உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

     اس نئی بیماری سے پھیلی دہشت! 15 اور زد میں، جانئے کیا ہیں علامات اور بچاؤ کے طریقے

     اب تک 15 افراد اس بیماری کی زد میں آ چکے ہیں۔ بخار، سانس لینے میں تکلیف جیسی علامات کی وجہ سے بیماری کی تشخیص میں وقت لگ رہا ہے۔ اگر اس کی بروقت تحقیق نہ کی جائے تو یہ مرض مریض کی موت کا باعث بھی بن سکتا ہے۔

    اب تک 15 افراد اس بیماری کی زد میں آ چکے ہیں۔ بخار، سانس لینے میں تکلیف جیسی علامات کی وجہ سے بیماری کی تشخیص میں وقت لگ رہا ہے۔ اگر اس کی بروقت تحقیق نہ کی جائے تو یہ مرض مریض کی موت کا باعث بھی بن سکتا ہے۔

    اب تک 15 افراد اس بیماری کی زد میں آ چکے ہیں۔ بخار، سانس لینے میں تکلیف جیسی علامات کی وجہ سے بیماری کی تشخیص میں وقت لگ رہا ہے۔ اگر اس کی بروقت تحقیق نہ کی جائے تو یہ مرض مریض کی موت کا باعث بھی بن سکتا ہے۔

    • Share this:
      ایک طرف ملک کورونا وائرس سے جوجھ رہا ہے تو دوسری طرف ایک نئی بیماری جنم لے رہی ہے۔ اسی سلسلے میں مغربی بنگال کے ہوگلی ضلع میں اسکرب ٹائفس نامی ایک نئی بیماری نے لوگوں میں خوف پیدا کر دیا ہے۔ اب تک 15 افراد اس بیماری کی زد میں آ چکے ہیں۔ بخار، سانس لینے میں تکلیف جیسی علامات کی وجہ سے بیماری کی تشخیص میں وقت لگ رہا ہے۔ اگر اس کی بروقت تحقیق نہ کی جائے تو یہ مرض مریض کی موت کا باعث بھی بن سکتا ہے۔ تھرومبوسائٹوپینک مائٹس جسم میں داخل ہوتے ہیں اور جسم میں اسکرب ٹائفس کے بیکٹیریا پنپنے لگتے ہیں۔ یہ بیماری چھوٹے کیڑے کے کاٹنے سے پھیلتی ہے۔ یہ کیڑے سائز میں 0.2 ملی میٹر سے 0.4 ملی میٹر لمبے ہوتے ہیں۔

      زی نیوز کی رپورٹ کے مطابق اس کی علامات عام طور پر اسکرب ٹائفس سے متاثر ہونے کے 5-7 دن بعد ظاہر ہوتی ہیں۔ اسکرب ٹائفس کی علامات میں بخار، سر درد، سانس لینے میں تکلیف، پٹھوں میں خارش، قے شامل ہیں۔ خاص طور پر پوری جلد پر خارش اس کی علامات میں سے ایک ہے۔ جس حصے میں کیڑے کاٹتے ہیں، پورا حصہ کالا ہو جاتا ہے۔ ڈینگو اور اسکرب ٹائفس کی علامات بہت ملتی جلتی ہیں۔ زیادہ تر وقت اس بیماری کا علاج مشکل ہے۔ اگر صحیح طریقے سے علاج نہ کیا جائے تو اعضاء کے خراب ہونے کا بھی امکان ہوتا ہے۔ مریضوں کی شناخت بخار کی قسم اور کیڑے کے کاٹنے کی تحقیق کو دیکھ کر کی جاتی ہے۔

      اسکرب ٹائفس: چوہوں سے رہیں الرٹ
      عام طور پر اس قسم کے کیڑے جنگل میں پائے جاتے ہیں۔ اس کے علاوہ یہ کیڑے گندگی اور پرانے گرد آلود فرنیچر میں بستے ہیں۔ اس سے بھی زیادہ حیران کن بات یہ ہے کہ اسکرب ٹائفس کی سب سے بڑی وجہ چوہا ہے۔ اسی لیے ڈاکٹر کہتے ہیں کہ گھر میں کچرا نہ رکھیں۔ اس بیماری سے بچنے کے لیے گھر کو چوہوں سے پاک رکھیں۔ اپنے گھر کو کچرے سے پاک بنائیں اور اسے صاف ستھرا رکھیں۔




      اسکرب ٹائفس: بچوں کو جھاڑیوں سے دور رکھیں
      بچے اکثر کھیلتے ہوئے جھاڑیوں میں آتے ہیں۔ اس صورت میں بچوں کو پوری بازو والی قمیض اور جوتے پہنانے کو کہیں۔ خاص طور پر فیلڈ میں کام کرنے والوں کے لیے ضلعی محکمہ صحت نے ایڈوائزری جاری کی ہے۔ گھر واپس آنے کے بعد گرم پانی سے نہا لیں اور کپڑے اچھی طرح صاف کریں۔ اگر کسی کو بخار، سر درد، قے، سانس لینے میں دشواری ہو تو اسے ضلع اسپتال سے رابطہ کرنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: