உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    تحقیق:تحقیق: ڈلیوری میں بچہ صحت یاب چاہتے ہیں تو پاؤں کے نیچے تکیہ لگاکر سوئیں

    علامتی تصویر

    علامتی تصویر

    اگرحاملہ خواتین عمل اپناتی ہیں تو بچی صحت یاب اور نارمل پیدا ہوتا ہے ،تفصیل یہاں سنیں۔۔۔

    • Share this:
      ماں بننا دنیا کا سب سے خوبصورت احساس ہوتا ہے۔ کہتے  ہیں کہ ایک خاتون کو زمانے بھر کی خوشیاں مل جاتی ہیں لیکن خوشی کے ساتھ۔ساتھ اس پڑاؤ میں کئی احتیاط بھی رکھنے کو ہوتی ہیں۔ کچھ باتوں پر دھیان دینا ہوتا ہے۔ جس سے حمل میں پل رہے بچے پر کوئی اثر نہ پڑے۔ اس لئے ہم آپ کو بتانے جارہے ہیں ایک ایسی بات جس کا دھیان میں رکھ کر آپ  اس دوران کئی فائدے اٹھا سکتی ہیں۔ جی ہاں اگر آپ بائیں جانب کروٹ لیکر سوتی ہیں تو آپ کو بہت فائدہ ہوں گے۔

      دراصل امریکن پریگنینسی ایسوسی ایشن کے مطابق حاملہ خواتین کو بائیں طرف کروٹ لیکر سونا چاہئے۔ ریسرچ کے مطابق اس طرح لیٹنے سے لیور ایب ڈامن کی دائیں جانب واقع ہوتا ہے۔ جب آپ دائیں طرف کروٹ لیکر سوتی ہیں تو اس سے لیور پر زیادہ پریشر پڑتا ہے۔

      بائیں جانب کروٹ لیکر سونے سے اس پریشر سے لیور کو بچایا جاسکتا ہے۔ بیبی کی صحت اور نارمل گروتھ کیلئے ضروری ہے کہ آپ کا لیور صحیح اور نارمل طریقے سے فنکشن کرے اور اسے اسپیس ملے۔ اس کے علاوہ ،انفریئر وینا کیوا یعنی آئی وی سی جوکہ جسم کی سب سے بڑی نس ہوتی ہے۔ اس پر بھی پریشر کی وجہ سے ماں اور بچے دونوں کو ہی نقصان پہنچ سکتا ہے۔ اس کے ساتھ۔ساتھ۔ بائیں طرف کروٹ لیکر سونے سے ایک فائدہ یہ بھی ہوگا کہ اسے بچے اور آپ کے پلیسینٹا کو زیادہ فائدہ اور ممکنہ حد تک غذا اور خون فراہم ہوگا۔
      اس کے علاوہ دھیان رکھیں اور اچھی غذا اور آرا م لیں۔ اس کیلئے ٹانگوں کے درمیان تکیہ لگاکر رکھیں۔رات میں سوتے وقت کروٹ بدلنا بھی ضروری ہے لیکن اگر آپ دائیں طرف کروٹ لیکر بھی اٹھتی ہیں تو اس میں کوئی پریشانی نہیں ہے۔ ڈاکٹر سے صلاح ۔ مشورہ کر سکتی ہیں۔

      First published: