உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Russia-Ukraine Conflict: یوکرین سے 242 ہندوستانی طلبہ کو لے کر واپس لوٹا Air India کا جہاز

    یوکرین سے 242 ہندوستانی طلبہ کو لے کر واپس لوٹا Air India کا جہاز۔

    یوکرین سے 242 ہندوستانی طلبہ کو لے کر واپس لوٹا Air India کا جہاز۔

    وزارت خارجہ نے یوکرین میں پھنسے ہوئے ہندوستانیوں کو ضروری معلومات اور مدد فراہم کرنے کے لیے بدھ کو ایک کنٹرول روم قائم کیا تھا۔ اس کے علاوہ یوکرین میں ہندوستانی سفارت خانے نے مشرقی یورپی ملک میں ہندوستانیوں کی مدد کے لیے 24 گھنٹے کی ہیلپ لائن بھی قائم کی تھی۔

    • Share this:
      نئی دہلی:روس اور یوکرین (Russia-Ukraine)کے درمیان گہرے تنازعہ کے درمیان ایئر انڈیا(Air India) کا طیارہ یوکرین سے ہندوستانیوں کو لے کر وطن واپس پہنچ گیا ہے۔ طیارے میں 242 طلباء سوار تھے۔ دراصل، یوکرین(Ukraine)کی سرحد پر بڑھتی ہوئی کشیدگی کے درمیان، ایئر انڈیا نے منگل کو وہاں سے ہندوستانیوں کو واپس لانے کے لیے بوئنگ-787 طیارے کی پرواز چلائی تھی۔


      فلائٹ ٹریکنگ ویب سائٹ کے مطابق، AI-1947 نے نئی دہلی سے صبح 7:30 بجے IST کے قریب اڑان بھری اور تقریباً 3 بجے یوکرین میں کیف کے ہوائی اڈے پر پہنچا۔ روس اور یوکرین کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی کے باعث ہندوستان نے اپنے شہریوں کو واپس لوٹنے کا مشورہ دیا ہے۔


      وطن واپس پہنچنے کے بعد طلبہ نے بتایا کہ یوکرین میں حالات اب بھی کشیدہ بنے ہوئے ہیں۔ اس سے پہلے کیف میں واقع ہندوستانی سفارتخانے نے منگل کو ایک بار پھر ہندوستانی طبہ سے عبوری طور پر ہندوستان لوٹ جانے کی صلاح دی تھی۔ ایئر انڈیا نے 19 فروری کو اعلان کیا تھا کہ وہ ہندوستان اور یوکرین کے درمیان 22,24 اور26 فروری کو فلائٹس چلائے گی۔


      فارین منسٹری نے قائم کیا تھا کنٹرول روم
      وزارت خارجہ نے یوکرین میں پھنسے ہوئے ہندوستانیوں کو ضروری معلومات اور مدد فراہم کرنے کے لیے بدھ کو ایک کنٹرول روم قائم کیا تھا۔ اس کے علاوہ یوکرین میں ہندوستانی سفارت خانے نے مشرقی یورپی ملک میں ہندوستانیوں کی مدد کے لیے 24 گھنٹے کی ہیلپ لائن بھی قائم کی تھی۔

      ٹاٹا گروپ کی ملکیت والی ایئر انڈیا نے ٹویٹر پر کہا کہ وہ 22، 24 اور 26 فروری کو ہندوستان اور یوکرین کے بوریسپل بین الاقوامی ہوائی اڈے کے درمیان تین پروازیں چلائے گی۔ کمپنی نے مزید لکھا، ’ایئر انڈیا کے بکنگ آفس، ویب سائٹ، کال سینٹرز اور مجاز ٹریول ایجنٹس کے ذریعے بکنگ شروع کر دی گئی ہے۔‘

       
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: