اپنا ضلع منتخب کریں۔

    Sadhguru: سدھ گرو کو کیسے ملی عالمی شہرت؟ کیریبین جزائر سے لندن تک کا سفر کیسا رہا؟

    اقوام متحدہ کا کنونشن ٹو کامبیٹ ڈیزرٹیفیکیشن (UNCCD)، جو 1994 میں قائم ہوا، واحد قانونی طور پر پابند بین الاقوامی معاہدہ ہے جو ماحول اور ترقی کو پائیدار زمین کے انتظام سے جوڑتا ہے۔ ایشا فاؤنڈیشن کے مطابق UNCCD Save Soil تحریک کا ایک اہم پارٹنر ہے، جو مختلف شعبوں جیسے کہ سائنسی علم، کمیونیکیشن اور آؤٹ ریچ میں تعاون کر رہا ہے۔

    اقوام متحدہ کا کنونشن ٹو کامبیٹ ڈیزرٹیفیکیشن (UNCCD)، جو 1994 میں قائم ہوا، واحد قانونی طور پر پابند بین الاقوامی معاہدہ ہے جو ماحول اور ترقی کو پائیدار زمین کے انتظام سے جوڑتا ہے۔ ایشا فاؤنڈیشن کے مطابق UNCCD Save Soil تحریک کا ایک اہم پارٹنر ہے، جو مختلف شعبوں جیسے کہ سائنسی علم، کمیونیکیشن اور آؤٹ ریچ میں تعاون کر رہا ہے۔

    اقوام متحدہ کا کنونشن ٹو کامبیٹ ڈیزرٹیفیکیشن (UNCCD)، جو 1994 میں قائم ہوا، واحد قانونی طور پر پابند بین الاقوامی معاہدہ ہے جو ماحول اور ترقی کو پائیدار زمین کے انتظام سے جوڑتا ہے۔ ایشا فاؤنڈیشن کے مطابق UNCCD Save Soil تحریک کا ایک اہم پارٹنر ہے، جو مختلف شعبوں جیسے کہ سائنسی علم، کمیونیکیشن اور آؤٹ ریچ میں تعاون کر رہا ہے۔

    • Share this:
      کیریبین جزیروں (Caribbean islands) میں ’مٹی بچاؤ‘ (Save Soil) تحریک کا پیغام پھیلانے کے بعد سدھ گرو (Sadhguru) نے 30,000 کلومیٹر کے سفر کا یورپی مرحلہ شروع کیا ہے۔ ایشا فاؤنڈیشن نے ’سیو سول‘ کے اب تک کے سفر کی ویڈیو شیئر کرتے ہوئے کہا کہ لوگوں کو اکٹھا کرنے کی تحریک کی طاقت پوری طرح سے ظاہر ہے کیونکہ معاشرے کے تمام طبقات کے لوگ حمایت میں کھڑے ہیں۔ اس کے علاوہ میڈیا کی بااثر شخصیات جیسے ٹریور نوح اور جو روگن، دی لاء سوسائٹی، یو کے پارلیمنٹرینز، نیپال کا سفارت خانہ اور یہاں تک کہ چھوٹے بچے اور زندہ دل نوجوانوں کی بھی تائید حاصل ہے۔

      سیو سول ایک عالمی تحریک ہے جس کی بنیاد سدھ گرو نے رکھی تھی، جس کے ساتھ ایشا فاؤنڈیشن کا مقصد مٹی کے بحران سے نمٹنے کے لیے دنیا بھر سے لوگوں کو مٹی کی صحت کی وکالت کے لیے اکٹھا کرنا اور قومی پالیسیوں اور اقدامات کے قیام میں تمام اقوام کے رہنماؤں کی مدد کرنا ہے۔ وہیں اس کا مقصد قابل کاشت مٹی کے نامیاتی مواد میں اضافہ کرنا بھی ہے۔ اس سے پہلے سدگرو نے بھی ایکسل لندن میں سیو سول تحریک کی مشق کرنے کی اپیل کی تھی۔

      ایشا فاؤنڈیشن کے مطابق سدگرو موٹر سائیکل پر 24 ممالک میں 30,000 کلومیٹر سے زیادہ کا سفر کریں گے تاکہ 3.5 بلین سے زیادہ لوگوں کی حمایت کا مظاہرہ کیا جائے اور اس تحتریک کو عالمی سطح پر ایک نئی شہرت حاصل ہو اور مٹی کے بحران سے دنیا کو محفوظ رکھا جائے۔

      مزید پڑھیں: Nawaz Sharif attacked: لندن میں سابق پاکستانی وزیراعظم نواز شریف پر حملہ، گارڈ زخمی

      یہ سواری لندن سے شروع ہو کر جنوبی ہندوستان کے کاویری بیسن میں ختم ہو گی۔ جہاں سدگرو کے کاویری کالنگ پروجیکٹ نے اب تک 125,000 کسانوں کو 62 ملین درخت لگانے کے قابل بنایا ہے تاکہ وہ مٹی کو زندہ کر سکیں اور دریائے کاویری کے کم ہوتے پانی کو بھر سکیں۔

      مذکورہ مہم کے ذرائع کا کہنا ہے کہ جب شہریوں کی ایک بڑی تعداد شرکت کرتی ہے، تو ماحولیاتی مسائل انتخابی مسائل بن جاتے ہیں، اس بات کو یقینی بناتے ہوئے کہ حکومتیں پالیسیاں اپنائیں اور ماحولیاتی حل کے طویل مدتی نفاذ کے لیے بجٹ مرتب کریں۔

      یہ بھی پڑھیں: Imran Khan نے ہر ہتھکنڈہ فیل ہونے پر کھیلا غیرملکی سازش کا داؤ، ایسے دی اپوزیشن کو شکست

      اقوام متحدہ کا کنونشن ٹو کامبیٹ ڈیزرٹیفیکیشن (UNCCD) سال 1994 میں قائم ہوا۔ یہ واحد قانونی طور پر پابند بین الاقوامی معاہدہ ہے جو ماحول اور ترقی کو پائیدار زمین کے انتظام سے جوڑتا ہے۔ ایشا فاؤنڈیشن کے مطابق اقوام متحدہ کا کنونشن ٹو کامبیٹ ڈیزرٹیفیکیشن سیو سیول (Save Soil) تحریک کا ایک اہم پارٹنر ہے، جو مختلف شعبوں جیسے کہ سائنسی علم، کمیونیکیشن اور آؤٹ ریچ میں تعاون کر رہا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: