உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Russian Ukraine War: سومی میں پھنسے سبھی 694 ہندوستانیوں کا ریسکیو آپریشن مکمل، ہندوستانی سفارت خانہ کی بسوں سے پولٹاوا لایا گیا

    Russian Ukraine War: یوکرین کے سومی شہر میں پھنسے 694 ہندوستانی طلبہ کا ریسکیو کرلیا گیا ہے ۔ یہ سبھی طلبہ ہندوستانی سفارت خانہ کی بسوں سے پولٹاوا پہنچ گئے ہیں ۔ مرکزی وزیر ہردیپ پوری نے اس بارے میں جانکاری دی ۔

    Russian Ukraine War: یوکرین کے سومی شہر میں پھنسے 694 ہندوستانی طلبہ کا ریسکیو کرلیا گیا ہے ۔ یہ سبھی طلبہ ہندوستانی سفارت خانہ کی بسوں سے پولٹاوا پہنچ گئے ہیں ۔ مرکزی وزیر ہردیپ پوری نے اس بارے میں جانکاری دی ۔

    Russian Ukraine War: یوکرین کے سومی شہر میں پھنسے 694 ہندوستانی طلبہ کا ریسکیو کرلیا گیا ہے ۔ یہ سبھی طلبہ ہندوستانی سفارت خانہ کی بسوں سے پولٹاوا پہنچ گئے ہیں ۔ مرکزی وزیر ہردیپ پوری نے اس بارے میں جانکاری دی ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : یوکرین کے سومی شہر میں پھنسے 694 ہندوستانی طلبہ کا ریسکیو کرلیا گیا ہے ۔ یہ سبھی طلبہ ہندوستانی سفارت خانہ کی بسوں سے پولٹاوا پہنچ گئے ہیں ۔ مرکزی وزیر ہردیپ پوری نے اس بارے میں جانکاری دی ۔ خاص بات یہ رہی کہ ہندوستانی مشن نے سومی میں غیر ملکی طلبہ کا بھی ریسکیو کیا ۔ اس کے ساتھ ہی یوکرین میں ہندوستانی طلبہ کا ریسکیو آپریشن تقریبا پورا ہوگیا ہے ۔

      اس سے پہلے ایک اسپیشل فلائٹ یوکرین سے 200 ہندوستانی طلبہ کو رومانیہ کے سوسیوا سے لے کر دہلی پہنچی ۔ آج سوسیوا سے ایک فلائٹ اور آئے گی ۔ یوکرین سے لوٹے ایک طالب علم نے کہا کہ جب ہم بس میں سفر کررہے تھے ، تو وہاں کوئی بم دھماکہ نہیں ہوا ۔ سرکار اور سفارت خانہ نے ہماری کافی مدد کی ، ہم واپس آکر کافی خوش ہیں ۔

      یہ بھی پڑھئے : یوکرین سے جان بچاکر 1100 کلومیٹر دور سلوواکیہ بارڈر تنہا پہنچا 11 سال کا بچہ، ہاتھ پر لکھے نمبر نے رشتہ داروں سے ملوایا


      یوکرین میں پھنسے تقریبا 20 ہزار ہندوستانیوں میں سے تقریبا 17400 لوگوں کو ایئرلفٹ کرکے ہندوستان لایا جاچکا ہے ۔ یوکرین کے پڑوسی ممالک سے ہندوستانیوں کو لانے کے مشن کو آپریشن گنگا کا نام دیا گیا ہے ۔ اس میں ہنگری اور پولینڈ سے ایئرلفٹ کا کام پورا ہوگیا ہے ۔ انڈین ایئرفورس نے بھی آپریشن گنگا میں حصہ لیا ۔ ایئرفورس کے سی 17 گلوب ماسٹر کی 10 اڑانوں سے 2056 مسافروں کو واپس لایا گیا تھا ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : چین کی میڈیا کا دعوی، روس نے بنائی اپنے 31 دشمن ممالک کی فہرست، جانئے کون کون ہے شامل


      ادھر یوکرین سے تعلیم ادھوری چھوڑ کر جانے والے طلبہ کو ہنگری کی یونیورسٹی نے راحت کی پیش کش کی ہے ۔ ہنگری نے ہندوستان ، نائیجیریا اور دیگر افریقی ممالک کے طلبہ کو ہنگری کی یونیورسٹیوں میں اپنی تعلیم جاری رکھنے کیلئے کہا ہے ۔

      خیال رہے کہ یوکرین کی راجدھانی کیف میں گولی لگنے سے زخمی ہوئے ہندوستانی طالب علم ہرجوت سنگھ بھی منگل کو دہلی پہنچے ۔ انہیں سڑک راستے سے 700 کلو میٹر کا سفر طے کراکر یوکرین کی سرحد کو پار کرایا گیا تھا ۔ بھگدڑ کے درمیان ان کا پاسپورٹ بھی کھو گیا تھا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: