ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

راہل گاندھی نے کہا- چین سرحد کے حالات پر خاموشی توڑے حکومت

کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے کہا تھا کہ ہند - چین سرحد پر موجودہ حالات کو لے کر شفافیت کی ضرورت ہے۔

  • Share this:
راہل گاندھی نے کہا- چین سرحد کے حالات پر خاموشی توڑے حکومت
راہل گاندھی: فائل فوٹو

نئی دہلی: کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے چین کی سرحد پر تناؤ کے حالات کے سلسلے میں حکومت کی خاموشی کو خطرناک بتایا اور کہا کہ بحران سے جوجھ رہے ملک کے عوام کو اصلیت بتائی جانی چاہئے۔


راہل گاندھی نے جمعہ کو ٹویٹ کرکے کہا، ’’بحران کے اس دور میں چین کی سرحد کے حالات کے سلسلے میں حکومت کی خاموشی سے قیاس آرائیاں زور پکڑ رہی ہیں اور بے یقینی کا ماحول بنا ہوا ہے۔حکومت کو ملک کے عوام کو صاف صاف بتانا چاہئے کہ سرحد پر ہوکیا رہا ہے۔‘‘ واضح رہے کہ لداخ سے لےکر سکم تک چین کی سرحد پر اس ماہ کی شروعات سے تناؤ کے حالات ہیں اور دونوں طرف سے فوجیوں کی طرف سے پتھراؤ کے واقعات اور جھڑپیں ہوئی ہیں۔


ہند- چین سرحد پر دونوں ممالک کی فوجیں سرگرم ہیں۔
ہند- چین سرحد پر دونوں ممالک کی فوجیں سرگرم ہیں۔


انہوں نے ٹوئٹ کرکےکہا، ’چین کے ساتھ سرحد پر حالات کو لے کر حکومت کی خاموشی سے بحران کے وقت بڑے پیمانے پر قیاس آرائیاں اور غیریقینی صورتحال کو تقویت مل رہی ہے’۔ راہل گاندھی نے کہا، ’حکومت کو سامنے آکر واضح کرنا چاہئے اور جو ہو رہا ہے، اس کے بارے میں ہندوستان کو بتانا چاہئے’۔



250 چینی اور ہندوستانی فوجیوں کے درمیان 5 مئی کو جھڑپ 

کچھ دنوں پہلے بھی کانگریس لیڈر نے کہا تھا کہ ہندوستان - چین سرحد پر موجودہ تعطل کو لے کر شفافیت کی ضرورت ہے۔ واضح رہے کہ مشرقی لداخ میں حالات اس وقت کشیدہ ہوگئے، جب تقریباً 250 چینی اور ہندوستانی فوجیوں کے بیچ 5 مئی کو جھڑپ ہوگئی اور اس کے بعد مقامی کمانڈروں کے درمیان میٹنگ کے بعد دونوں فریق میں کچھ اتفاق بن سکا۔
First published: May 29, 2020 02:48 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading