پنچاب میں تہوار کےدوران جھگڑا،کینیڈاسے تعلق رکھنےوالےاین آر آئی کی موت،مقدمہ درج

علامتی تصویر

علامتی تصویر

پولیس نے بتایا کہ گورداسپور ضلع کے غازی کوٹ گاؤں کا رہنے والا پردیپ سنگھ آنند پور صاحب جا رہا تھا۔ عہدیداروں نے بتایا کہ پیر کے روز پردیپ سنگھ کا روپ نگر کے نور پوربیڈی کے رہنے والے نرنجن سنگھ سے کسی بات پر جھگڑا ہوا۔ تصادم میں اسے شدید چوٹیں آئیں اور بعد میں اس کی موت ہو گئی۔

  • News18 Urdu
  • Last Updated :
  • Anandpur Sahib, India
  • Share this:
    روپ نگر: پنجاب کے آنند پور صاحب میں ہولا محلہ تہوار کے دوران جھگڑے میں کینیڈا سے تعلق رکھنے والے ایک 24 سالہ غیر مقیم ہندوستانی (این آر آئی) کی موت ہوگئی۔ پولیس نے بتایا کہ گورداسپور ضلع کے غازی کوٹ گاؤں کا رہنے والا پردیپ سنگھ آنند پور صاحب جا رہا تھا۔ عہدیداروں نے بتایا کہ پیر کے روز پردیپ سنگھ کا روپ نگر کے نور پوربیڈی کے رہنے والے نرنجن سنگھ سے کسی بات پر جھگڑا ہوا۔ تصادم میں اسے شدید چوٹیں آئیں اور بعد میں اس کی موت ہو گئی۔پولیس نے بتایا کہ ملزم نرنجن کو بھی چوٹیں آئی ہیں اور وہ چنڈی گڑھ کے پوسٹ گریجویٹ انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل ایجوکیشن اینڈ ریسرچ (PGIMER) میں زیر علاج ہے۔

    پردیپ سنگھ حال ہی میں کینیڈا سے ہندوستان آیا تھا۔سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس وویک شیل سونی نے بتایا کہ پردیپ سنگھ فروری میں کینیڈا سے ہندوستان آیا تھا ۔ وہ کینیڈا کا مستقل شہری ہے۔ اہلکار نے کہا کہ اس معاملے میں مزید تفتیش جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملزم کے خلاف تعزیرات ہند کی متعلقہ دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

    پیر کے روز پردیپ سنگھ کی کسی بات پر روپ نگر کے نور پوربیڈی کے رہنے والے نرنجن سنگھ سے جھگڑا ہوا۔ تاہم، اے این آئی نے متاثرہ کے اہل خانہ کے حوالے سے کہا کہ پردیپ سنگھ نے کچھ غنڈوں کو ایک کار میں عوامی طور پر 'نامناسب گانے' بجاتے ہوئے دیکھا۔ اس نے شرپسندوں کو روکنے کی کوشش کی لیکن انہوں نے اس پر حملہ کر دیا اور وہ موقع پر ہی ہلاک ہوگیا۔

    وہیں میڈیا سے بات کرتے ہوئے پردیپ کے چچا گوردیال سنگھ نے بتایا کہ وہ 12ویں جماعت کی تعلیم مکمل کرنے کےبعد 2016 میں کینیڈا گیا تھا۔ اب وہ وہاں کا مستقل رہائشی تھا۔ اس کی چھوٹی بہن بھی کینیڈا میں ہے۔ گزشتہ سال ستمبر میں وہ ایک خاندانی شادی میں شرکت کے لیےہندوستان آئے تھے۔ شادی کے بعد اس نے ٹیٹو بنانا سیکھناچھوڑ دیا۔ انہیں جنوری میں کینیڈا واپس جاناتھا، لیکن وہ خاندان کو پٹنہ صاحب کی زیارت پرلے جانے کے  مقصد سے  کینیڈا نہیں  گئے تھے۔تاہم پولیس نے اپنے بیان میں کہا کہ پردیپ فروری میں ہندوستان آئے تھے۔ پردیپ کے چچا اور ہولیس کے بیان مختلف ہے۔ پولیس اہلکاروں نے بتایا کہ پولیس تمام زاوایوں سے اس معاملے کی جانچ کررہی ہے۔
    Published by:Mirzaghani Baig
    First published: