ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

اشوک گہلوت نے کہا- حکومت کو غیر مستحکم کرنے کا منصوبہ کامیاب نہیں ہوسکا

راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت نے ریاست کے تمام اراکین اسمبلی کے نام پر جاری کی جانے والی اپیل میں کہا کہ ریاست میں کانگریس حکومت کے قیام کے پچھلے ڈیڑھ سال میں، ریاستی حکومت نے ریاست کی ترقی اور معیشت کو پٹری پر لانے کے لئے ہر ممکن کوشش کی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Aug 09, 2020 02:59 PM IST
  • Share this:
اشوک گہلوت نے کہا- حکومت کو غیر مستحکم کرنے کا منصوبہ کامیاب نہیں ہوسکا
حکومت کو غیر مستحکم کرنے کا منصوبہ کامیاب نہیں ہوسکا: اشوک گہلوت

جے پور: راجستھان کے وزیر اعلی اشوک گہلوت نے تمام سیاسی پارٹیوں کے اراکین اسمبلی سے اپیل کی ہے کہ وہ جمہوریت کو بچانے اور عوامی اعتماد کو برقرار رکھنے کے لئے منتخب حکومت کو غیر مستحکم کرنے کی غلط روایات سے گریز کریں۔ اشوک گہلوت نے ریاست کے تمام ایم ایل اے کے نام پر جاری کی جانے والی اپیل میں کہا کہ ریاست میں کانگریس حکومت کے قیام کے پچھلے ڈیڑھ سال میں، ریاستی حکومت نے ریاست کی ترقی اور معیشت کو پٹری پر لانے کے لئے ہر ممکن کوشش کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے حساس، شفاف اور جوابدہ انتظامیہ، تعلیم کی ترقی، اعلی تعلیم، طب، بجلی، پانی، سڑکیں اور سہولیات کے ساتھ ساتھ پنچایت سمیتی اور سب ڈویژن سطح پر بھی قابل ذکر فیصلے کیے جن کی ہر جگہ تعریف کی گئی۔

انہوں نے کہا کہ کورونا جیسی عالمگیر وبا نے اچانک صورتحال کو مزید خراب کردیا۔ کورونا کی ہولناکی اور اس کی سنگینی کو بھانپتے ہوئے ، ہم نے تمام سیاسی پارٹیوں، ڈاکٹروں، مذہبی رہنماؤں، رضا کار تنظیموں، سماجی کارکنوں، کاروباری افراد، پنچایت راج کے نمائندوں، پولیس، انتظامیہ، ریاستی ملازمین اور عوام کے نمائندوں کو ساتھ لے شاندار انتظام کیا،جس کی قومی سطح پر ستائش کی گئی۔



اشوک گہلوت نے کہا کہ ایسے حالات میں بھی ہمارے کچھ ساتھی اور اپوزیشن کے کچھ رہنما ہماری جمہوری طور پر منتخب حکومت کو غیر مستحکم کرنے کی سازش میں مل کر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سال 96 - 1993 کے دوران ، ممبران اسمبلی کی خرید فروخت کرکے بھیرو سنگھ جی شیکھاوت کی حکومت گرانے کی کوشش کی گئی تھی۔ اس وقت ، میں نے (اشوک گہلوت)، مرکزی وزیر مملکت اور ریاستی کانگریس کے صدر کی حیثیت سے ، اس وقت کے گورنر بلی رام بھگت اور وزیر اعظم نرسمہا راؤ سے ملے اور احتجاج کیا کہ منتخب حکومت کو گرانا جمہوری اقدار کے منافی ہے اور میں اسے ایک سیاسی گناہ کے زمرے میں رکھتا ہوں۔
اشوک گہلوت نے کہا کہ اس وقت ریاست کے عوام میں اس سازش میں شامل عوامی نمائندوں کے خلاف شدید ناراضگی ہے۔ انہوں نے اپیل میں ارکان اسمبلی سے کہا کہ جمہوریت کو بچانے کے لئے ، ہم پر عوامی اعتماد برقرار رکھنے اور غلط روایات سے بچنے کے لئے، آپ کو عوام کی آواز سننی چاہئے۔ چاہے آپ کسی بھی سیاسی پارٹی کے ایم ایل اے ہیں ، آپ کو اپنے ساتھیوں ، کنبہ کے افراد اور اپنے علاقے کے ووٹروں کے جذبات کو سمجھنے کا فیصلہ کرنا چاہئے تاکہ یہ یقینی بنائیں کہ راجستھان ریاست کے مفادات کے لئے عوام کی طرف سے منتخب کردہ اکثریتی حکومت طاقت کے ساتھ کام کرتی رہے اور حکومت کو غیر مستحکم کرنے کے منصوبے کامیاب نہ ہوسکیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 09, 2020 02:51 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading