ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

چار سال کی سزا کاٹنے کے بعد سشی کلا کی چنئی آمد ، تمل ناڈو کی سیاست میں ہلچل

بنگلورو کی سینٹرل جیل سے حال ہی میں رہا ہونے والی تمل ناڈو کی لیڈر سشی کلا کی آج چنئی آمد ہوئی ہے۔ بنگلورو سے لیکر چنئی تک ہزاروں کی تعداد میں سیاسی کارکنوں نے سشی کلا کا پرتپاک طریقہ سے استقبال کیا ۔

  • Share this:
چار سال کی سزا کاٹنے کے بعد سشی کلا کی چنئی آمد ، تمل ناڈو کی سیاست میں ہلچل
چار سال کی سزا کاٹنے کے بعد سشی کلا کی چنئی آمد ، تمل ناڈو کی سیاست میں ہلچل ۔ تصویر : اے این آئی ٹویٹر ۔

آمدنی سے زیادہ اثاثہ جات رکھنے اور بدعنوانی کے معاملے میں بنگلورو کی سینٹرل جیل میں چار سال تک کی سزا کاٹنے کے بعد تمل ناڈو کی مشہور سیاست دان وی کے سشی کلا کی اب چنئی آمد ہوئی ہے۔ ان کی واپسی کے بعد تمل ناڈو کی سیاست میں زبردست ہل چل شروع ہوئی ہے۔  آج صبح 7:30 بجے کے قریب سشی کلا بنگلورو کے نندی بیٹہ میں موجود پرسٹیج گالف شیر ریسوارٹ سے تمل ناڈو کی جانب روانہ ہوئی تھیں۔ گزشتہ ماہ بنگلورو کے سینٹر جیل پرپن اگرہار سے انکی رہائی عمل میں آئی تھی۔ رہائی سے چند دن قبل کورونا مثبت پائے جانے کے وجہ سے سشی کلا کو بنگلورو کے وکٹوریہ اسپتال میں بھرتی کیا گیا تھا۔ جیل سے رہائی اور اسپتال سے ڈسچارج ہونے کے بعد سشی کلا بنگلورو کے ہی  نجی ریسوارٹ میں کچھ دنوں کیلئے آرام کررہی تھیں۔ آج صبح ریسوارٹ سے ہری ساڑی میں ملبوس سشی کلا کار کے ذریعہ چنئی کیلئے روانہ ہوئیں۔ اس موقع پر پولیس کی جانب سے سخت حفاظتی انتظامات کئے گئے تھے۔


بنگلورو سے چنئی تک ہزاروں کی تعداد میں  AIADMK کے کارکنوں  نے سشی کلا کا پرتپاک انداز میں استقبال کیا۔ کرناٹک ۔ تمل ناڈو کے سرحد ہوسور میں جشن کا ماحول دیکھنے کو ملا۔ سشی کلا کے حامیوں نے پٹاخے اڑاتے ہوئے، آرتی اتارتے ہوئے اپنے لیڈر کا استقبال کیا۔  دلچسپ بات یہ رہی کہ اس موقع پر جگہ جگہ AIADMK کے پرچم لہراتے ہوئے بڑی تعداد میں پارٹی کے کارکنان اکٹھا ہوئے۔


سشی کلا آنجہانی وزیر اعلی جئے للیتا کی انتہائی قریبی رہی ہیں۔ جئے للیتا کے اچانک انتقال کے بعد تمل ناڈو کی سیاست میں کئی طرح کی تبدیلیاں دیکھنے کو ملیں۔ خاص طور پر اے آئی اے ڈی ایم کے پارٹی میں وزیر اعلی کی کرسی کیلئے کھینچ تان شروع ہوئیں۔ اس دوران  سشی کلا کو ہی اے آئی اے ڈی ایم کے پارٹی سے برخاست کردیا گیا۔


اب چار سال کے وقفہ کے بعد سشی کلا کی ریاست میں آمد ڈراویڈی سیاست میں نئی ہلچل کا سبب بنی ہوئی ہے۔ اے آئی اے ڈی ایم کے پارٹی سے تعلق رکھنے والے تمل ناڈو کے موجودہ وزیر اعلی یڈپاڈی پڑنی سوامی کیلئے حیرانی و پریشانی لازمی ہوچکی ہے۔ بظاہر سشی کلا نے اے آئی اے ڈی ایم کے میں دوبارہ شامل ہونے کی کوششیں شروع کردی ہے۔ پارٹی کے کارکنوں کا جھکاؤ بھی سشی کلا کی طرف نظر آرہا ہے۔ وزیر اعلی پڑنی سوامی کو یہ فکر لاحق ہوگئی ہے کہ سشی کلا پارٹی میں دوبارہ داخل ہوئیں تو وہ نظرانداز کردئے جائیں گے۔ اگر سشی کلا پارٹی کے باہر رہیں تب بھی ان کے لئے کانٹا بنی رہیں گی۔

واضح رہے کہ سشی کلا کی تمل ناڈو آمد ایک ایسے وقت ہوئی ہے جب کہ اسمبلی انتخابات قریب آچکے ہیں۔ نہ صرف حکمراں سیاسی جماعت اے آئی اے ڈی ایم کیلئے بلکہ حزب اختلاف ڈی ایم کے کیلئے بھی سیاسی خطرہ پیدا ہوچکا ہے۔ اپوزیشن جماعت ڈی ایم کے میں موجود اختلافات سشی کلا کیلئے فائدہ مند ثابت ہوسکتے ہیں۔ وہیں سشی کلا کے سیاسی اثر و رسوخ کو کم کرنے کیلئے نہ صرف اپوزیشن پارٹیاں بلکہ  انہیں کی سابقہ پارٹی میں پس پردہ کوششیں ہوسکتی ہیں۔ آنے والے دنوں میں تمل ناڈو کی سیاست آخر کیا موڑ لے گی اس پر پورے ملک کی نظریں جمی رہیں گی۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Feb 08, 2021 01:21 PM IST