ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اے ٹی ایس کے ذریعہ گرفتار کئے گئے مبینہ دہشت گردوں کی حمایت میں اترے اسدالدین اویسی، کہا- عدالت سے بری ہونے پر حکومت کیا جواب دے گی

Asaduddin Owaisi in Sambhal: اے آئی ایم آئی ایم کے قومی صدر اسدالدین اویسی نے بی جے پی حکومت پر جم کر تنقید کی۔ انہوں نے جہاں کورونا سے ہوئی اموات پر مرکزی حکومت پر سوال کھڑے کئے، تو وہیں آبادی کنٹرول قانون پر یوگی حکومت کو گھیرا۔

  • Share this:
اے ٹی ایس کے ذریعہ گرفتار کئے گئے مبینہ دہشت گردوں کی حمایت میں اترے اسدالدین اویسی، کہا- عدالت سے بری ہونے پر حکومت کیا جواب دے گی
اے ٹی ایس کے ذریعہ گرفتار کئے گئے مبینہ دہشت گردوں کی حمایت میں اترے اسدالدین اویسی، کہا- عدالت سے بری ہونے پر حکومت کیا جواب دے گی

نئی دہلی: آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے قومی صدر اسدالدین اویسی نے بی جے پی حکومت پر جم کر تنقید کی۔ انہوں نے جہاں کورونا سے ہوئی اموات پر مرکزی حکومت پر سوال کھڑے کئے، تو وہیں آبادی کنٹرول قانون پر یوگی حکومت کو گھیرا۔ اتنا ہی نہیں اے ٹی ایس کے ذریعہ گرفتار کئے گئے مبینہ دہشت گردوں کے بچاو میں حکومت پر سوال کھڑے کئے۔ انہوں نے مبینہ دہشت گردوں کا بچاو کرتے ہوئے کہا کہ اگر عدالت نے ان سبھی کو بری کردیا تو حکومت کیا جواب دے گی؟


جمعرات کو سماجوادی پارٹی کے رکن پارلیمنٹ ڈاکٹر شفیق الرحمن برق کے انتخابی حلقے میں پہنچے اسدالدین اویسی نے بی جے پی پر سخت تنقید کی۔ انہوں نے کورونا سے ہوئی اموات پر مرکزی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ کورونا کے دور میں ہزاروں لاکھوں لوگوں کی موت ہوگئی، لیکن وزیر اعظم کے منہ سے ایک لفظ تک نہیں نکلا۔ وہیں یوپی حکومت کے ذریعہ لائے گئے آبادی کنٹرول  قانون پر بھی اویسی نے سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ حکومت آبادی کنٹرول قانون لاکر لوگوں کو کمزور کر رہی ہے۔ جبکہ آبادی کنٹرول قانون نا لاکر ان کو مضبوط کرتی ہے۔


اویسی نے کیا مبینہ دہشت گردوں کا بچاو


اسدالدین اویسی نے کہا کہ حکومت کے پاس کوئی موضوع نہیں بچا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ حکومت اپنی ناکامی کو چھپانے کے لئے نئے نئے ہتھکنڈے اپنا رہی ہے۔ وہیں انہوں نے اے ٹی ایس کی دہشت گردوں کے خلاف کی گئی کارروائی کو لے کر بھی حکومت کو گھیرا۔ انہوں نے دہشت گردوں کا بچاو کرتے ہوئے کہا کہ اگر عدالت نے ان سبھی کو بری کردیا تو حکومت کیا جواب دے گی؟

آپ کو بتادیں کہ اویسی کے سنبھل پہنچے اور سنبھل کی ایک مزار پر چادر پیش کی۔ وہیں سہیل دیو سماج پارٹی کے اوم پرکاش راج بھر کے آنے کی قیاس آرائی ٹھیک نہیں نکلی اور وہ سنبھل نہیں پہنچے۔ دوسری جانب، اویسی کے پروگرام میں بھاری بد نظمی دیکھنے کو ملی، جہاں کئی مقامات پر پولیس کو لا اینڈ آرڈر بنانے کے لئے ہلکی طاقت کا استعمال بھی کرنا پڑا، تو وہیں باونسروں کی سیکورٹی کے درمیان جم کر دھکا مکی میں کئی صحافی زخمی ہوئے ہیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 15, 2021 06:57 PM IST