ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

راہل گاندھی نےکہا- چین سے سرحدی تنازعہ پر وزیر اعظم مودی کی خاموشی سے حیران ہوں

کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے کہا ہے کہ وہ حیران ہیں کہ چین کے فوجیوں کے ہندوستانی سرحد میں گھس آنے کے باوجود وزیر اعظم نریندر مودی اس پورے واقعہ پر خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 11, 2020 02:03 AM IST
  • Share this:
راہل گاندھی نےکہا- چین سے سرحدی تنازعہ پر وزیر اعظم مودی کی خاموشی سے حیران ہوں
راہل گاندھی نے چین سے سرحدی تنازعہ پروزیر اعظم مودی کی خاموشی پر اٹھائے سوال

نئی دہلی: کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے کہا ہے کہ وہ حیران ہیں کہ چین کے فوجیوں کے ہندوستانی سرحد میں گھس آنے کے باوجود وزیر اعظم نریندر مودی اس پورے واقعہ پر خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔ راہل گاندھی نے بدھ کے روز ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا ’’چین ہماری سرحد پر آگیا ہے اور لداخ میں ہمارے علاقے پر قبضہ کرچکا ہے۔ اور اس درمیان وزیر اعظم خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں، اس پورے واقعہ میں وہ کہیں نظر نہیں آرہے ہیں‘‘۔


راہل گاندھی نے اس کے ساتھ ہی ایک تصویر بھی شائع کی ہے، جس کے کیپشن میں کہا گیا ہے کہ چین نے جارحانہ موقف اختیار کرتے ہوئے پوری وادی گلوان اورپانگونگ تسو کے ایک حصے پر اپنا دعویٰ بتارہا ہے۔


ہندوستان نے چین کو دیا جواب


وہیں دوسری طرف ہندوستان اور چین کے درمیان لداخ میں اصلی کنٹرول لائن (ایل اے سی) پر سرحدی تنازعہ کو لے کر تعطل برقرار ہے۔ 6 جون کو ہندوستان اور چین کے درمیان فوجی سطح پر بات چیت ہوئی تھی۔ اب ہندوستان نے چین پر دو ٹوک نشانہ سادھا ہے۔ ہندوستان نے واضح طور پر کہا ہے کہ ایل اے سی پر جاری کشیدگی تبھی کم ہوسکتا ہے، جب چین ایل اے سی پر تعینات اپنے 10000 فوجی، ٹینک اور توپ کو وہاں سے ہٹائے۔ یہ فوجی اور ہتھیار چین نے ہندوستانی علاقوں کے پاس تعینات کئے ہوئے ہیں۔ نیوز ایجنسی اے این آئی کو حکومتی ذرائع نے بتایا، ’مشرقی لداخ علاقے میں چین اور ہندوستان کی فوجیں پیچھے ہٹنا شروع ہوگئی ہیں، لیکن ہم چاہتے ہیں کہ چین کی طرف سے ایل اے سی پر اپنے علاقے میں تعینات کئے گئے ڈویژن سائز (10000 سے زیادہ) فوجیوں اور بھاری ہتھیاروں کو وہاں سے ہٹائے۔ ایل اے سی سے پیچھے ہٹنا تو شروع ہوگیا ہے، لیکن جب تک چین ایل اے سی پر فوجیوں، ٹینک اور بھاری ہتھیاروں کو نہیں ہٹاتا، تب تک کشیدگی کم نہیں ہوسکتی‘۔
First published: Jun 11, 2020 12:01 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading