உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    راجستھان بحران: سچن پائلٹ خیمہ کو فوری راحت، راجستھان ہائی کورٹ نے 24 جولائی تک اسمبلی اسپیکرکو کارروائی سے روکا

    سابق نائب وزیر اعلیٰ سچن پائلٹ اور کانگریس کے کچھ دیگر اراکین اسمبلی کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت کے خلاف باغیانہ رخ اپنانے کے سبب راجستھان میں گزشتہ کچھ ہفتوں سے سیاسی رسہ کشی چل رہی ہے۔

    سابق نائب وزیر اعلیٰ سچن پائلٹ اور کانگریس کے کچھ دیگر اراکین اسمبلی کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت کے خلاف باغیانہ رخ اپنانے کے سبب راجستھان میں گزشتہ کچھ ہفتوں سے سیاسی رسہ کشی چل رہی ہے۔

    کانگریس قانون ساز پارٹی کے اجلاس میں حاضر نہ ہوکر وہپ کی خلاف ورزی کرنے والے اراکین اسمبلی کے بارے میں راجستھان ہائی کورٹ میں جاری سماعت آج مکمل ہوگئی اور فیصلہ 24 جولائی تک محفوظ رکھ لیا گیا ہے۔

    • Share this:
      جے پور: کانگریس قانون ساز پارٹی کے اجلاس میں حاضر نہ ہوکر وہپ کی خلاف ورزی کرنے والے اراکین اسمبلی کے بارے میں راجستھان ہائی کورٹ میں جاری سماعت آج مکمل ہوگئی اور فیصلہ 24 جولائی تک محفوظ رکھ لیا گیا ہے۔ عدالت نے دونوں فریق کی طرف سے سماعت مکمل کرتے ہوئے فیصلہ آئندہ تین دن کے لئے ملتوی کردیا۔ اس کے ساتھ ہی، قانون ساز اسمبلی کے اسپیکر بھی ان ارکان اسمبلی کے خلاف 24 جولائی تک فیصلہ نہیں کرپائیں گے۔ بدلتے ہوئے سیاسی واقعات میں کانگریس کی مقننہ پارٹی کے اجلاس میں غیر حاضر رہنے پر سچن پائلٹ خیمہ کے 19 ایم ایل اے کو قانون ساز اسمبلی کے اسپیکر ڈاکٹر جی جوشی نے وہپ کی خلاف ورزی کے معاملے میں نوٹس جاری کرکے 17 جولائی کو جواب دینے کا حکم دیا تھا۔ اس کے بعد پائلٹ گروپ نے اس نوٹس کو راجستھان ہائی کورٹ میں چیلنج کیا۔

      سیاسی ماحول گرمایا

      واضح رہے کہ اس پورے بحران کے دوران پارٹی وہپ کی خلاف ورزی کے معاملے میں سچن پائلٹ سمیت کانگریس کے 19 باغی اراکین اسمبلی کو تھمائے گئے نوٹس کو لے کر ہائی کورٹ میں سماعت ہوئی۔ وہیں اس درمیان الزام تراشی اور جوابی الزام تراشی کا معاملہ بھی سرخیوں میں رہا۔ گزشتہ ہفتے راجستھان کی سیاست میں بھونچال لانے والے آڈیو ٹیپ دھماکہ اور پیر کو کانگریس اراکین اسمبلی گرراج سنگھ ملنگا کی طرف سے سچن پائلٹ پر لگائے گئے 35 کروڑ کی پیشکش کے الزامات کے بعد سیاسی ماحول پوری طرح سے گرمایا ہوا ہے۔ اس درمیان خرید وفروخت معاملے میں ایس اوجی اور اے سی بی کی جانچ بھی تیزی سے چل رہی ہے۔

      عدالت نے دونوں فریق کی طرف سے سماعت مکمل کرتے ہوئے فیصلہ آئندہ تین دن کے لئے ملتوی کردیا۔
      عدالت نے دونوں فریق کی طرف سے سماعت مکمل کرتے ہوئے فیصلہ آئندہ تین دن کے لئے ملتوی کردیا۔


      ہائی کورٹ میں سماعت

      سیاسی بحران کے درمیان سچن پائلٹ خیمہ کے اراکین اسمبلی کو پارٹی وہپ کی خلاف ورزی معاملے میں اسمبلی اسپیکر کی طرف سے جاری کئے گئے نوٹس پر منگل کو بھی ہائی کورٹ میں سماعت جاری رہی۔ چیف جسٹس ماہنتی اور جسٹس پرکاش گپتا کی بینچ میں سماعت ہوئی۔ پائلٹ خیمہ کی طرف سے پیروی کر رہے سینئر وکیل مکل روہتگی نے آج ریزائنڈر پر بحث کی۔ اس کے بعد اس معاملے میں فریق بننے کے لئے داخل کی گئی درخواست پر ان کے وکلا کو بھی سنا گیا۔

      کانگریس اراکین اسمبلی کی میٹنگ

      وہیں دوسری جانب آج صبح کانگریس قانون ساز پارٹی کی میٹنگ ہوئی۔ یہ میٹںگ ہوٹل فیئرمونٹ میں ہوئی۔ اس ہوٹل میں حکومتی خیمہ ڈٹا ہوا ہے۔ قکانگریس انون ساز پارٹی کی میٹنگ وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت کی صدارت میں ہوئی۔ میٹنگ میں پارٹی کے سینئر لیڈران بھی موجود رہے۔ وہیں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ راجستھان کے وزیراعلیٰ اشوک گہلوت اپنی پوری طاقت دکھانے کے لئے تیار ہیں۔ وہ ہائی کورٹ کے فیصلے کا انتظار کر رہے ہیں، لیکن اس سے قبل وہ فلور ٹسٹ کی تمام تیاریوں میں مصروف ہیں۔ فلور ٹسٹ سے متعلق آج شام تک اشوک گہلوت بڑا فیصلہ بھی لے سکتے ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: