ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہاتھرس سانحہ پر راہل گاندھی کا حکومت پر طنز-’ کچھ لوگ دلت اور مسلمان کو انسان نہیں سمجھتے‘

کانگریس لیڈر راہل گاندھی (Rahul Gandhi) نے اترپردیش کے ہاتھرس (Hathras Case) میں مبینہ طور پر اجتماعی آبرو ریزی کے واقعہ پر ریاست کی یوگی آدتیہ ناتھ (Yogi Adityanath) حکومت کو ایک پھر ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ شرمناک حقیقت یہ ہے کہ کئی ہندوستانی دلت، مسلمان اور قبائلیوں کو انسان نہیں سمجھتے۔

  • Share this:
ہاتھرس سانحہ پر راہل گاندھی کا حکومت پر طنز-’ کچھ لوگ دلت اور مسلمان کو انسان نہیں سمجھتے‘
ہاتھرس سانحہ پر راہل گاندھی کا حکومت پر طنز-’ کچھ لوگ دلت اور مسلمان کو انسان نہیں سمجھتے‘

نئی دہلی: کانگریس لیڈر راہل گاندھی (Rahul Gandhi) نے اترپردیش کے ہاتھرس (Hathras Case) میں مبینہ طور پر اجتماعی آبروریزی کے واقعہ پر ریاست کی یوگی آدتیہ ناتھ (Yogi Adityanath) حکومت کو ایک پھر ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ شرمناک حقیقت یہ ہے کہ کئی ہندوستانی دلت، مسلمان اور قبائلیوں کو انسان نہیں سمجھتے ہیں۔ ہاتھرس میں 14 ستمبرکو ایک 19 سالہ دلت لڑکی کی مبینہ طور پر عصمت دری ہوئی تھی۔ بعد میں لڑکی کی موت ہوگئی تھی۔ معاملے کی جانچ مرکزی جانچ بیورو (سی بی آئی) کو سونپ دی گئی ہے۔

کانگریس (Congress) کے سابق صدر راہل گاندھی (Rahul Gandhi) نے آج ٹوئٹ کرکے ہاتھرس کے واقعہ پر ایک بار پھر اترپردیش حکومت کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا ’’شرمناک سچائی یہ ہے کہ ہندوستانی دلت، مسلمانوں اور قبائلیوں کو انسان سمجھتے ہی نہیں ہیں‘‘۔ وائناڈ سے رکن پارلیمنٹ نے کہا ’’وزیراعلی اور ان کی پولیس کا کہنا ہے کہ وہ کسی کی عصمت دری نہیں ہوئی تھی کیونکہ ان کے لئے اور کئی دیگر ہندوستانیوں کے لئے وہ متاثرہ کوئی نہیں تھی۔ ہاتھرس میں دلت لڑکی کے ساتھ ہوئی دردناک حادثہ کے بعد سے کانگریس مسلسل بی جے پی پر حملہ آور ہو رہی ہے۔ معاملہ اب سیاسی اکھاڑے سے نکل کر سڑکوں تک آچکا ہے۔ راہل گاندھی جانتے ہیں کی پوپی حکومت اس معاملے میں بیک فٹ پر آچکی ہے، یہی وجہ ہے کہ ان کا تیور اور بھی حملہ آور ہوتا جارہا ہے۔




کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے ہاتھرس معاملے میں آج پھر ایک ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا، شرمناک سچائی یہ ہےکہ کئی ہندوستانی دلت، مسلمان اور آدیواسیوں کو انسان سمجھتے ہی نہیں ہیں۔ وزیر اعلیٰ اور ان کی پولیس کہتی ہے کہ کس کی آبروریزی نہیں ہوئی تھی، کیونکہ ان کے لئے اور کئی دوسرے ہندوستانیوں کے لئے وہ متاثرہ نہیں تھی۔ راہل گاندھی نے اس سے پہلے بھی یوپی حکومت پر حملہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ مجھے تھوڑا سا دھکا لگ گیا تو کوئی فرق نہیں پڑتا، لیکن پورے ملک کو دھکیلا جا رہا ہے۔ کام ہے، ملک کی عوام کا حفاظت کرنا۔ ایسی حکومت کے خلاف ہم کھڑے ہوں گے تو دھکا لگےگا، لاٹھی لگے گی تو وہ بھی کھالیں گے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 11, 2020 01:26 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading