உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہلی میں جلد کھلیں گے اسکول اور کالج، محکمہ تعلیم کی جانب سے حکومت کو تجویز بھیجی گئی

    دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے کہا کہ محکمہ تعلیم سے اسکول کھولنے کی تجویز موصول ہوئی ہے۔کمیشن فار ایئرکوالٹی مینجمنٹ کے فیصلے کے بعد اسکول کھولنے کی ہدایات جاری کی جائیں گی۔ محکمہ تعلیم نے 20 دسمبر سے پرائمری سے پانچویں جماعت کے طلباء کے لئے اسکول کھولنے کی تجویز دی ہے جبکہ بڑی کلاس اور کالج، کوچنگ سینٹرز فوری کھولنے کی تجویز دی ہے۔

    دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے کہا کہ محکمہ تعلیم سے اسکول کھولنے کی تجویز موصول ہوئی ہے۔کمیشن فار ایئرکوالٹی مینجمنٹ کے فیصلے کے بعد اسکول کھولنے کی ہدایات جاری کی جائیں گی۔ محکمہ تعلیم نے 20 دسمبر سے پرائمری سے پانچویں جماعت کے طلباء کے لئے اسکول کھولنے کی تجویز دی ہے جبکہ بڑی کلاس اور کالج، کوچنگ سینٹرز فوری کھولنے کی تجویز دی ہے۔

    دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے کہا کہ محکمہ تعلیم سے اسکول کھولنے کی تجویز موصول ہوئی ہے۔کمیشن فار ایئرکوالٹی مینجمنٹ کے فیصلے کے بعد اسکول کھولنے کی ہدایات جاری کی جائیں گی۔ محکمہ تعلیم نے 20 دسمبر سے پرائمری سے پانچویں جماعت کے طلباء کے لئے اسکول کھولنے کی تجویز دی ہے جبکہ بڑی کلاس اور کالج، کوچنگ سینٹرز فوری کھولنے کی تجویز دی ہے۔

    • Share this:
    نئی دہلی: دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے کہا کہ محکمہ تعلیم سے اسکول کھولنے کی تجویز موصول ہوئی ہے۔کمیشن فار ایئرکوالٹی مینجمنٹ کے فیصلے کے بعد اسکول کھولنے کی ہدایات جاری کی جائیں گی۔ محکمہ تعلیم نے 20 دسمبر سے پرائمری سے پانچویں جماعت کے طلباء کے لئے اسکول کھولنے کی تجویز دی ہے جبکہ بڑی کلاس اور کالج، کوچنگ سینٹرز فوری کھولنے کی تجویز دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ متعدد ایجنسیوں نے تعمیراتی کاموں اور مسماری پر سے پابندی ہٹانے کی زبانی درخواستیں کی ہیں۔ ان کی تحریری درخواستوں پر 16 دسمبرکو ہونے والے اجلاس میں غورکیا جائے گا۔ ٹرکوں پر پابندی فی الحال برقرار رہے گی، سی این جی، الیکٹرک اور ضروری خدمات سے منسلک ٹرکوں کو استثنیٰ جاری رہے گا۔ دہلی میں دھول مخالف مہم، کھلے عام جلانے کے خلاف مہم، پانی کا چھڑکاؤ اورگاڑیوں کی پی یو سی چیکنگ کی مہم اگلے احکامات تک جاری رہے گی۔

    دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے پیرکو سول لائنز میں ایک اہم پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔ گوپال رائے نے کہا کہ آج آلودگی کی صورتحال کو لے کر مختلف محکموں کے ساتھ مشترکہ جائزہ اجلاس منعقد کیا گیا ہے۔ آلودگی کی صورتحال، جو دیوالی کے بعد بہت نازک ہوگئی تھی، پچھلے ایک ہفتے کے دوران بتدریج بہتری دکھائی دے رہی ہے۔ یکم دسمبر سے 12 دسمبر تک آلودگی کی سطح 250 سے 325 کے لگ بھگ رہی ہے۔ ماہرین کے مطابق 14 سے 16 دسمبر تک آلودگی کی سطح میں معمولی اضافے کے آثار ہیں۔ اس کے بعد آلودگی کی سطح میں بہتری آنے کا امکان ہے۔

