உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Rajya Sabha Elections 2022: کانگریس کو ووٹ کرے گا کا جے ڈی ایس کا ایک ممبر اسمبلی، کمارسوامی نے کی تصدیق

    Rajya Sabha Elections 2022:  کانگریس کو ووٹ کرے گا کا جے ڈی ایس کا ایک ممبر اسمبلی، کمارسو

    Rajya Sabha Elections 2022: کانگریس کو ووٹ کرے گا کا جے ڈی ایس کا ایک ممبر اسمبلی، کمارسو

    Rajya Sabha Elections 2022: اسدالدین اویسی کی پارٹی اے آئی ایم آئی ایم کی جانب سے مہاراشٹر میں راجیہ سبھا انتخابات کے لیے کانگریس امیدوار عمران پرتاپ گڑھی کی حمایت کا اعلان کیا گیا ہے، جس بی جے پی نے اے آئی ایم آئی ایم کو ایم وی اے کی بی ٹیم قرار دیا ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی: راجیہ سبھا انتخابات میں آج 4 ریاستوں مہاراشٹر، کرناٹک، ہریانہ اور راجستھان کی باقی 16 سیٹوں کے لیے ووٹنگ ہو رہی ہے۔ چاروں ریاستوں مہاراشٹر (6 سیٹیں)، ہریانہ (2 سیٹیں)، راجستھان (4 سیٹیں) اور کرناٹک (4 سیٹیں) میں راجیہ سبھا کی خالی سیٹوں پر زیادہ امیدواروں کے میدان میں اترنے کی وجہ سے مقابلہ دلچسپ ہوگیا ہے۔ ان میں سے 4 سیٹوں پر کراس ووٹنگ اور ایم ایل ایز کی ہارس ٹریڈنگ کولے کر بحث کا بازار گرم ہے۔

      جے ڈی ایس کا ایک ایم ایل اے کانگریس کے حق میں کرے گا کراس ووٹنگ

      جے ڈی ایس کے صدر ایچ ڈی کمارسوامی نے کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ ہمارے پاس 30-31 ووٹ ہیں۔ کی شرینواس گوڑا نے کہا کہ وہ کانگریس کو ووٹ دیں گے۔ اب دیکھتے ہیں۔


      ایم آئی ایم نے کی عمران پرتاپ گڑھی کی حمایت

      اسدالدین اویسی کی پارٹی اے آئی ایم آئی ایم کی جانب سے مہاراشٹر میں راجیہ سبھا انتخابات کے لیے کانگریس امیدوار عمران پرتاپ گڑھی کی حمایت کا اعلان کیا گیا ہے، جس بی جے پی نے اے آئی ایم آئی ایم کو ایم وی اے کی بی ٹیم قرار دیا ہے ۔ اس سے پہلے مہاراشٹر کے وزیر اسلم شیخ نے کہا تھا کہ مہا وکاس اگھاڑی (ایم وی اے) کو تعداد اور طاقت ملی ہے۔ ایم وی اے کے تمام امیدوار جیتنے جا رہے ہیں۔ اے آئی ایم آئی ایم اور ایس پی ہمیشہ ہمارے ساتھ رہے ہیں۔ آج سب کچھ واضح ہے۔

      سدا رمیان پر بھڑکے ایچ ڈی کمار سوامی

      ادھر کرناٹک میں ایچ ڈی کمارسوامی نے کانگریس لیڈر سدارمیا کے جے ڈی (ایس) ایم ایل ایز کو لکھے خط پر ناراضگی ظاہر کی ہے، جس میں ان سے راجیہ سبھا انتخابات میں اپنی پارٹی کے امیدوار کی حمایت کرنے کی درخواست کی گئی ہے۔ انہوں نے اے این آئی کو بتایا، "آج مقامی میڈیا کے سامنے انہوں نے (سدارامیا) کہا ہے کہ انہوں نے میرے ایم ایل ایز کو نہیں لکھا۔ یہاں تک کہ انہوں نے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ سے خط کو ٹویٹ بھی کیا تھا ۔ اب وہ کل کی باتوں کی تردید کر رہے ہیں۔ یہ ان کے دوہرے معیار کو ظاہر کرتا ہے۔


      خیال رہے کہ راجیہ سبھا کے لیے 15 ریاستوں میں 57 میں سے 41 سیٹوں پر امیدوار پہلے ہی بلا مقابلہ منتخب ہو چکے ہیں۔ تاہم کچھ ریاستوں میں جہاں بی جے پی اور کانگریس نے اضافی امیدوار کھڑے کیے ہیں تو وہیں کچھ آزاد امیدوار بھی میدان میں ہیں۔ ایم ایل ایز کی کراس ووٹنگ اور ہارس ٹریڈنگ سے بچنے کے لیے دونوں پارٹیوں نے خاص طور پر راجستھان اور ہریانہ میں ایم ایل ایز کو ریزورٹس میں رکھا ہوا ہے۔

      راجستھان میں آزاد امیدوار سبھاش چندر کے ذریعہ تعداد بڑھانے میں مصروف بی جے پی نے اپنے ممبران اسمبلی کو متحد رکھنے کیلئے مضبوط تیاری کی ہے ۔ ہریانہ میں کارتک شرما آزاد امیدوار کے طور پر میدان ہیں، جنہیں بی جے پی کی حمایت حاصل ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: