ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

کیا مہاراشٹر میں پھر لگے گا لاک ڈاون؟ ادھو حکومت کی ریویو میٹنگ میں ہوگا فیصلہ

ذرائع کا کہنا ہے کہ ریاستی حکومت (Uddhav Government) کورونا کے نئے معاملوں کی تعداد میں کمی لانے کے لئے سبھی راستے تلاش رہی ہے۔ اب ریویو میٹنگ کے بعد ہی واضح ہوپائے گا کہ آگے کس طرح کے اقدامات کئے جائیں گے۔ حادثہ کی جانکاری رکھنے والے سینئر افسران کا کہنا ہے کہ وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے جلد ہی ریاست کی عوام کو خطاب بھی کرسکتے ہیں۔

  • Share this:
کیا مہاراشٹر میں پھر لگے گا لاک ڈاون؟ ادھو حکومت کی ریویو میٹنگ میں ہوگا فیصلہ
کیا مہاراشٹر میں پھر لگے گا لاک ڈاون؟ ادھو حکومت کی ریویو میٹنگ میں ہوگا فیصلہ

ممبئی: مہاراشٹر (Maharashtra) میں کورونا کے بڑھتے معاملوں (Rising Covid Cases) کے پیش نظر ادھو ٹھاکرے حکومت جلد ہی ریویو میٹنگ کرسکتی ہے۔ اس میٹنگ میں ہی فیصلہ کیا جائے گا کہ وبا پر کنٹرول کے لئے کیا اقدامات کئے جائیں۔ اس درمیان نیوز 18 کو ذرائع کے حوالے سے خبر ملی ہے کہ ریاست میں ایک بار پھر لاک ڈاون بھی لگایا جاسکتا ہے۔


حالانکہ کہا جا رہا ہے کہ پورے ریاست میں دوبارہ لاک ڈاون لگانے کا منصوبہ نہیں ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ریاستی حکومت کورونا کے نئے معاملوں کی تعداد میں کمی لانے کے لئے سبھی راستے تلاش رہی ہے۔ اب ریویو میٹنگ کے بعد ہی واضح ہوپائے گا کہ آگے کس طرح کے قدم اٹھائے جائیں گے۔ حادثات کی اطلاعات رکھنے والے سینئر افسران کا کہنا ہے کہ وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے جلد ہی ریاست کی عوام کو خطاب بھی کرسکتے ہیں۔


کیا بولے وزیر اسلم شیخ؟


اس درمیان وزیر اسلم شیخ نے کہا ہے کہ کورونا ضابطہ توڑنے کے سبب لوگوں پر جرمانہ لگایا جا رہا ہے۔ مقامی انتظامیہ کو یہ جرمانہ لگانے کے لئے اور مضبوط بنایا جارہا ہے۔ اگر اسی طرح نئے کورونا معاملوں کی تعداد بڑھتی رہی تو شہر میں سب سے پہلے نائٹ کلبوں کو بند کیا جاسکتا ہے۔ اسلم شیخ نے کہا ہے کہ نائٹ کرفیو کے اعلان سے انکار نہیں کیا جاسکتا ہے۔ لوگوں کو اس وقت اضافی احتیاط برتنے کی ضرورت ہے۔

وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے نے کہی تھی یہ بات

واضح رہے کہ کچھ دنوں پہلے ریاست میں کورونا وائرس انفیکشن بڑھنے کے درمیان لاک ڈاون کے خدشات پر ادھو ٹھاکرے نے کہا تھا، ’ریاست میں لاک ڈاون نہیں لگے گا۔ میں نہیں چاہتا کہ لوگوں کی روزی روٹی پر بحران آئے‘۔ بی جے پی پر نشانہ سادھتے ہوئے ادھو ٹھاکرے نے کہا، ’ہم نے طبی سہولیات کو چوکنا کیا ہے، سدھارا ہے، اگر کوئی مجھے کھلنائک کہتا ہے تو میں ا کی پرواہ نہیں کرتا۔ اپنی ریاست کے لوگوں کی ذمہ داری میری ہے‘۔

ونیش پانڈے کی اسٹوری سے ان پُٹس کے ساتھ۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Mar 09, 2021 09:09 PM IST