உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اے بھائی ذرا دیکھ کے چلو:موٹر وہیکل ایکٹ کے تحت ٹریفک قوانین کی خلاف وزری پڑے گی مہنگی

    علامتی تصویر:۔ٖ(نیوز18ڈاٹ کام)۔

    علامتی تصویر:۔ٖ(نیوز18ڈاٹ کام)۔

    • Share this:

      موٹر وہیکل ترمیمی بل لوک سبھا کے بعد راجیہ سبھا میں بھی منظور ہوگیا ہے۔ نئے بل میں ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کاروائی کی تجویز ہے۔جس میں جرمانے کی رقم میں کئی گنا اضافہ کیا گیا ہے ۔یعنی اگر ڈرائیونگ کرنے میں لاپرواہی برتی گئی تو اس کی بھاری قیمت چکانی پڑے گی۔

      سڑک حادثات پر قابو پانے کے لئے سخت قانون، ٹرانسپورٹ سیکٹر میں نئی ​​ٹکنالوجیوں کو اپنانے اور حالات کے مطابق قومی ٹرانسپورٹ پالیسی کے نفاذ کے لئے التزام والے موٹر وہیکل ترمیمی بل 2019 کو آج راجیہ سبھا میں 13 کے مقابلے 108 ووٹوں سے پاس کردیا گیا۔ سڑک ٹرانسپورٹ اور قومی شاہراہوں کے وزیر نتن گڈکری نے موٹر وہیکل ترمیمی بل 2019 پر تقریبا تین گھنٹے تک جاری رہنے والی بحث کے جواب میں ، ایوان کو یہ یقین دہانی کرائی کہ اس قانون سے ریاستی حکومتوں کے اختیار میں کوئی کمی واقع نہیں ہوگی اور تمام ریاستی حکومت اپنی سہولت کے مطابق قومی ٹرانسپورٹ پالیسی کے مطابق پر عمل درآمد کرسکے گی ۔

      ذرا سنبھل کے :ڈرائیونگ کرنے میں لاپرواہی کی چکانی پڑے گ بھاری قیمت

      اس نئے قانون کے تحت ریسنگ کرنے پر5 ہزار روپئے،اوور اسپیڈپر2 سے 4ہزار روپئے کا جرمانہ ہوگا۔ جبکہ ہیلمٹ نہ پہننے پر1000 روپئے کا جرمانہ ہوگا اورریڈ لائٹ جمپ کرنے پر500کا جرمانہ عائد کیاجائیگا۔اسی طرح شراب پی کر گاڑی چلانے پر2ہزار کا جرمانہ اور جیل بھی ہوسکتی ہے۔ جبکہ نابالغ کے گاڑی چلانے پر25ہزار روپئے کا جرمانہ اور3سال کی سزا ہوگی۔ بغیرانشورنس کی گاڑی چلانے پر2ہزار کا جرمانہ عائدکیاجائیگا۔

      ذرا سنبھل کے :ڈرائیونگ کرنے میں لاپرواہی کی چکانی پڑے گ بھاری قیمت-(تصویر:پی آئی بی)۔
      ذرا سنبھل کے :ڈرائیونگ کرنے میں لاپرواہی کی چکانی پڑے گ بھاری قیمت-(تصویر:پی آئی بی)۔
      First published: