ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

چینی ایپس پر پابندی کو مرکزی وزیر روی شنکر پرساد نے بتایا "ڈیجیٹل اسٹرائیک"

India China stand off : مرکزی وزیر روی شنکر پرساد (Ravi Shankar Prasad) نے کہا کہ ہندوستان امن چاہتا ہے ، لیکن اگر کوئی ہم پر بری نظر ڈالے گا تو ہم اس کا کرارا جواب دیں گے ۔

  • Share this:
چینی ایپس پر پابندی کو مرکزی وزیر روی شنکر پرساد نے بتایا
چینی ایپس پر پابندی کو مرکزی وزیر روی شنکر پرساد نے بتایا "ڈیجیٹل اسٹرائیک"

لداخ  (Ladakh)  میں چین (China) کے ساتھ جاری کشیدگی (India China Stand-off) کے درمیان ہندوستان نے چین کے 59 موبائل ایپلی کیشنز(Chinese Applications)  پر پابندی عائد کردی ہے ۔ ان میں ٹک ٹاک سمیت کئی دیگر ایپس شامل ہیں ۔ حکومت کے اس قدم سے چین کو بڑا جھٹکا لگا ہے ۔ اس درمیان مرکزی وزیر اور ی جے پی لیڈر روی شنکر پرساد  (Ravi Shankar Prasad) نے اس معاملہ پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے اس کو ڈیجیٹل اسٹرائیک بتایا ہے ۔


مغربی بنگال میں بی جے پی کی ڈیجیٹل ریلی کو خطاب کرتے ہوئے روی شنکر پرساد نے کہا کہ ہندوستان امن چاہتا ہے ، لیکن اگر کوئی ہم پر بری نظر ڈالے گا تو ہم اس کا کرارا جواب دیں گے ۔ ہم نے چین کی ایپلی کیشنز پر پابندی لگا کر باشندگان وطن کے ڈیٹا کا تحفظ کیا ہے ۔ یہ ڈیجیٹل اسٹرائیک ہے ۔ انہوں نے چین اور ہندوستان کے درمیان جاری کشیدگی کو لے کر سی پی آئی ایم پر نشانہ سادھا ۔ روی شنکر پرساد نے کہا کہ آخر کیوں سی پی آئی ایم چین کی تنقید نہیں کرتی ۔



بتادیں کہ ہندوستان نے پیر کو ۵۹ چینی ایپس پر پابندی لگادی تھی ، جس میں مقبول ایپ ٹک ٹاک اور یوسی براوزر بھی شامل ہیں ۔ یہ پابندی لداخ حلقہ میں ایل اے سی پر چینی فوجیوں کے ساتھ موجودہ کشیدہ صورتحال کے درمیان لگائی گئی ہے ۔

وہیں ہندوستان کے ذریعہ اٹھائے گئے اس قدم کے ایک دن بعد چین نے اس پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ بین الاقوامی سرمایہ کاروں کے جائز اور قانونی حقوق کا تحفظ کرنے کی ذمہ داری ہندوستانی حکومت پر ہے ۔
First published: Jul 02, 2020 01:13 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading