ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

مساجد کو کورونا سے محفوظ رکھنے کے لئے علمائے دین نے سنبھالا محاذ

لاک ڈاؤن کے دوران بند رہنے والی دور دراز علاقوں کی چھوٹی مساجد میں از سر نو نماز شروع کرنے اور اس کو سینیٹائزڈ کرنے کی ذمہ داری علمائے دین نے اب خود سنبھال لی ہے۔

  • Share this:
مساجد کو کورونا سے محفوظ رکھنے کے لئے علمائے دین  نے سنبھالا محاذ
مساجد کو کورونا سے محفوظ رکھنے کے لئے علمائے دین نے سنبھالا مورچہ

الہ آباد: لاک ڈاؤن کے دوران بند رہنے والی دور دراز علاقوں کی چھوٹی مساجد میں از سر نو نماز شروع کرنے اور اس کو سینیٹائزڈ کرنے کی ذمہ داری علمائے دین نے اب خود سنبھال لی ہے۔ الہ آباد میں ابھی بھی  ایسی کئی مساجد ہیں، جہاں با قاعدگی سے پنچگانہ نماز نہیں شروع کی جا سکی ہے۔ علاقے کے لوگوں کے مطابق لاک ڈاؤن ختم کئے جانے کے باوجود ابھی بھی مقامی انتظامیہ کی طرف سے کئی طرح کی رکاوٹیں کھڑی کی جارہی ہیں۔


تالا بندمساجد کو سینیٹائزڈ کرنے اور اس کو کورونا وائرس سے پاک رکھنےکےلئے علمائے دین نے خود مورچہ سنبھال لیا ہے۔ علمائے دین اور ائمہ مساجد نے سینیٹائزیشن اور نمازیوں کی تھرمل جانچ کی ذمہ داری خود لے رکھی ہے۔ الہ آباد کے قاضی شہر مفتی شریف احمد شریفی نے مساجد میں الکحل کی آمیزش والا سرکاری سینیٹائرز مساجد میں استعمال کرنے سے انکار کر دیا تھا۔ اس اعلان کے بعد مقامی انتظامیہ نے بھی مساجد کو ان کے حال پر چھوڑ دیا ہے، لیکن مساجد انتظامیہ کمیٹی نے مسجدوں کے سینی ٹائزیشن کا کام اپنے ہاتھ میں لے لیا ہے۔


بندمساجد کو سینیٹائزڈ کرنے اور اس کو کورونا وائرس سے پاک رکھنےکےلئے علمائے دین نے خود مورچہ سنبھال لیا ہے۔
بندمساجد کو سینیٹائزڈ کرنے اور اس کو کورونا وائرس سے پاک رکھنےکےلئے علمائے دین نے خود مورچہ سنبھال لیا ہے۔


شہر کی بیشتر مساجد میں آنے والے نمازیوں کو تھرمل جانچ کے بعد ہی مسجد میں داخل ہونے کی اجازت دی جا رہی ہے۔اسی طرح نمازیوں کو سینیٹائزڈ کرنے کے لئے دروازے پر ہی کارکنان تعینات کئے گئے ہیں۔ مقامی انتظامیہ نے پنچگانہ نماز کے لئے فی الحال پانچ نمازیوں کو ہی مسجد میں داخل ہونےکی  اجازت دی ہے، لیکن شہر کی مرکزی مساجد میں نمازیوں کی تعداد بڑھ جانے کے بعد مسجد انتظامیہ نے تعداد کو محددو رکھنے کے لئے سخت اقدامات بھی کئے ہیں، جو شخص فجر کی نماز میں شامل ہو رہا ہے، اس کو باقی نمازیوں میں شامل ہونے کو ترجیح دی جا رہی ہے۔

شہر کی بیشتر مساجد میں آنے والے نمازیوں کو تھرمل جانچ کے بعد ہی مسجد میں داخل ہونے کی اجازت دی جا رہی ہے۔
شہر کی بیشتر مساجد میں آنے والے نمازیوں کو تھرمل جانچ کے بعد ہی مسجد میں داخل ہونے کی اجازت دی جا رہی ہے۔


وصی آباد جامع مسجد کے خطیب اور امام مفتی سیف الرحمان کا کہنا ہےکہ حکومت کی گائڈ لائن کے مطابق تمام مسجدوں میں پنچگانہ نماز شروع ہونی چاہئے۔ ان کا کہنا ہے کہ یہ کام متولی اور علاقے کے لوگوں کا ہے کہ وہ مسجد میں جراثیم کش دواؤں کا چھڑکاؤ کریں اور نماز کے لئے آنے والے افراد کی تھرمل جانچ  کو یقینی بنائیں۔ مفتی سیف الرحمان کا کہنا ہے کہ مساجد اور نمازیوں کو کورونا وائرس سے محفوظ رکھنے کے لئے صرف حکومت کی امداد پر انحصار نہیں کرنا چاہئے بلکہ سماجی سطح پر اس وباء کا مقابلہ کرنے کے لئے سب کو آگے آنے کی ضرورت ہے۔
First published: Jun 15, 2020 01:55 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading