ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Rampur News: کیا ٹل جائے گی شبنم کی پھانسی؟ اب جیل سپرنٹنڈنٹ کو دی گئی رحم کی درخواست

Rampur News: امروہہ میں اپنی ہی فیملی کے 7 اراکین کا بے رحم سے قتل کرنے والی شبنم (Shabnam) نے ایک بار پھر رحم کی درخواست کی گہار لگائی ہے۔ شبنم کے دو وکیل جمعرات کو رام پور ضلع جیل (Rampur District Jail) پہنچے۔ یہاں انہوں نے جیل سپرنٹنڈنٹ کو رحم کی اپیل (Mercy Petition) کے لئے درخواست دی ہے۔

  • Share this:
Rampur News: کیا ٹل جائے گی شبنم کی پھانسی؟ اب جیل سپرنٹنڈنٹ کو دی گئی رحم کی درخواست
کیا ٹل جائے گی شبنم کی پھانسی؟ اب جیل سپرنٹنڈنٹ کو دی گئی رحم کی درخواست

رام پور: اترپردیش کے امروہہ میں اپنی ہی فیملی کے 7 اراکین کا بے رحم سے قتل کرنے والی شبنم (Shabnam) نے ایک بار پھر رحم کی درخواست کی گہار لگائی ہے۔ شبنم کے دو وکیل جمعرات کو رام پور ضلع جیل (Rampur District Jail) پہنچے۔ یہاں انہوں نے جیل سپرنٹنڈنٹ کو رحم کی اپیل (Mercy Petition) کے لئے درخواست دی ہے۔ اطلاعات کے مطابق، جیل سپرنٹنڈنٹ اب ریاست کی گورنر کو رحم کی اپیل والی عرضی بھیجیں گے۔ واضح رہے کہ شبنم کی پہلی رحم کی درخواست صدر جمہوریہ مسترد کرچکے ہیں۔ اب گورنر کو شبنم کے وکیل پھر درخواست بھیج رہے ہیں۔ شبنم کی پھانسی کی سزا کو سپریم کورٹ نے بھی برقرار رکھا تھا۔


دوسری طرف، متھرا جیل میں شبنم کو پھانسی دینے کی تیاری چل رہی ہے۔ پون جلاد بھی دو بار متھرا جیل کے خاتون پھانسی مرکز کا معائنہ کرچکا ہے۔ معاملے میں متھرا جیل انتظامیہ کو بس اب شبنم کے ڈیتھ وارنٹ کا انتظار ہے۔


بیٹا بھی کرچکا ہے معافی کا مطالبہ


اس سے قبل شبنم کے بیٹے محمد تاج نے بھی اپنی ماں کے لئے معافی کی گہار لگا چکا ہے۔ شبنم کے 12 سال کے بیٹے تاج نے کہا ہے کہ راشٹرپتی چچا جی، میری ماں کو معاف کردو۔ غور طلب ہے کہ 14 اپریل 2008 کی رات جب شبنم نے اپنے عاشق سلیم کے ساتھ مل کر اپنی فیملی کے 7 لوگوں کا قتل کردیا تھا، اس وقت وہ دو ماہ کی حاملہ تھی۔

شبنم نے جیل میں ہی تاج کو جنم دیا تھا۔ شبنم کے دوست رہے عثمان سیفی نے تاج کو گود لے لیا تھا۔ آج تاج 12 سال کا ہے۔ اس نے جب ماں کو پھانسی دینے کی بات سنی تو صدر جمہوریہ سے معافی کی گہار لگائی ہے۔ بلند شہر میں بھوڑ چوراہے کے قریب سشیل وہار کالونی میں رہنے والے عثمان سیفی کے فوری تحفظ میں پل بڑھ رہے تاج کو ماں کے گناہوں کا احساس ہے۔ عثمان سیفی نے بتایا کہ تاج نے قومی صدر سے ماں شبنم کو معاف کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

 آزادی کے بعد سے اب تک کسی بھی خاتون کو پھانسی کی سزا نہیں
قابل ذکر ہے کہ متھرا جیل میں 150 سال پہلے خاتون پھانسی گھر بنایا تھا، لیکن آزادی کے بعد سے اب تک کسی بھی خاتون کو پھانسی کی سزا نہیں دی گئی۔ سینئر جیل سپرنٹنڈنٹ شیلندر کمار میترے نے بتایا کہ ابھی پھانسی کی تاریخ طے نہیں ہے، لیکن ہم نے تیاری شروع کردی ہے۔ ڈیتھ وارنٹ جاری ہوتے ہی شبنم کو پھانسی دے دی جائے گی۔ جیل سپرنٹنڈنٹ کے مطابق، پون جلاد دو بار پھانسی گھر کا جائزہ لے چکا ہے۔ اسے تختہ لیور میں کمی نظر آئی، جسے ٹھیک کروایا جارہا ہے۔ بہار کے بکسر سے پھانسی کے لئے رسی منگوائی جارہی ہے۔ اگر آخری وقت میں کوئی اڑچن نہیں آئی تو شبنم پہلی خاتون ہوگی، جسے آزادی کے بعد پھانسی کی سزا ہوگی۔



 میرٹھ کے رہنے والے پون جلاد عام طور پر پارٹ ٹائم کپڑا بیچنے کا کام کرتا ہے۔ ہندوستان میں اس وقت ایک دو ہی مجاز جلاد بچے ہیں، جو یہ کام کر رہے ہیں۔ پون کی عمر 57 سال ہے۔

میرٹھ کے رہنے والے پون جلاد عام طور پر پارٹ ٹائم کپڑا بیچنے کا کام کرتا ہے۔ ہندوستان میں اس وقت ایک دو ہی مجاز جلاد بچے ہیں، جو یہ کام کر رہے ہیں۔ پون کی عمر 57 سال ہے۔




جلاد کے علاوہ پارٹ ٹائم بیچتے ہیں کپڑے

میرٹھ کے رہنے والے پون جلاد عام طور پر پارٹ ٹائم کپڑا بیچنے کا کام کرتا ہے۔ ہندوستان میں اس وقت ایک دو ہی مجاز جلاد بچے ہیں، جو یہ کام کر رہے ہیں۔ پون کی عمر 57 سال ہے۔ پھانسی دینے کے کام کو وہ محض ایک پیشے کے طور پر دیکھتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ کوئی شخص عدلیہ سے سزا یافتہ ہوا ہوگا اور اس نے ویسا کام کیا ہوگا، تبھی اسے پھانسی کی سزا دی جارہی ہوگی، لہٰذا وہ صرف اپنے پیشے کو ایمانداری سے نبھانے کا کام کرتے ہیں۔ پون تقریباً 40 سال سے اس کام سے وابستہ ہیں۔  جوانی میں وہ اپنے دادا کالو جلاد کے ساتھ پھانسی کے کام میں انہیں مدد کرتے تھے۔ کالو جلاد نے اپنے باپ لکشمن سنگھ کی موت کے بعد 1989 میں یہ کام سنبھالا تھا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Feb 19, 2021 04:58 PM IST