உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    گجرات فساد میں PM مودی کو پھنسانے کے پیچھے سونیا گاندھی تھیں ڈرائیونگ فورس-SIT رپورٹ پر بی جے پی

    بی جے پی کے قومی ترجمان سنبت پاترا نے گجرات پولیس کی ایس آئی ٹی کے ذریعہ عدالت میں دائر حلف نامہ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا، ’گجرات کی حکومت کو غیر مستحکم کرنے اور فساد کے معاملے میں نریندر مودی کے نام کو شامل کرکے بدنام کرنے کا سیاسی مقصد تھا۔ تیستا سیتلواڑ کے کام سے خوش ہوکر ان کو پدم شری دیا گیا۔ غنیمت ہے کہ ہم اقتدار میں آگئے ورنہ تیستا سیتلواڑ آج ہندوستان کی وزیر داخلہ ہوتیں‘۔

    بی جے پی کے قومی ترجمان سنبت پاترا نے گجرات پولیس کی ایس آئی ٹی کے ذریعہ عدالت میں دائر حلف نامہ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا، ’گجرات کی حکومت کو غیر مستحکم کرنے اور فساد کے معاملے میں نریندر مودی کے نام کو شامل کرکے بدنام کرنے کا سیاسی مقصد تھا۔ تیستا سیتلواڑ کے کام سے خوش ہوکر ان کو پدم شری دیا گیا۔ غنیمت ہے کہ ہم اقتدار میں آگئے ورنہ تیستا سیتلواڑ آج ہندوستان کی وزیر داخلہ ہوتیں‘۔

    بی جے پی کے قومی ترجمان سنبت پاترا نے گجرات پولیس کی ایس آئی ٹی کے ذریعہ عدالت میں دائر حلف نامہ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا، ’گجرات کی حکومت کو غیر مستحکم کرنے اور فساد کے معاملے میں نریندر مودی کے نام کو شامل کرکے بدنام کرنے کا سیاسی مقصد تھا۔ تیستا سیتلواڑ کے کام سے خوش ہوکر ان کو پدم شری دیا گیا۔ غنیمت ہے کہ ہم اقتدار میں آگئے ورنہ تیستا سیتلواڑ آج ہندوستان کی وزیر داخلہ ہوتیں‘۔

    • Share this:
      نئی دہلی: بی جے پی نے کانگریس کی صدر سونیا گاندھی پر تنقید کرتے ہوئے انہیں سماجی کارکن تیستا سیتلواڑ کے ذریعہ 2002 کے گجرات فسادات میں اس وقت کے وزیر اعلیٰ نریندر مودی کو ’پھنسانے‘ کے پیچھے ’حقیقی ڈرائیونگ فورس‘ بتایا ہے۔ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ED) کے ذریعہ نیشنل ہیرالڈ معاملے میں سونیا گاندھی سے پوچھ گچھ کرنے کے ایک ہفتے پہلے بی جے پی کا یہ بیان سامنے آیا ہے۔ ان کے بیٹے راہل گاندھی سے ای ڈی اس معاملے میں پہلے ہی پوچھ گچھ کرچکی ہے۔

      گجرات میں خصوصی تفتیشی ٹیم (ایس آئی ٹی) اور ای ڈی کی طرف سے سونیا گاندھی کو سوالوں کے گھیرے میں لانے کے ساتھ یہ معاملہ اب پیر سے شروع ہو رہے پارلیمنٹ سیشن کو ہنگامہ دار بنانے والا ہوگیا ہے۔ بی جے پی ترجمان سنبت پاترا نے ہفتہ کے روز دہلی میں ایک پریس کانفرنس میں کہا، ’سونیا گاندھی نے چیک دیا تھا، جسے مرحوم کانگریس لیڈر احمد پٹیل نے تیستا سیتلواڑ تک پہنچایا‘۔ آپ کو بتادیں کہ احمد پٹیل سونیا گاندھی کے سیاسی مشیر کے طور پر ان کے سب سے قریبی ساتھی تھے۔