    گوپال رائے نے کہا کہ آج آلودگی کی صورتحال کو لے کر مختلف محکموں کے ساتھ مشترکہ جائزہ اجلاس منعقد کیا گیا ہے۔ آلودگی کی صورتحال، جو دیوالی کے بعد بہت نازک ہوگئی تھی، پچھلے ایک ہفتے کے دوران بتدریج بہتری دکھائی دے رہی ہے۔
    گوپال رائے نے کہا کہ آج آلودگی کی صورتحال کو لے کر مختلف محکموں کے ساتھ مشترکہ جائزہ اجلاس منعقد کیا گیا ہے۔ آلودگی کی صورتحال، جو دیوالی کے بعد بہت نازک ہوگئی تھی، پچھلے ایک ہفتے کے دوران بتدریج بہتری دکھائی دے رہی ہے۔


    انہوں نے کہا کہ ان حالات کے پیش نظر آج کی میٹنگ میں کئی اہم فیصلے کئے گئے ہیں۔ سپریم کورٹ نے کمیشن فار ایئر کوالٹی مینجمنٹ کو اس میں چھوٹ دینے کا اختیار دیا ہے۔ محکمہ ماحولیات کو آج محکمہ تعلیم سے اسکول کھولنے کی درخواست موصول ہوئی ہے، جس میں دو تجاویز ہیں۔ سب سے پہلے اسکول، کالج، انسٹی ٹیوٹ اور کوچنگ فوری طور پر چھٹی سے اعلیٰ تک کے طلباء کے لئے کھولی جائے۔ اس کے علاوہ پرائمری سے پانچویں جماعت کے طلباء کے لئے 20 دسمبر سے اسکول کھول دیئے جائیں۔ ہم سپریم کورٹ کی ہدایات کے مطابق یہ درخواست کمیشن فار ایئرکوالٹی مینجمنٹ کو بھیج رہے ہیں، جس کے فیصلے کے بعد ہم اسکول کھولنے کی ہدایات جاری کریں گے۔

    گوپال رائے نے کہا کہ دہلی کے اندر ٹرکوں پر پابندی ابھی تک برقرار رہے گی۔ اس کے علاوہ کئی ایجنسیوں نے تعمیرات اور مسماری کے کاموں پر سے پابندی ہٹانے کی زبانی درخواستیں کی ہیں۔ انہیں حکومت اور ایئرکوالٹی مینجمنٹ کمیشن کو تحریری درخواست دینے کی ہدایت کی گئی ہے، جس کی بنیاد پر مزید غور کیا جائے گا۔ اس کے لئے 16 دسمبرکو دوبارہ میٹنگ بلائی گئی ہے۔ دہلی کے اندر دھول کی آلودگی پر قابو پانے کے لئے پانی چھڑکنے کی مہم جاری رہےگی۔

    دہلی کے اندر اس مہم کو جاری رکھنے کے لئے تمام محکموں کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔ اس کے علاوہ اینٹی ڈسٹ مہم کے تحت سائٹس کا دورہ کیا جا رہا ہے۔ ٹیموں نے اب تک 6953 سائٹس کا دورہ کیا ہے، جن میں سے 597 کو نوٹس دے کر 1.65 کروڑ کا جرمانہ کیا گیا ہے۔ اسی طرح یہ مہم مستقبل میں بھی جاری رہے گی۔ کھلی کچہری کےخلاف مہم بھی جاری رہے گی۔ اس مہم کے تحت اب تک 16,580 مقامات کا معائنہ کیا جاچکا ہے، جس میں 2490 مقامات پر نوٹس جاری کئے گئے ہیں۔ اب تک 46.96 لاکھ روپئے کا جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔ اکتوبر سے اب تک گرین دہلی ایپ کے تحت 6975 شکایات موصول ہوئی ہیں، جن میں سے 5686 یعنی تقریباً 81 فیصد شکایات کا ازالہ کردیا گیا ہے۔ گرین دہلی ایپ پر سب سے زیادہ شکایات جنوبی دہلی میونسپل کارپوریشن سے آئی ہیں۔ انہوں نےکہا کہ گاڑیوں کی پی یو سی چیکنگ کی مہم جاری رہے گی۔ اگر پی یو سی سرٹیفکیٹ کے بغیر کوئی گاڑی پائی گئی تو 10,000 روپئے کا جرمانہ عائدکیا جائے گا۔ اس مہم کے تحت اکتوبر سے دسمبر تک 19.50 لاکھ پی یو سی سرٹیفکیٹس کی جانچ کی گئی ہے، جن میں سے 49 ہزار گاڑیوں کے چالان کئے جا چکے ہیں۔
    قومی، بین الااقوامی، جموں و کشمیر کی تازہ ترین خبروں کے علاوہ  تعلیم و روزگار اور بزنس  کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: