ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

بڑے سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ، 17 لڑکیوں اور 10 لڑکوں کو پولیس نے حراست میں لیا

جے پور ایس پی (دیہات ) شنکر دت شرما نے بتایا کہ تفتیش میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ مختلف اضلاع کے لوگ یہاں آتے تھے ۔ پولیس طویل عرصے سے اس پر نظر رکھے ہوئی تھی ۔

  • Share this:
بڑے سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ، 17 لڑکیوں اور 10 لڑکوں کو پولیس نے حراست میں لیا
بڑے سیکس سیکیٹ کا پردہ فاش ، 17 لڑکیوں اور 10 لڑکوں کو پولیس نے حراست میں لیا

راجستھان کے دارالحکومت جے پور اور آس پاس کے علاقوں میں جسم فروشی کے ریکیٹ کا پردہ فاش کرتے ہوئے جے پور دیہی پولیس نے 27 افراد کو حراست میں لیا ہے ۔ اسٹیٹ ہائی وے نمبر 148 پر واقع لونیٹھا گاؤں میں کارروائی کرتے ہوئے پولیس نے جسم فروشی میں ملوث 10 مرد اور 17 لڑکیوں کو حراست میں لیا ہے ۔ یہ کارروائی جموارام گڑھ کے علاقے سے گزرنے والی اسٹیٹ ہائی وے نمبر 148 پر واقع لونیٹھا گاؤں کی نٹ بستی میں کی گئی ۔ اس علاقہ میں طویل عرصے سے پولیس کو جسم فروشی کی شکایات موصول ہو رہی تھیں ۔ پولیس نے رنگے ہاتھوں گرفتار کرنے کیلئے چار پولیس تھانوں کے ایس ایچ اوز سمیت 70 پولیس اہلکاروں کی ایک ٹیم تشکیل دے کر یہ کارروائی انجام دی ۔ پہلے 4 کانسٹیبل کو فرضی گراہک بنا کر بھیجا گیا ۔ جب پولیس کو یقین ہو گیا تو اس کے بعد چاروں طرف سے کالونی کو گھیرنے کے بعد کارروائی کی گئی ۔


جے پور ایس پی (دیہات ) شنکر دت شرما نے بتایا کہ تفتیش میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ مختلف اضلاع کے لوگ یہاں آتے تھے ۔ پولیس طویل عرصے سے اس پر نظر رکھے ہوئی تھی ۔ گرفتار ہونے والوں میں 2 دلال بھی شامل ہیں ۔ اتنے بڑے پیمانے پر سیکس ریکیٹ کے کھیل کے پیچھے کون کون ملوث ہیں ؟ پولیس اب ان کی تلاش کر رہی ہے ۔


اہم بات یہ ہے کہ جے پور دیہی پولیس گزشتہ کچھ مہینوں سے منظم جرائم کے خلاف کارروائی کر رہی ہے ، جس کے تحت تھانہ پنیالہ ، پراگ پورہ ، زوبنیر ، آندھی ، شاہ پورہ ، منوہر پور ، کوٹ پتلی میں پولیس نے منشیات کے خلاف 13 بڑی کارروائیاں کی ہیں جبکہ غیر قانونی شراب کے معاملات میں 11 بڑی کارروائیاں کی گئی ہیں ۔ اسی طرح خوردنی اشیا میں ملاوٹ اور چوری کے معاملات میں 7 مقدمات درج کیے گئے ہیں ۔ علاوہ ازیں کیمیکل آئل چوری کے معاملات میں بھی 8 کارروائیاں کی گئی ہیں ۔

First published: Feb 13, 2020 08:53 PM IST