      بی جے پی ترجمان سنبت پاترا نے یہ بھی کہا کہ تیستا سیتلواڑ کو قومی مشاورتی کونسل کا رکن بنایا گیا اور سونیا گاندھی کے کہنے پر انہیں پدم اعزاز سے سرفراز کیا گیا۔
      بی جے پی ترجمان سنبت پاترا نے یہ بھی کہا کہ تیستا سیتلواڑ کو قومی مشاورتی کونسل کا رکن بنایا گیا اور سونیا گاندھی کے کہنے پر انہیں پدم اعزاز سے سرفراز کیا گیا۔


      SIT کا الزام- تیستا سیتلواڑ کو احمد پٹیل کی طرف سے 30 لاکھ روپئے ملے

      ایس آئی ٹی نے الزام لگایا ہے کہ 2002 کے گجرات فسادات کے بعد اس وقت کے وزیر اعلیٰ نریندر مودی کو بدنام کرنے کے لئے تیستا سیتلواڑ کو احمد پٹیل کی طرف سے 30 لاکھ روپئے دیئے گئے۔ بی جے پی ترجمان سنبت پاترا نے یہ بھی کہا کہ تیستا سیتلواڑ کو قومی مشاورتی کونسل کا رکن بنایا گیا اور سونیا گاندھی کے کہنے پر انہیں پدم اعزاز سے سرفراز کیا گیا۔ حالانکہ، کانگریس نے ان الزامات کو خارج کیا ہے۔

      بی جے پی کے ایک سینئر لیڈر نے کہا، ’پردے کے پیچھے کی سازش سونیا گاندھی کے دروازے تک جاتی ہے اورپارٹی اس کا پردہ فاش کرے گی کہ کیسے تیستا سیتلواڑ کو کانگریس کی طرف سے مالی اور دیگر لالچ دیئے گئے‘۔ سنبت پاترا نے نے اپنی پریس کانفرنس میں کہا کہ ایس آئی ٹی جانچ میں حیران کن تفصیلات سامنے آئی ہیں۔ سازش کرنے والے اس وقت کی گجرات حکومت کو غیر مستحکم کرنے اور بے قصور لوگوں کو پھنسانے کے مقاصد کے ساتھ کام کر رہے تھے۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      صدارتی الیکشن 2022: AAP کا بڑا اعلان، اپوزیشن امیدوار یشونت سنہا کی حمایت کرے گی کیجریوال کی پارٹی

      احمد پٹیل کے پیچھے سازش کا حصہ تھیں سونیا: بی جے پی

      سنبت پاترا نے کہا، ’ایس آئی ٹی کی رپورٹ میں احمد پٹیل کا نام سامنے آیا ہے۔ وہ تو صرف نام کے ہیں، اس کے پیچھے کی ڈرائیونگ فورس تو سونیا گاندھی تھیں۔ انہوں نے احمد پٹیل کے ذریعہ یہ سب کیا۔ پورے معاملے میں سونیا گاندھی پوری سازش کی معمار سونیا گاندھی تھیں۔ یہ سب سازش کرنے والے رات کے اندھیرے میں مل کر مودی جی کے خلاف کام کر رہے تھے۔ سونیا گاندھی نے صرف پیسے ہی نہیں، بلکہ تیستا سیتلواڑ کو پدم شری بھی دیا۔ آج سچائی سامنے آگئی ہے۔ کانگریسی سازش پرت در پرت سامنے آرہی ہیں‘۔

      کانگریس نے الزامات کو بتایا بے بنیاد

      کانگریس لیڈر جے رام رمیش کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے، ’کانگریس پارٹی مرحوم لیڈر احمد پٹیل پر لگائے گئے الزامات کی واضح طور تردید کرتی ہے۔ سیاسی انتقام کی مشین ان مرحوم لوگوں کو بھی نہیں بخشتی جو ان کے سیاسی مخالف تھے۔ ایسے شخص کو بدنام کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، جو اس دنیا میں نہیں ہیں، اور خود اس جھوٹ کی تردید نہیں کرسکتے‘۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: