உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Russia-Ukraine War: وزیرا عظم مودی نے کی روسی صدر پوتن سے بات، ان معاملات پر ہوئی گفتگو

    Russia-Ukraine War: وزیرا عظم مودی نے کی روسی صدر پوتن سے بات، ان معاملات پر ہوئی گفتگو (Image: REUTERS/Adnan Abidi/File)

    Russia-Ukraine War: وزیرا عظم مودی نے کی روسی صدر پوتن سے بات، ان معاملات پر ہوئی گفتگو (Image: REUTERS/Adnan Abidi/File)

    Russia-Ukraine War: وزیر اعظم مودی نے اپنے دیرینہ یقین کا اعادہ کیا کہ روس اور ناٹو گروپ کے درمیان اختلافات کو صرف بات چیت کے ذریعہ سے ہی حل کیا جاسکتا ہے ۔ وزیر اعظم مودی نے تشدد کو فورا ختم کرنے کی اپیل کی اور سفارتی بات چیت کے راستے پر لوٹنے کیلئے سبھی فریقوں سے ٹھوس کوشش کرنے کی اپیل کی ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : وزیر اعظم نریندر مودی  (Prime Minister Narendra Modi)  نے جمعرات کو روس کے صدر ولادیمیر پوتن (Vladimir Putin) سے بات کی ۔ پی ایم او نے بتایا کہ صدر پوتن نے یوکرین کے تعلق سے حالیہ واقعات کے بارے میں وزیر اعظم مودی کو جانکاری دی ۔ ساتھ ہی پی ایم او نے بتایا کہ وزیر اعظم مودی نے اپنے دیرینہ یقین کا اعادہ کیا کہ روس اور ناٹو گروپ کے درمیان اختلافات کو صرف بات چیت کے ذریعہ سے ہی حل کیا جاسکتا ہے ۔ وزیر اعظم مودی نے تشدد کو فورا ختم کرنے کی اپیل کی اور سفارتی بات چیت کے راستے پر لوٹنے کیلئے سبھی فریقوں سے ٹھوس کوشش کرنے کی اپیل کی ۔

      اس کے علاوہ وزیر اعظم مودی نے یوکرین میں ہندوستانی شہریوں ، خاص طور پر طلبہ کے تحفظ کے سلسلہ میں ہندوستان کی تشویشات کے بارے میں روسی صدر کو واقف کرایا اور بتایا کہ ہندوستان ان کے بحفاظت نکلنے اور ہندوستان لوٹنے کو اولین ترجیح دیتا ہے ۔ دونوں لیڈروں نے اتفاق کیا کہ ان کے افسران اور سفارتی ٹیم دلچسپی کے امور پر باقاعدہ رابطہ بنائے رکھیں گے۔


      یوکرین کی صورتحال پر ہندوستان کی نظر

      وہیں دوسری طرف ہندوستان یوکرین میں تیزی سے بدلتے ہوئے حالات پر گہری نظر رکھے ہوا ہے اور وہاں موجود ہندوستانیوں خاص طر طلبہ کی حفاظت پر توجہ مرکوز کر رہا ہے ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزارت خارجہ کے کنٹرول روم کو وسعت دی گئی ہے اور خدمات چوبیس گھنٹے فعال ہیں۔

      روس کے صدر پوتن کی طرف سے روس کے ڈونباس علاقے میں خصوصی فوجی آپریشن کی منظوری کے بعد ہندوستان نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں کشیدگی کو کم کرنے اور صورتحال سے متعلق تمام مسائل کو حل کرنے کے لئے فوری سفارت کاری کا مطالبہ کیا ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: