உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یوپی اسمبلی انتخابات 2022: ستیش چندر مشرا کا بڑا اعلان- بی ایس پی نہیں کرے گی اتحاد، اکیلے لڑے گی الیکشن

    یوپی اسمبلی انتخابات 2022: ستیش چندر مشرا کا بڑا اعلان- بی ایس پی نہیں کرے گی اتحاد، اکیلے لڑے گی الیکشن

    یوپی اسمبلی انتخابات 2022: ستیش چندر مشرا کا بڑا اعلان- بی ایس پی نہیں کرے گی اتحاد، اکیلے لڑے گی الیکشن

    یوپی میں آئندہ سال ہونے والے اسمبلی انتخابات (UP Elections 2022) میں بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) نے تیاری شروع کردی ہے۔ اسی ضمن میں پیر کو برہمن کانفرنس میں شامل ہونے امروہہ پہنچے بی ایس پی کے قومی جنرل سکریٹری ستیش چندر مشرا (Satish Chandra Mishra) نے بڑا بیان دیتے ہوئے کہا کہ آئندہ اسمبلی انتخابات میں بی ایس پی کسی بھی پارٹی سے اتحاد نہیں کرے گی۔

    • Share this:
      امروہہ: یوپی میں آئندہ سال ہونے والے اسمبلی انتخابات (UP Elections 2022) میں بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) نے تیاری شروع کردی ہے۔ اسی ضمن میں پیر کو برہمن کانفرنس میں شامل ہونے امروہہ پہنچے بی ایس پی کے قومی جنرل سکریٹری ستیش چندر مشرا (Satish Chandra Mishra) نے بڑا بیان دیتے ہوئے کہا کہ آئندہ اسمبلی انتخابات میں بی ایس پی کسی بھی پارٹی سے اتحاد نہیں کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ بی ایس پی اکیلے 2022 میں الیکشن لڑے گی۔ اس دوران بی ایس پی جنرل سکریٹری نے سماجوای پارٹی اور بی جے پی پر جم کر تنقید کی۔ ستیش چندر مشرا نے کہا کہ دونوں پارٹیوں نے برہمن کو نظر انداز کیا ہے۔

      انہوں نے کہا کہ بی جے پی حکومت برہمنوں اور دلتوں کی توہین کر رہی ہے۔ برہمن سمیلن کو خطاب کرتے ہوئے ستیش چندر مشرا نے کہا کہ بی جے پی نے اشتہار کے ذریعہ ترقی کی۔ جہاں 300 کروڑ روپئے صرف اپنے اشتہار پر خرچ کیا۔ انہوں نے کہا کہ برہمن اور دلتوں کے ساتھ اس بار بی ایس پی کی حکومت بنے گی۔ اس دوران بڑی تعداد میں امروہہ اور سنبھل کے بی ایس پی کارکنان موجود رہے۔

      یوپی میں آئندہ سال ہونے والے اسمبلی انتخابات میں بہوجن سماج پارٹی  نے تیاری شروع کردی ہے۔
      یوپی میں آئندہ سال ہونے والے اسمبلی انتخابات میں بہوجن سماج پارٹی نے تیاری شروع کردی ہے۔


      اس سے قبل بریلی میں ستیش چندر مشرا نے کہا کہ ہم نے ایودھیا میں جاکر دیکھا تو اصلیت سامنے آگئی۔ پتہ چلا کوئی بھی ترقی ایودھیا میں نہیں ہوئی۔ بی جے پی نے کہا سونے کا بھگوان رام کی نگری بنائی؟ 250 کروڑ لگ گئے، لیکن پتہ نہیں کہا لگ گئے؟ ہم جب ایودھیا گئے تو سوال کھڑے کر دیئے کہ یہ کیوں گئے۔ کیا انہوں نے ہی شری رام کا ٹھیکہ لے رکھا ہے؟ سال 1993 سے لے کر بھگوان رام کو لے کر کتنے لاکھ کروڑ روپئے چندہ اکٹھا کیا اور اگر جمع کرلئے تھے تو پھر اب ہر گھر میں جھولا لے کر چندہ لینے کے لئے کیوں بھیج دیا؟ رام للا کو وہ ووٹ کی چیز بنا کر رکھنا چاہتے ہیں۔ ان کی ٹھیکیداری ختم کرنے کا وقت آگیا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: