உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    SP MP شفیق الرحمن برق کا بڑا بیان، کہا- مسلمانوں کا کوکئی کام نہیں کر رہی ہے سماجوادی پارٹی

    شفیق الرحمن برق نے کہا- مسلمانوں کا کوکئی کام نہیں کر رہی ہے سماجوادی پارٹی

    شفیق الرحمن برق نے کہا- مسلمانوں کا کوکئی کام نہیں کر رہی ہے سماجوادی پارٹی

    Shafiqur Rahman Burke: سنبھل کے سماجوادی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ شفیق الرحمن برق اکثر اپنے متنازعہ بیانات کی وجہ سے سرخیوں میں رہتے ہیں۔ اس بار انہوں نے اپنی ہی پارٹی پر تنقید کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سماجوادی پارٹی مسلمانوں کا کوئی کام نہیں کر رہی ہے۔

    • Share this:
      سنبھل: یوپی کے سنبھل کے سماجوادی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ شفیق الرحمن برق (Shafiqur Rahman Burke) نے اپنی ہی پارٹی پر بڑا حملہ بولا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ سماجوادی پارٹی کے کام سے قطعی مطمئن نہیں ہیں۔ اس کے ساتھ رکن پارلیمنٹ نے کہا کہ سماجوادی پارٹی مسلمانوں کا کوئی کام نہیں کر رہی ہے۔ واضح رہے کہ رکن پارلیمنٹ شفیق الرحمن برق اپنے بیانات کی وجہ سے سرخیوں میں رہتے ہیں۔ اس کے ساتھ انہوں نے کہا کہ یوپی میں وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ کام تو کر رہے ہیں، لیکن اپنے حساب سے۔ اس وجہ سے یوپی میں مسلمانوں کے ساتھ انصاف نہیں ہو رہا ہے۔

      وہیں سماجوادی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ شفیق الرحمن برق کا پارٹی کو لے کر دیا گیا بیان سوشل میڈیا پر جم کر وائرل ہو رہا ہے۔ یہی نہیں، ان کا بیان پارٹی کے لئے مصیبت بھی بن سکتا ہے۔ کیونکہ شفیق الرحمن برق کی مسلمانوں میں کافی اچھی پکڑ ہے اور یہی وجہ ہے کہ وہ سنبھل سے کئی بار رکن پارلیمنٹ رہ چکے ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      سیتا پور میں نفرت آمیز اسپیچ دیتے ہوئے مہنت کا ویڈیو وائرل، مسلم خواتین-بیٹیوں کو دے رہا ہے آبروریزی کی دھمکی

      اذان اور رامائن سے متعلق کہی تھی یہ بات

      اس سے قبل سماجوادی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ شفیق الرحمن برق نے اذان سے متعلق ہو رہی ہنگامہ آرائی پر کہا تھا کہ اذان 3-4 منٹ میں ختم ہوجاتا ہے، اس سے کسی کا کیا بگڑ رہا ہے۔ ساتھ ہی کہا کہ اکھنڈ رامائن کا درس 24 گھنٹے چلتا ہے، لیکن اس سے کسی کو کوئی پریشانی نہیں ہے۔ پورے ملک میں اذان کو لے کر تازعہ کھڑا کرنا نفرت پھیلانے کی سازش ہے۔ سماجوادی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ نے کہا کہ اگر اذان سے آلودگی پھیل رہی ہے تو اکھنڈ رامائن پاٹھ پر کوئی کچھ نہیں بولتا ہے۔

      حجاب تنازعہ سے متعلق کہی تھی یہ بات

      اس سے قبل سماجوادی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ نے لڑکیوں کے لئے حجاب کو واجب ٹھہرایا تھا۔ انہوں نے کہا کہ جب بچیاں بڑی ہونے لگتی ہیں تو انہیں کنٹرول میں رکھنے کے لے حجاب ضروری ہے۔ اس کے ساتھ شفیق الرحمن برق نے کہا کہ حجاب پہننے سے بچیاں قابو میں رہتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہماری تہذیب وثقافت پر یوروپین تہذیب وثقافت بھاری پڑتی جا رہی ہے، لیکن ہمارے مذہب میں اتنا کھلا پن حرام ہے۔ ویسے انہوں نے لڑکوں کو کیا پہننا چاہئے، اس پر کچھ نہیں کہا تھا۔ یہی نہیں، سماجوادی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ نے مرکزی حکومت کے ذریعہ لڑکی کی شادی کی عمر 21 سال کرنے کے فیصلے پر سوال اٹھا چکے ہیں۔ انہوں نے کہا تھا کہ اس سے لڑکیوں میں آوارگی بڑھے گی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: