ہوم » نیوز » No Category

ڈیژل کی بڑھتی قیمتوں نے برباد کیا ٹرانسپورٹ کا کاروبار، گاڑیاں کھڑی کرنے کے لئے مجبور ہوئے کاروباری

تیل کی قیمتوں میں غیر معمولی اضافے سے پریشان ٹرانسپورٹ کاروباری اب اپنے مطالبات کو لےکر آر پار کی لڑائی کے لئے تیار ہیں۔ تیل اور گیس کی قیمتوں میں اضافے کا اثر، جہاں عام لوگوں پر پڑتا ہے۔

  • Share this:
ڈیژل کی بڑھتی قیمتوں نے برباد کیا ٹرانسپورٹ کا کاروبار، گاڑیاں کھڑی کرنے کے لئے مجبور ہوئے کاروباری
ڈیژل کی بڑھتی قیمتوں نے برباد کیا ٹرانسپورٹ کا کاروبار، گاڑیاں کھڑی کرنے کے لئے مجبور ہوئے کاروباری

میرٹھ: پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں مسلسل تیزی سے ہو رہے اضافے سے جہاں عام لوگ پریشان ہیں وہیں ڈیژل کی قیمتوں میں ہو رہے بے تحاشہ اضافے کا سب سے زیادہ اثر ٹرانسپورٹروں پرپڑ رہا ہے۔ تیل کی قیمتوں میں غیر معمولی اضافے سے پریشان ٹرانسپورٹ کاروباری اب اپنے مطالبات کو لےکر آر پار کی لڑائی کے لئے تیار ہیں۔ تیل اور گیس کی قیمتوں میں اضافے کا اثر، جہاں عام لوگوں پر پڑتا ہے۔


وہیں ڈیژل کی بڑھتی قیمتوں کا سیدھا اثر ٹرانسپورٹ کاروبار پر پڑتا ہے اور اس کی وجہ سے مہنگائی میں بھی اضافہ ہوتا ہے۔ گزشتہ بیس دِنوں میں ڈیژل کی قیمتوں میں ہوئے غیر معمولی اضافے اور الگ الگ ٹیکس اور قیمتیں ہونے سے اب ٹرانسپورٹ کاروباری پریشان ہیں اور ان حالات میں کاروبار نہ کر پانے کی مجبوری اور ناراضگی ظاہر کر رہے ہیں۔

ڈیژل کی قیمتوں میں مسلسل اضافے سے پریشان ٹرانسپورٹ کاروباری اب تیل پر ٹیکس کم کرنے اور جی ایس ٹی کے دائرے میں لانے کے مطالبے کو لے کر آواز اٹھا رہے ہیں اور جلد ہی اس پریشانی کا حل نہ نکلنے کے صورت میں کسانوں کے احتجاج میں شامل ہوکر چکا جام کا اعلان کر رہے ہیں۔ لاک ڈاؤن کے بعد سے ہی خراب حالات سے گزر رہے ٹرانسپورٹ کاروباری لاک ڈاؤن کھلنے کے بعد کاروبار کے پٹری پر لوٹنے کا انتظار کر رہے تھے، لیکن ڈیژل کی بڑھتی قیمتوں نے ٹرانسپورٹ کاروباریوں کو اب حکومت کے خلاف احتجاج پر مجبور کر دیا ہے۔ ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن کے ذمہ داران کا کہنا ہے کہ ان کا احتجاج بھی کسانوں کی طرح پُرامن ہوگا۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Feb 28, 2021 11:22 PM IST