سارن موب لنچنگ: مرنے کے بعد بھی مبینہ چوروں کوپیٹتے رہے لوگ

بہارکے سارن ضلع کے بنیا پورمیں جمعہ کوہوئے موب لنچنگ کے معاملے میں ایک ایسا ویڈیو سامنے آیا ہے، جوانسانیت کو شرمسارکرنے والی ہے۔ اس ویڈیومیں مبینہ تین چوروں کومرنے کے بعد بھی بے رحمی سے پیٹا جارہا ہے۔

Jul 21, 2019 12:11 AM IST | Updated on: Jul 21, 2019 12:13 AM IST
سارن موب لنچنگ: مرنے کے بعد بھی مبینہ چوروں کوپیٹتے رہے لوگ

بہارکے سارن ضلع کے بنیا پور میں جمعہ کو ہوئے موب لنچنگ کے معاملے میں ایک ایسا ویڈیو سامنے آیا ہے،جو انسانیت کو شرمسارکرنے والا ہے۔ اس ویڈیو میں مبینہ تین چوروں کومرنے کے بعد بھی بے رحمی سے پیٹا جارہا ہے۔

بتایا جارہا ہے کہ حادثہ جمعرات کی شب کی ہے، لیکن دن کی روشنی تک ان مبینہ چوروں کوپٹائی کی جاتی رہی، جس کی مبینہ طورپرتینوں چوروں کی موت ہوگئی۔ اس معاملے میں پولیس نے اب تک 7 لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ پولیس ابھی بھی اس معاملے میں چھاپہ ماری کررہی ہے۔ مہلوک برابرکے گاوں پیغمبرپورکے رہنے والے تھے۔

Loading...

موقع پرپہنچی آرجے ڈی کی ٹیم

موب لنچنگ میں تین لوگوں کی موت کے معاملے میں سیاست تیزہوگئی ہے۔ اس معاملے کو لےکرآرجے ڈی کی ایک ٹیم ہفتہ کو پیغمبرپورگاوں پہنچی، جہاں ٹیم کے ارکان نے مہلوک کے اہل خانہ سے ملاقات کی۔ ٹیم کے ارکان نے حادثہ کا جائزہ لیا۔ مہلوک کے اہل خانہ نے لیڈروں سے کہا کہ تینوں لوگ نند لال ٹولا پٹھوری میں چوری کرنے نہیں بلکہ وہاں کے باشندہ موتی لال کو بلانے پرگئے تھے۔ گاوں پہنچنے کے بعد بھینس چوری کا الزام لگا کر تینوں کی پیٹ پیٹ قتل کردیا گیا۔ ٹیم میں بہارحکومت کے سابق وزیررام وچاررائے، سمستی پوررکن اسمبلی اخترالاسلام شاہین، موتیہاری کے رکن اسمبلی راجندررام موجود تھے۔

مہلوک کو قصورواربتارہے ہیں اہل خانہ

غورطلب ہے کہ جمعرات کو چھپرا کے بنیا پورمیں تین مبینہ چوروں کا پیٹ پیٹ کرقتل کے بعد سوال کھڑے ہوگئے ہیں۔ مہلوک کے اہل خانہ مہلوک کو قصورواربتا رہے ہیں۔ واضح رہے کہ بنیا پورکے نند لال ٹولہ میں گزشتہ شب مبینہ چوری کے واقعات کو انجام دینے پہنچے راجو نٹ، ودیش نٹ اورنوشاد قریشی کی گاوں والوں نے پیٹ پیٹ کرقتل کردیا تھا۔

جانچ کی بنیاد پرکی جائے گی کارروائی: ایس پی

اہل خانہ نے اسے موب لنچنگ کا معاملہ بتایا اورحکومت سے جانچ کرکے کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ سارن کے ایس پی ہرکشوررائے نے بتایا کہ معاملے کی جانچ کی جارہی ہے اورجانچ کے بعد جو بھی حقائق سامنے آئیں گے اس کی بنیاد پرپولیس کارروائی کرے گی۔ پولیس نے احتیاطاً پیغمبرپورگاوں میں سیکورٹی بڑھا دی ہے۔

سنتوش گپتا کی رپورٹ

 

Loading...