ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر میں غیر قانونی طریقے سے رہ رہے 168 روہنگیا ہولڈنگ سینٹر بھیجے گئے

Rohingya Muslims: رپورٹ کے مطابق، روہنگیا مسلمانوں اور بنگلہ دیشی شہریوں سمیت 13,700 سے زیادہ بیرونی شہری جموں اور سانبا اضلاع میں مقیم ہیں۔

  • Share this:
جموں وکشمیر میں غیر قانونی طریقے سے رہ رہے 168 روہنگیا ہولڈنگ سینٹر بھیجے گئے
جموں وکشمیر میں غیر قانونی طریقے سے رہ رہے 168 روہنگیا ہولڈنگ سینٹر بھیجے گئے

سری نگر: جموں وکشمیر میں 168 روہنگیا کے مہاجر مسلمانوں (Rohingya Refugees) کو ہولڈنگ سینٹر میں بھیج دیا گیا ہے۔ اس میں بچے اور خواتین بھی شامل ہیں۔ یہ سینٹرکٹھوعہ کے ہیرا نگر جیل میں بنایا گیا ہے۔ ہفتہ کے روز سے ہی جموں وکشمیر انتظامیہ نے جموں میں رہ رہے روہنگیا مسلمانوں کی بایومیٹرک اطلاعات سمیت دیگر تفصیلات جمع کرنے کا کام شروع کردیا ہے۔ واضح رہے کہ روہنگیا میانمار کے بنگلہ زبان والے اقلیتی مسلمان ہیں۔ اپنے ملک میں ظلم واستحصال سے پریشان ہوکر کافی تعداد میں روہنگیا بنگلہ دیش کے راستے ہندوستان میں داخل ہوکر جموں سمیت ملک کے الگ الگ حصوں میں مقیم ہوگئے ہیں۔


بیرون ممالک ایکٹ کی دفعہ 3 (2) ای کے تحت یہ ’ہولڈنگ سینٹر‘ بنایا گیا ہے۔ ایک ہولڈنگ سینٹر میں کم از کم 250 لوگ رہ سکتے ہیں۔ ایک سینئر افسر کے مطابق، ان سب کے پاس امیگرینٹ پاسپورٹ ایکٹ کے سیکشن (3) کے مطابق ضروری پاسپورٹ نہیں تھے۔ لہٰذا ایسے مہاجرین کی شناخت کرنے کا عمل جاری ہے۔


ویریفکیشن کا کام جاری


افسران نے کہا کہ انہیں ہولڈنگ سینٹر بھیجنے کے بعد ان سب کی قومیت کو لے کر ویریفکیشن کیا جائے گا، جس کے بعد غیر قانونی طریقے سے رہ رہے لوگوں کو ہٹایا جائے گا۔ افسران نے بتایا کہ سخت سیکورٹی انتظامات کے درمیان ایم اے ایم اسٹیڈیم میں میانمار سے آئے روہنگیا مسلمانوں کا ویریفکیشن کیا گیا۔ انہوں نے بتایا کہ عمل کے تحت ان کی بایومیٹرک اطلاعات، رہنے کا مقام وغیرہ سمیت دیگر اطلاعات جمع کی گئیں۔ میانمار کے شہری عبدالحنان نے بتایا، ’کووڈ-19 کی جانچ کے بعد ہم نے ایک فارم بھرا۔ ہمارے فنگر پرنٹ لئے گئے‘۔

6 ہزار سے زیادہ روہنگیا

کچھ سیاسی جماعتوں اور سماجی تنظیموں نے مرکزی حکومت سے گزارش کی ہے کہ وہ روہنگیا اور بنگلہ دیشیوں کو فوراً ان کے ملک واپس بھیجنے کی سمت میں قدم اٹھائیں۔ ان کا الزام ہے کہ ان دونوں سے ملک کو خطرہ ہے۔ روہنگیا مسلمانوں اور بنگلہ دیشی شہریوں سمیت 13,700 سے زیادہ غیر ملکی شہری جموں اور سانبا اضلاع میں بسے ہوئے ہیں۔ حکومت کے اعدادوشمار کے مطابق، 2008 سے 2016 کے درمیان ان کی آبادی میں 6,000 سے زیادہ کا اضافہ ہوا ہے۔

 

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Mar 07, 2021 07:43 AM IST