٹھیک ہے، سب نارمل ہے، تواگرسب کچھ ٹھیک ہے توہمیں یہاں سے کیوں بھیجا جارہا ہے۔ راہل گاندھی نے کہا کہ جس بھی علاقے میں امن ہو، ہم وہاں جانےکوتیارہیں۔ اگردفعہ 144 نافذ ہےتومیں اکیلےجانےکےلئےتیارہوں۔ ہم سبھی ایک ایک کرکےجائیں گے، ایک گروپ کےطورپرنہیں جائیں گے۔

اس ویڈیو میں راہل گاندھی آگےمیڈیا سے بات کرتے نظرآرہے ہیں۔ یہی نہیں راہل گاندھی نے الزام لگایا ہےکہ وفد کےساتھ پہنچے نامہ نگاروں کے ساتھ بدسلوکی کی گئی اورانہیں پیٹا گیا۔ راہل گاندھی نےیہ بھی کہا کہ اس سے واضح ہوجاتا ہےکہ جموں وکشمیرمیں حالات ٹھیک نہیں ہیں۔

راہل گاندھی نےاپنے ٹوئٹ میں کہا کہ جموں وکشمیرکے لوگوں کی آزادی اورشہریوں کی آزادی پرروک لگائے20 دن ہوچکے ہیں۔ انہوں نےکہا کہ اپوزیشن کے لیڈروں اورصحافیوں کوجموں وکشمیرکے لوگوں کے ساتھ ہورہےسخت برتاو کےبارے میں تب پتہ چلا، جب ہم نےکل سری نگرکا دورہ کرنے کی کوشش کی۔ اس وفد میں راہل گاندھی کےعلاوہ کانگریس کےسینئرلیڈرغلام نبی آزاد، سی پی آئی (ایم) کے جنرل سکریٹری سیتا رام یچوری، سی پی آئی کے جنرل سکریٹری ڈی راجہ، سماجوادی پارٹی کےلیڈررام گوپال یادو، شرد یادو، راشٹریہ جنتا دل کےمنوج جھا وغیرہ شامل تھے۔

Loading...