رام پورمیں اعظم خان کا دبدبہ برقرار، سماجوادی پارٹی کےمسلم چہرے پربرقراررہا عوام کا اعتماد

ایس پی امیدوارڈاکٹرتزئین فاطمہ نے بی جے پی کےبھارت بھوشن کونزدیکی مقابلے میں 7716 ووٹوں سے شکست دے کرحلقے میں اپنے رسوخ کو برقراررکھا۔

Oct 24, 2019 08:34 PM IST | Updated on: Oct 24, 2019 08:34 PM IST
رام پورمیں اعظم خان کا دبدبہ برقرار، سماجوادی پارٹی کےمسلم چہرے پربرقراررہا عوام کا اعتماد

ضمنی انتخاب میں رام پور کی سیٹ پر تزئین فاطمہ نے جیت حاصل کرکے اعظم خان کا دبدبہ برقرار رکھا۔

لکھنؤ: وقارکی جنگ میں سماج وادی پارٹی (ایس پی) نےاترپردیش کی رامپوراسمبلی سیٹ بچانےمیں کامیاب رہی۔ یہاں ایس پی کی ڈاکٹرتزئین فاطمہ نے بھارتیہ جنتا پارٹی(بی جے پی) کے بھارت بھوشن کونزدیکی مقابلے میں 7716 ووٹوں سے شکست دے کرحلقے میں اپنے رسوخ کو برقراررکھا۔ واضح رہے کہ ڈاکٹرتزئین فاطمہ اس وقت راجیہ سبھا کی رکن ہیں، ابھی ان کی مدت میں ایک سال باقی ہے، لیکن اعظم خان کی روایتی سیٹ کوبرقراررکھنے کے لئے پارٹی نے انہیں میدان میں اتارنے کا فیصلہ کیا تھا۔

ڈاکٹرتزئین فاطمہ کو79 ہزار43 ووٹ ملے جبکہ بی جے پی امیدوارکو 71327 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبرپرہی اکتفاء کرنا پڑا۔ ابتدائی رجحانات میں ایس پی امیدوارنےاچھے ووٹوں سے سبقت حاصل کر لی تھی۔ حالانکہ 18 ویں مرحلےکے بعد بی جے پی امیدوارکے ووٹوں کےگراف میں اضافہ ہوا اورآخری مراحل میں سانس روکنے دینے والے مقابلے میں سماجوادی پارٹی کی جیت ہوئی۔

اعظم خان کی سیٹ پر ان کی اہلیہ نے جیت حاصل کرلی۔

Loading...

رام پورایس پی کی روایتی سیٹ رہی ہے، جہاں پارٹی کے قدآورلیڈرمحمد اعظم خان 8  بار رکن اسمبلی رہ چکے ہیں۔  اعظم خان کے رکن پارلیمنٹ منتخب ہونےکے بعد یہ سیٹ خالی ہوئی تھی۔ ایس پی کےلئے وقار کا مسئلہ بنی اس سیٹ پر پارٹی سربراہ اکھلیش یادونے بھی انتخابی مہم چلائی تھی۔ ایس پی امیدوارکو یہاں 49.13 فیصدی ووٹ ملے جبکہ بی جے پی امیدوارکے حصے میں 44.34 ووٹ آئے۔ اس سیٹ پرکانگریس اوربہوجن سماج پارٹی(بی ایس پی) سمیت دیگرامیدواروں کے ضمانت ضبط ہوگئی۔ اس سیٹ پر 44 فیصدی ووٹنگ ہوئی تھی۔

Loading...